پاکستان ٹائمز

پاکستانی اخبار

لاہور سے پروگریسو پیپرز لمیٹڈ کے تحت انگریزی اخبار ڈیلی پاکستان ٹائمز میاں افتخار الدین نے تقسیم ہند سے قبل 4 فروری 1947ء کو جاری کیا تھا اس کا پہلا دفتر مال روڈ پر ہائیکورٹ کے سامنے سول اینڈ ملٹری گزٹ والی عمارت میں بنایا گیا تھا اور پہلے ایڈیٹر فیض احمد فیض بنائے گئے تھے جو برٹش انڈین آرمی کے شعبہ تعلقات عامہ میں کرنل کا عہدہ چھوڑ کر دلی سے لاہور واپس آئے تھے آزادی کے بعد پاکستان ٹائمز کا دفتر میو ہسپتال کے سامنے انگریزی اخبار ڈیلی ٹریبیون کی عمارت میں منتقل کر دیا گیا پاکستان ٹائمز کو ایوب حکومت نے سرکاری ملکیت میں لے لیا تھا اور 1990ء کی دہائی میں یہ بند ہوگیا تھا اب اس کا ڈیکلریشن جنگ گروپ کے پاس ہے،

پاکستان ٹائمز، اسلام آباد پاکستان سے شائع ہونے والا انگریزی زبان کا روزنامہ ہے۔[1] نیشنل پریس ٹرسٹ کی نجکاری 1996 میں ہوئی تھی۔ اسی سال ، پاکستان ٹائمز کو بند کردیا گیا تھا۔ پاکستان ٹائمز کو یوتھ گروپ لمیٹڈ میڈیا گروپ یوتھ پروڈکشن نے دوبارہ لانچ کیا ، اور اس کے شریک بانی عمیر احمد ہیں۔[2][3] دی یوتھ انٹرنیشنل اور یوتھ پریس پاکستان پاکستان ٹائمز کا بہن اخبار ہے۔[4]

بیرونی روابطترميم

  یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کر کے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔
  1. Kalia 2015, p. 56.
  2. بلال بٹ، محمد (20 February 2020). "پاکستان ٹائمز کی دوبارہ لانچ ایک جادومعجزہ ہے". یوتھ انٹرنیشنل. 20 فروری 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 20 فروری 2020. 
  3. McCarry 2019, p. 69.
  4. بٹ، محمد بلال (2020-02-08). "18 اخبارات جو پاکستان میں مقامی طور پر شائع ہوتے ہیں۔". پاکستان ٹائمز. یوتھ پبلشرز. اخذ شدہ بتاریخ 06 مارچ 2022.