عبد الکریم پاریکھ

بھارتی مترجمین

مولانا عبد الکریم پاریکھ مجلس تعلیم القران کے بانی ہیں۔ وہ اچھے مقرر اور مفسر قرآن کی حیثیت سے کافی مشہور ہیں۔ ان کا تعلق ایک مفلوک الحال خاندان سے ہے۔ آبائی وطن کاٹھیاواڑ (گجرات، بھارت) ہے۔ وہیں سے ان کے والد عبد اللطیف فکر معاش میں نکلے اور کئی شہروں میں عارضی سکونت اختیار کرنے کے بعد 1935 میں ناگپور آئے۔

مولانا عبد الکریم پاریکھ 20 مارچ 1928ء کو آکولہ (مہاراشٹر) کے ایک گاؤں کان سیونی میں پیدا ہوئے۔ سات سال کی عمر میں والد کے ہمراہ ناگپور آئے۔ ابتدا میں حلقہء ہمدردان جماعت اسلامی سے وابستہ رہے۔ پھر مجلس تعلیم القران کی بنیاد ڈالی ۔

اعزازاتترميم

حکومتِ ہند نے مولانا مرحوم کو پدم بھوشن کے سرکاری اعزاز سے بھی نوازا تھا۔ مقامِ مسرت اور خوش آئند امر یہ کہ 2008ء سے ماہِ ستمبر میں راشٹر سنت تکڑوجی مہاراج ناگپور یونیورسٹی مرحوم مولانا کی یاد ہر سال پروگرام کرتے ہیں،

تصانیفترميم

  • آسان لغات القرآن
  • اوپر کی دنیا
  • بخیر گزشت
  • قوم یہود اور ہم
  • مؤمن خواتین اور قرآن مجید

وفاتترميم

11 ستمبر 2007ء کو ناگپور میں وفات پائی،

حوالہ جاتترميم