محمد چنگیز خان طریقی

محمد چنگیز خان طریقی پاکستان کے ضلع چترال میں مقیم کھوار کے نمایاں شاعر،ادیب، نقاد، ماہر تعلیم اور ہردل عزیز ادبی شخصیت تھے۔]]درون ھنو]] یعنی قوس قزح کے نام سے آپ کا کھوار زبان میں پہلا شعری مجموعہ منظر عام پر آنے ہی والا تھا کہ اچانک ان کا دل کا دورہ پڑنے سے انتقال ہو گیا۔ آپ چترال وژن، چترال ٹایمز، چترال نیوز، چترال ٹوڈے اور دیگر اخبارات، رسایل اور جرائد میں آرٹیکلز بھی لکھتے تھے۔[1]

محمد چنگیز خان طریقی
پیدائشچنگیز خان
8 دسمبر 1939(1939-12-08)
شوگرام, ضلع چترال سرحد, برطانوی ہندوستان
وفات8 مارچ 2012(2012-30-08) (عمر  72 سال)
چترال, خیبرپختونخوا, پاکستان
قلمی نامطریقی
پیشہاردو شاعر, کھوار شاعر, ماہر تعلیم اور ادیب
قومیتپاکستانی
نسلچترالی
شہریتپاکستانی
تعلیمایم اے (اردو)
مادر علمیجامعہ پشاور
دور1965–2012
اصنافغزل
موضوعکھوار شاعری
اہم اعزازاتشندور ایوارڈ

حوالہ جاتترميم