سجاوندی، آپ کا پورا نام سراج الدین ابوطاہر محمد بن محمد بن عبد الرشید ہے، لیکن سجاوندی کے نام سے زیادہ مشہور ہوئے۔ فقیہ مفسر فرائض اور حساب کے ماہر تھے آپ کی سب سے مشہور اور اہم تصنیف الفرائض السراجیہ یا صرف سراجیہ ہے۔ اس کتاب میں قانون وراثت کے بارے میں تفصیل کے ساتھہ بحث کی گئی ہے۔ اسی لیے فنِ میراث کا شاہکار تصور کی جاتی ہے۔ اس کتاب پر خود سجاوندی نے سب سے پہلے حاشیہ لکھا، بعد میں دوسرے علما بھی اس کتاب پر حواشی لکھتے رہے ہیں۔ دوسری تصانیف میں

  • التجنیس
  • عین المعانی فی تفسیر سبع من المثانی
  • رسالہ الجبر والمقابلہ
  • ذخائر النثار فی اخبار سید المختار
سجاوندی
معلومات شخصیت
شہریت Flag of Iran.svg ایران  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ ماہرِ لسانیات  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

یہ کتاب ترکی اور فارسی زبانوں میں بھی ترجمہ ہوچکی ہیں۔[1]

حوالہ جاتترميم

  1. کتاب:مکمل اسلامی انسائیکلوپیڈیا،مصنف:مرحوم سید قاسم محمود،ص-927