مرکزی مینیو کھولیں
عادا یونات
(عبرانی میں: עדה יונת ویکی ڈیٹا پر مقامی زبان میں نام (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Ada Yonath Weizmann Institute of Science.jpg، Ada Yonath 2013 January CHF.jpg 

معلومات شخصیت
پیدائش 22 جون 1939 (80 سال)[1][2][3]  ویکی ڈیٹا پر تاریخ پیدائش (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
یروشلم[4]  ویکی ڈیٹا پر مقام پیدائش (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رہائش اسرائیل  ویکی ڈیٹا پر رہائش (P551) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Israel.svg اسرائیل[5][4]  ویکی ڈیٹا پر شہریت (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رکنیت قومی اکادمی برائے سائنس[6]، امریکی اکادمی برائے سائنس و فنون  ویکی ڈیٹا پر رکن (P463) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ عبرانی یروشلم  ویکی ڈیٹا پر تعلیم از (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ماہر حیاتیات، سالماتی حیاتیات دان، کیمیادان، استاد جامعہ، ماہر قلمیات، حیاتی کیمیا دان  ویکی ڈیٹا پر پیشہ (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شعبۂ عمل قلمیات  ویکی ڈیٹا پر شعبۂ عمل (P101) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
نوکریاں یونیورسٹی آف شکاگو  ویکی ڈیٹا پر نوکری (P108) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مؤثر شخصیات ولیم لیپسکومب  ویکی ڈیٹا پر مؤثر (P737) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اعزازات
نوبل انعام برائے کیمیا  (2009)[7][8]
اسرائیل پرائز (2002)  ویکی ڈیٹا پر وصول کردہ اعزازات (P166) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

عادا یونات (پیدائش 22 جون 1939) [9] اسرائیلی ماہر قلمیات ہیں جو رائبوسوم (ribosome) کی ساخت پر کام کرنے والی اولین بانی سائنس دان ہیں۔ وہ اس وقت ویزمین انسٹی ٹیوٹ آف سائنس کے ہیلن اور ملٹن سینٹر برائے بائیو مالیکیولر اسٹرکچر اسمبلی کی ڈائریکٹر ہیں۔ 2009 میں انہیں وینکٹ رامن رامکرشنن اور تھامس اے۔ اسٹیٹز کے ساتھ کیمیا میں رائبوسوم (ribosome) کی ساخت اور کارگزاری پر تحقیق پر نوبل پرائز ملا۔ یہ اسرائیل کے دس نوبل انعام یافتہ افراد[10] میں  پہلی اسرائیلی خاتون ہیں جنہیں نوبل انعام ملا، مڈل ایسٹ سے پہلی خاتون[11] جنہیں سائنس میں نوبل انعام ملا اور 45 سال میں کیمیا میں نوبل انعام جیتنے والی پہلی خاتون بھی [12] ۔

حالات زندگیترميم

یہ یروشلم میں پیدا ہوئیں ، ان کے والدین صیہونی یہودی تھے جو پولینڈ سے ہجرت کرکے 1933 میں اسرائیل کے قیام سے پہلے آ بسے تھے۔ ان کے والد ایک ربی تھے اور ربی خاندان سے تعلق رکھتے تھے۔ یروشلم میں بسنے کے بعد انہوں نے گروسری اسٹور چلایا جس سے بمشکل گزارا ہوتا تھا۔ یونات نے انتہائی غربت میں بچپن گزارا مگر والدین نے اچھی تعلیم کے لیے بہتر علاقے کے اسکول میں تعلیم دلائی۔ والد کی وفات کے بعد ان کا خاندان تل ابیب جا بسا۔ ٹچون ہدش اسکول میں یونات کو داخلہ مل گیا گو کہ والدہ کے پاس فیس کے پیسے نہیں تھے ، پیسوں کی بجائے طالب علموں کو حساب پڑھانے پر فیس معاف ہوئی۔

بچپن میں پولش سائنس دان میری کیوری کے بارے میں ایک عمدہ تحریر کردہ سوانح سے متاثر ہوئیں مگر وہ ان کا رول ماڈل نہ تھیں۔ یروشلم کی عبرانی یونیورسٹی سے 1962 میں کیمیا میں گریجویشن کیا اور یہیں سے 1964 میں حیاتیاتی کیمیا میں ماسٹر کی ڈگری حاصل کی۔ 1968 میں پی ایچ ڈی کی ڈگری ویزمین انسٹی ٹیوٹ آف سائنس برائے ایکس رے کرسٹیلوگرافر

