چارلس ببیج (انگریزی: Charles Babbag، پیدائش: 26 دسمبر 1791ء، وفات: 18 اکتوبر 1871ء) ایک انگریز ہر فن مولا شخصیت تھےـ[15] آپ ریاضی دان، فلسفی، موجد اور میکانی مہندس تھےـ چارلس ببیج ڈیجیٹل پروگرام ایبل کمپیوٹر (programmable computer) كے تصور کے خالق تھے۔[16] بعض لوگ انہیں کمپیوٹر کا باپ کہتے ہیں۔[16][17][18][19]

چارلس ببیج
(انگریزی میں: Charles Babbage ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
CharlesBabbage.jpg
 

معلومات شخصیت
پیدائش 26 دسمبر 1791[1][2][3][4][5][6][7]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
لندن،  تییجنموود[8]  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 18 اکتوبر 1871 (80 سال)[3][4][5][6][7][9][10]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
لندن[11]  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of the United Kingdom.svg متحدہ مملکت برطانیہ عظمی و آئر لینڈ  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رکن رائل سوسائٹی،  روس کی اکادمی برائے سائنس،  امریکی اکادمی برائے سائنس و فنون  ویکی ڈیٹا پر (P463) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تعداد اولاد 8 [12]  ویکی ڈیٹا پر (P1971) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی پیٹر ہاؤس
ٹرینٹی کالج، کیمبرج (21 اپریل 1810–)[13]
جامعہ کیمبرج  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تعلیمی اسناد بی اے[13]،  ماسٹر آف آرٹس[13]  ویکی ڈیٹا پر (P512) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ریاضی دان،  کمپیوٹر سائنس دان،  موجد،  ماہر معاشیات،  فلسفی،  استاد جامعہ،  انجینئر،  ماہر فلکیات  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان انگریزی[14]  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شعبۂ عمل ریاضی،  کمپیوٹر سائنس  ویکی ڈیٹا پر (P101) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ملازمت جامعہ کیمبرج  ویکی ڈیٹا پر (P108) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مؤثر ایڈا لولیس  ویکی ڈیٹا پر (P737) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اعزازات
رائل سوسائٹی فیلو  (1816)[13]
ایڈن برگ رائل سوسائٹی فیلو شپ
فیلو آف امریکن اکیڈمی آف آرٹ اینڈ سائنسز  ویکی ڈیٹا پر (P166) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دستخط
Charles Babbage Signature.svg
 

انہوں نے ہی پہلا میکانی کمپیوٹر ایجاد کیا جو الیکٹرونک کمپیوٹر کی بنیاد بنا۔ جدید کمپیوٹر کا تصور ببیج کے اینالیٹکل انجن (analytical engine) ہی کے مطابق ہے۔[16][20]

سوانح حیات اور تعلیمترميم

چارلس 26 دسمبر 1791ء کو لندن، انگلستان کے مقام پر پیدا ہوئےـ ان کا باپ بنیامین ببیج لندن میں ایک بینک کار اور امیر آدمی تھا، لہذا چارلس کے لیے ابتدائی تعلیم اشرافیہ اسکولوں اور اساتذہ سے حاصل کرنا ممکن تھاـ تقریباً آٹھ سال کی عمر میں انہیں ایک خطرناک بخار سے بچنے کے لیے ایک نواحی اسکول میں منتقل کرنا پڑاـ اس کے بعد، انہوں نے ٹوٹنس، جنوبی ڈیون میں کنگ ایڈورڈ VI گرامر اسکول میں شمولیت اختیار کی، لیکن نازک صحت نے انہیں نجی تدریس کی جانب واپسی پر مجبور کر دیا۔ اس کے بعد، انہوں نے ریورنڈ اسٹیفن فری مین کی طرف سے منظم ایک 30-سٹوڈنٹ کلوزڈ اکیڈمی میں شمولیت اختیار کی۔ اکیڈمی میں ایک بڑی لائبریری تھی جہاں ببیج خود سے ریاضی کا مطالعہ کرتے تھے۔ اس طرح انہیں ریاضی سے لگاؤ ہو گیا۔ اکیڈمی سے جانے کے بعد ان کے دو سے زیادہ ذاتی معلم تھے۔ 1812ء میں، جب ببیج کو پیٹر ہاؤس میں منتقل کر دیا گیا، وہ سب سے اچھے ریاضی دان تھے۔ لیکن وہ اعزاز کے ساتھ سندیافتہ ہونے میں ناکام رہے۔ یہاں تک کہ انہوں نے 1814ء میں بغیر امتحان کے ایک اعزازی ڈگری حاصل کی۔ آپ نے 18 اکتوبر 1871ء میں وفات پائی۔[21]

