کیانا جوزف (پیدائش 1 جنوری 2001) ایک سینٹ لوشین کرکٹر ہیں جو ونڈورڈ آئی لینڈ کے لیے بائیں ہاتھ کی تیز گیند باز کے طور پر کھیلتی ہیں۔ [1] [2] مئی 2017 میں، انہیں 2017 خواتین کرکٹ ورلڈ کپ کے لیے ویسٹ انڈیز کی ٹیم میں شامل کیا گیا۔ [3] [4] اس نے 2 جولائی 2017 کو ویمنز کرکٹ ورلڈ کپ 2017 میں جنوبی افریقہ کے خلاف ویسٹ انڈیز کے لیے ویمن ون ڈے انٹرنیشنل (WODI) کا آغاز کیا [5] نومبر 2018 میں، انہیں ویسٹ انڈیز میں 2018 کے آئی سی سی ویمنز ورلڈ ٹوئنٹی 20 ٹورنامنٹ کے لیے زخمی شینیٹا گریمونڈ کی جگہ ویسٹ انڈیز کے اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔ [6]

ٹیمیںترميم

کیانہ جوزف نے اپنے کیریئر میں کئی ٹیموں کی نمائندگی کی جن میں قابل ذکر مندرجہ ذیل ہیں:

  • نارتھ ون ورڈ آئی لینڈ وومن
  • سینٹ لوسیا وومن
  • ویسٹ انڈیز وومن

ون ڈے کیریئرترميم

کیانا جوزف نے 8 ون ڈے میچ کھیلے ، جس میں 6 اننگز شامل ہیں ، وہ 2 بار ناٹ آؤٹ رہیں۔ کیانہ جوزف نے 38 اسکور کیے۔ انھوں نے 9.50 کی اوسط سے اسکور بنائے ، ان کا بہترین اسکور 21 رہا۔ انھوں نے کوئی نصف سینچری  اور  سینچری نہیں بنائی۔ انھوں نے اپنے کیریئر میں  5 چوکے مارے۔ ون ڈے کرکٹ میں انھوں نے کل 310 گیندیں پھینکیں 7 وکٹیں حاصل کیں ان کی گیند بازی کی اوسط 31.85 رہی۔ ان کی بہترین گیند بازی 2/24 رہی۔

ٹی ٹوئنٹی کیریئرترميم

کیانہ جوزف نے 3 ٹی ٹوئنٹی میچ کھیلے ، جس میں 1 اننگز شامل ہیں ، وہ 1 بار ناٹ آؤٹ رہیں۔ کیانہ جوزف نے 2 اسکور کیے۔ انھوں نے 2 کی اوسط سے اسکور بنائے ، ان کا بہترین اسکور 2* رہا۔ انتہائی مختصر ٹی ٹوئنٹی کیریئر میں کوئی نصف سینچری  اور سینچری نہیں ہے۔ ٹی ٹوئنٹی میچوں میں انھوں نے کل 72 گیندیں پھینکیں 1 وکٹیں حاصل کیں ان کی گیند بازی کی اوسط 58.00 رہی۔ ان کی بہترین گیند بازی 1/17 رہی۔ انھوں نے چھوٹی عمر میں مقامی کرکٹ کا آغاز کر دیا تھا ،اس کے بعد وہ مختلف کلبوں کی طرف سے کھیلتی رہیں اور فرسٹ کلاس کرکٹ بھی کھیلی۔

مئی 2021 میں کیانا جوزف کو کرکٹ ویسٹ انڈیز کی طرف سے سینٹرل کنٹریکٹ سے نوازا گیا۔ [7] جون 2021 میں کیانا جوزف کو پاکستان کے خلاف سیریز کے لیے ویسٹ انڈیز اے ٹیم میں نامزد کیا گیا۔ [8] [9] اگست 2021 میں، جوزف کو جنوبی افریقہ کے خلاف سیریز کے لیے ویسٹ انڈیز کی ویمن ٹوئنٹی 20 انٹرنیشنل (WT20I) اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔ [10] جوزف نے اپنا WT20I کیرئیر کا آغاز 31 اگست 2021 کو ویسٹ انڈیز کے لیے جنوبی افریقہ کے خلاف کیا۔ [11]

اکتوبر 2021 میں، انہیں زمبابوے میں 2021 خواتین کرکٹ ورلڈ کپ کوالیفائر ٹورنامنٹ کے لیے ویسٹ انڈیز کی ٹیم میں شامل کیا گیا۔ [12]

حوالہ جاتترميم

  1. "Player Profile: Qiana Joseph". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 20 مئی 2021. 
  2. "Player Profile: Qiana Joseph". CricketArchive. اخذ شدہ بتاریخ 20 مئی 2021. 
  3. "Four newcomers in WI Women's squad for World Cup". Barbados Cricket Association website. 8 May 2017. 23 جولا‎ئی 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 25 جون 2017. 
  4. ESPNcricinfo staff (9 May 2017). "West Indies pick 16-year-old quick for World Cup". Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 25 جون 2017. 
  5. "ICC Women's World Cup, 12th Match: South Africa Women v West Indies Women at Leicester, Jul 2, 2017". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 02 جولا‎ئی 2017. 
  6. "Matthews is vice captain, Joseph replaces Grimmond". Cricket West Indies. اخذ شدہ بتاریخ 09 نومبر 2018. 
  7. "Qiana Joseph, uncapped Kaysia Schultz handed West Indies central contracts". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 06 مئی 2021. 
  8. "Twin sisters Kycia Knight and Kyshona Knight return to West Indies side for Pakistan T20Is". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 25 جون 2021. 
  9. "Stafanie Taylor, Reniece Boyce to lead strong WI, WI-A units against PAK, PAK-A". Women's CricZone. اخذ شدہ بتاریخ 25 جون 2021. 
  10. "Stafanie Taylor out of T20Is against South Africa; Anisa Mohammed named interim West Indies captain". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 31 اگست 2021. 
  11. "1st T20I, North Sound, Aug 31 2021, South Africa Women tour of West Indies". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 31 اگست 2021. 
  12. "Campbelle, Taylor return to West Indies Women squad for Pakistan ODIs, World Cup Qualifier". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 26 اکتوبر 2021. 

بیرونی روابطترميم