[Weizmann Institute of Science for X-ray crystallographic] سے رائبوسوم (ribosome) کی ساخت اور کارگزاری پر تحقیق پر نوبل پرائز حاصل کیا، ان کے پی ایچ ڈی معاون ولفی ٹراب تھے۔

یونات نے کریو بائیو کرسٹیلوگرافی [cryo bio-crystallography] کی تکنیک متعارف کروائی جو ساختیاتی بائیولوجی میں عام استعمال ہونے لگی اور بہت سے مشکل  پراجیکٹ قدرے آسان ہو گئے۔

ان کی ایک بیٹی ہے، ہیگتھ یونات، شیبا میڈیکل سینٹر میں ڈاکٹر ہیں۔

سیاسی نظریاتترميم

یہ مشہور قبضہ مخالف سماجی کارکن ڈاکٹر روخامہ مارٹن کی کزن ہیں۔

عادا یونات نے حماس کے تمام قیدیوں کو بغیر شرط رہا کرنے کی استدعا بھی کی ہے کیونکہ ان کا ماننا ہے کہ اگر کوئی قیدی نہیں ہوں گے تو فوجیوں کو اغوا کرنے کا جواز خود ہی ختم ہو جائے گا۔

رکنیتترميم

یونتھ مندرجہ ذیل تنظیموں کی ممبر ہیں

  • ریاست ہائے امریکا کی نیشنل اکیڈیمی آف سائنسز
  • امریکن اکیڈیم آف آرٹس اور سائنس
  • اسرائیلی اکیڈیمی آف سائنسز اینڈ ہیومنٹیز
  • یورپین اکیڈیمی آف سائنسز اینڈ آرٹ
  • یورپین مالیکیولر بائیلوجی آرگنائزیشن

2014 میں پروفیسر یونات کو پوپ فرانسس نے پونٹیفکل اکیڈیمی آف سائنسز کا عام رکن بنا دیا گیا۔

ایوارڈ اور اعزازاتترميم

  • اسرائیل پرائز ، 2002
  • ہاروے پرائز
  • میسری پرائز
  • پال کیرر گولڈ میڈل
  • ہاروٹز پرائز
  • جارج فہیر کے ساتھ کیمسٹری میں وولف پرائز
  • لائف سائنسز میں روتھس چائلڈ پرائز
  • البرٹ آئن سٹائن ورلڈ ایوارڈ آف سائنس
  • کیمسٹری میں نوبل پرائز ، 2009
  • ول ہلم ایکسنر میڈل ، 2010
  • ڈی لا سیلے یونیورسٹی کی طرف سے اعزازی ڈاکٹریٹ کی ڈگری ، 2015
  • جوزف فوریئر یونیورسٹی ، فرانس کی طرف سے اعزازی ڈاکٹریٹ کی ڈگری  ، 2015
  • میڈیکل یونیورسٹی آف لوڈز ، پولینڈ کی طرف سے اعزازی ڈاکٹریٹ کی ڈگری
  • یونیورسٹی آف واروک ، برطانیہ کی طرف سے اعزازی ڈاکٹریٹ کی ڈگری

حوالہ جاتترميم

  1. بنام: Ada E. Yonath — FemBio ID: http://www.fembio.org/biographie.php/frau/frauendatenbank?fem_id=31358 — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  2. Munzinger person ID: https://www.munzinger.de/search/go/document.jsp?id=00000028050 — بنام: Ada E. Yonath — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  3. Brockhaus Enzyklopädie online ID: https://brockhaus.de/ecs/enzy/article/yonath-ada-e — بنام: Ada E. Yonath — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  4. ^ ا ب http://www.nytimes.com/2009/10/08/science/08nobel.html
  5. http://www.nndb.com/people/914/000208290/
  6. http://www.nasonline.org/member-directory/members/20004897.html — اخذ شدہ بتاریخ: 25 فروری 2018
  7. http://www.nobelprize.org/nobel_prizes/chemistry/laureates/2009/
  8. https://www.nobelprize.org/nobel_prizes/about/amounts/
  9. "Israel Prize Official Site (in Hebrew) – Recipient's C.V."۔
  10. Yaakov Lappin (2009-10-07)۔ "Nobel Prize Winner 'Happy, Shocked'"۔ Jerusalem Post۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2009-10-07۔ |archiveurl= اور |archive-url= ایک سے زائد مرتبہ درج ہے (معاونت); |archivedate= اور |archive-date= ایک سے زائد مرتبہ درج ہے (معاونت)
  11. Karin Klenke, Women in Leadership: Contextual Dynamics and Boundaries, Emerald Group Publishing, 2011, p. 191.
  12. Interview, Ada E. Yonath, The Nobel Prize in Chemistry 2009

بیرونی روابطترميم