بلے باز آؤٹ ہوئے بغیر میدان چھوڑ کر جا سکتا ہے بشرطیکہ وہ مزید بلے بازی نہ کر سکے۔ اس کو اسکور کارڈ میں ریٹائر ہرٹ لکھتے ہیں۔ اور وہ دوبارہ کسی بلے باز کے آؤٹ ہونے کے بعد بلے بازی کے لیے آ سکتا ہے۔ وہ بلے باز اگر دوبارہ بلے بازی کے لیے نہ آ سکے تو آؤٹ قرار دیا جاتا ہے۔ اس وکٹ کو کسی کے کھاتے میں بھی نہیں لکھا جاتا۔

بلے باز نو بال پر رن آؤٹ کے سوا آؤٹ نہیں ہو سکتا۔ وائڈ بال پر بھی بلے باز کیچ یا ایل بی ڈبلیو آؤٹ نہیں ہو سکتا۔ اور ایک وقت یا ایک گیند پر صرف ایک بلے باز آؤٹ ہو سکتا ہے۔

آؤٹ ہونے کے طریقےترميم

بلے باز کو دس طریقوں سے آؤٹ کیا جا سکتا ہے۔ جب ایک بلے باز آؤٹ ہوتا ہے تو وہ اسی وقت میدان چھوڑ کر چلا جاتا ہے اور اس کی جگہ ایک اور بلے باز میدان میں آتا ہے۔ بلے باز کو ان دس طریقوں سے آؤٹ کیا جا سکتا ہے، ان میں سے پہلے چھ طریقے عام ہیں، آخری چار بہت کم دیکھنے میں آتے ہیں۔

کیچترميم

(Catch)

جب فیلڈر گیند کو بلے سے لگنے کے بعد زمین سے اچھلنے سے پہلے یا بلے باز کے دستانے سے لگنے کے بعد ہاتھ میں تھام لے۔ اس وکٹ کو گیند باز اور کیچ لینے والے کے کھاتے میں لکھا جاتا ہے۔

بولڈترميم

(Bowled)

جب گیند اسٹرائیکر بلے باز کی وکٹ پر پڑی دو کلیوں (Bail) کو گرا دے۔ گیند چاہے بلے یا کسی اور چیز سے ٹکرا کر جائے یا سیدھا وکٹ میں، اسے بولڈ کہتے ہیں۔ اس وکٹ کو گیند باز کے کھاتے میں لکھا جاتا ہے۔

ایل بی ڈبلیوترميم

(Leg Before Wicket - LBW)

(ٹانگ وکٹ کے سامنے) جب گیند بلے سے چھوئے بغیر بلے باز کی ٹانگ پر اس وقت جا لگے جب بلے باز کی ٹانگ وکٹ کے بالکل سامنے ہو۔ اور ایسا محسوس ہو جیسے گیند وکٹ کو جا لگے گی۔ یہ فیصلہ امپائر کرتا ہے۔ اس کے لیے ضروری ہے کہ گیند بلے باز کی لیگ سائیڈ یا ٹانگ کے باہر نہ لگا ہو۔ اگربلے باز شاٹ نہ کھیل رہا ہو اور گیند بلے باز کی ٹانگ پر بغیر بلے سے چھوئے جا لگے، اس وقت چاہے بلے باز کی ٹانگ وکٹ کے سامنے نہ بھی ہو تو اسے آ‎ؤٹ دیا جا سکتا ہے۔ اس وکٹ کو گیند باز کے کھاتے میں لکھا جاتا ہے۔

رن آؤٹترميم

(Run Out)

جب دوڑ کے دوران کوئی فیلڈر بلے باز کے اپنی کریز تک پہنچنے سے پہلے گیند کے ساتھ بیل کو گرا دے تو اسے رن آؤٹ کہتے ہیں۔ گیند اگ فیلڈر اپنے ہاتھ سے وکٹ پر مارے تو لازمی ہے کہ گیند اس وقت اس کے ہاتھ میں ہو۔ اس وکٹ کو کسی کے کھاتے میں نہیں لکھا جاتا۔ مگر فیلڈر کا نام اسکور کارڈ پربریکٹ میں لکھا جاتا ہے۔

سٹمپترميم

(stumped)

جب بلے باز گیند کو مارنے کے لیے اپنی کریز سے باہر چلا جائے اور اس دوران (بلے باز کے کریز تک واپس پہنچنے سے پہلے) وکٹ کیپر گیند کو وکٹ پر دے مارے۔ اس دوران بلے باز اگر کریز کے اندر ہو لیکن ہوا میں ہو تو بھی آؤٹ قرار پاتا ہے۔ سٹمپ صرف وکٹ کیپر کر سکتا ہے۔ اس وکٹ کو گیند باز اور وکٹ کیپر کے کھاتے میں لکھا جاتا ہے۔

ہٹ وکٹترميم

(Hit Wicket)

جب بلے باز اپنے جسم یا بلے کے ساتھ بیل کو وکٹ سے گرا دے، چاہے یہ عمل گیند کو مارتے وقت ہو یا دوڑ بناتے ہوئے۔ اس وکٹ کو گیند باز کے کھاتے میں لکھا جاتا ہے۔

گیند پکڑ لیناترميم

(Handle the Ball)

جب بلے باز گیند کو کھیلتے وقت یا کھیلنے کے بعد گیند کو دوسری ٹیم کی اجازت کے بغیر ہاتھ میں پکڑ لے۔ اس وکٹ کو کسی کے کھاتے میں بھی نہیں لکھا جاتا۔

گیند کو دو بار مارناترميم

(Hit the Ball Twice)

جب بلے باز جان بوجھ کر گیند کو دو بار بلے سے ہٹ مارے۔ اس وکٹ کو کسی کے کھاتے میں بھی نہیں لکھا جاتا۔

فیلڈر کو روکناترميم

(Obstruct the Field)

جب بلے باز جان بوجھ کر دوسریٹیم کے کسی کھلاڑی کو گیند پکڑنے یا فیلڈ کرنے سے روکے۔ اس وکٹ کو کسی کے کھاتے میں بھی نہیں لکھا جاتا۔

وقت ضائع کرناترميم

(Time Out)

جب ایک بلے باز کے آؤٹ ہونے کے بعد دوسرا آنے والا بلے باز میدان میں آتے ہوئے تین منٹ سے زیادہ وقت لے تو امپائر اسے آؤٹ قرار دے سکتا ہے۔ اس کہ حق صرف امپائر کے پاس ہے، اگر وہ سمجھے کے دوسری ٹیم وقت ضائع کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ اس وکٹ کو کسی کے کھاتے میں بھی نہیں لکھا جاتا۔

متعلقہ مضامینترميم

کرکٹ لغت