کمپیوٹر کا باپترميم

ببیج ﻧﮯ ریاضی ﺍﻭﺭ ﺍﻋﺪﺍﺩ ﻭ ﺷﻤﺎﺭ کے جدولوں كی ﺗﯿﺎﺭﯼ ﮐﮯ ﻟﺌﮯ ﮐﻠﺮﮐﻮﮞ کے ﺍﯾﮏ ﮔﺮﻭہ كو ﻣﻼﺯﻡ ركها ﺗﮭﺎ۔ ﺍﻥ جدولوں ﮐﯽ ﺟﺎﻧﭻ ﭘﮍﺗﺎﻝ ﮐﮯ لیے انہيں كئى ﮔﮭﻨﭩﮯ صرف ﮐﺮنا پڑتے۔ ليكن ﺍﺣﺘﯿﺎﻃﯽ ﺗﺪﺍﺑﯿﺮ ﺍﻧﺴﺎﻧﯽ ﻏﻠﻄﯿﻮﮞ ﮐﻮ ﺧﺘﻢ ﻧﮩﯿﮟ ﮐﺮ سكتيں۔ ﻭﮦ بار بار جدول بنانے كے كام سے اكتا گئے۔ نتيجتاً، ﻭﮦ ﺍﯾﮏ ايسى ﻣﺸﯿﻦ بنانے ﮐﮯ ﺑﺎﺭﮮ ﻣﯿﮟ ﺳﻮچنا ﺷﺮﻭﻉ ہوئے جو بنا غلطى كئے جدولوں كا حساب كر سكے۔ 1822ء میں انہوں نے ڈفرینشل انجن (differential engine) تیار کیا جو قابل اعتماد جدول بنا سکتا تھا۔ 1842ء میں انہوں نے اینالیٹکل انجن کا خیال پیش کیا، جو فی منٹ 60 اضافے کی اوسط رفتار سے ریاضی کے کسی بھی مسئلہ کے لیے حساب کے افعال کو مکمل طور پر خود کار طریقے سے انجام دے سکے۔ بدقسمتی سے، وہ اس مشین کا قابل عمل نمونہ تیار کرنے کے قابل نہیں تھے۔

بیرونی روابطترميم

حوالہ جاتترميم

  1. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb12124143j — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  2. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb12124143j — عنوان : Баббидж, Чарльз — جلد: IIa — شائع شدہ از: Brockhaus and Efron Encyclopedic Dictionary. Volume IIа, 1891
  3. ^ ا ب http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb12124143j — اخذ شدہ بتاریخ: 22 اگست 2017 — خالق: John O'Connor اور Edmund Robertson
  4. ^ ا ب دائرۃ المعارف بریطانیکا آن لائن آئی ڈی: https://www.britannica.com/biography/Charles-Babbage — بنام: Charles Babbage — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — عنوان : Encyclopædia Britannica
  5. ^ ا ب ایس این اے سی آرک آئی ڈی: https://snaccooperative.org/ark:/99166/w6mp5525 — بنام: Charles Babbage — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  6. ^ ا ب فائنڈ اے گریو میموریل شناخت کنندہ: https://www.findagrave.com/cgi-bin/fg.cgi?page=gr&GRid=12433 — بنام: Charles Babbage — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  7. ^ ا ب InPhO ID: https://www.inphoproject.org/2581 — بنام: Charles Babbage — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  8. عنوان : Баббидж, Чарльз — جلد: IIa — شائع شدہ از: Brockhaus and Efron Encyclopedic Dictionary. Volume IIа, 1891 — اقتباس: ... род. 26 дек. 1792 г. в Тейгмаут (Teigumouth) в Девоншире...
  9. Brockhaus Enzyklopädie online ID: https://brockhaus.de/ecs/enzy/article/babbage-charles — بنام: Charles Babbage
  10. این کے سی آر - اے یو ٹی شناخت کنندہ: https://aleph.nkp.cz/F/?func=find-c&local_base=aut&ccl_term=ica=ola2002150481 — اخذ شدہ بتاریخ: 23 نومبر 2019
  11. عنوان : Баббидж, Чарльз — جلد: IIa — شائع شدہ از: Brockhaus and Efron Encyclopedic Dictionary. Volume IIа, 1891
  12. http://www.nndb.com/people/913/000031820/ — اخذ شدہ بتاریخ: 15 مئی 2018
  13. ^ ا ب پ http://venn.lib.cam.ac.uk/cgi-bin/search-2016.pl?sur=&suro=w&fir=&firo=c&cit=&cito=c&c=all&z=all&tex=BBG810C&sye=&eye=&col=all&maxcount=50 — اخذ شدہ بتاریخ: 18 اکتوبر 2017
  14. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb12124143j — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  15. Terence Whalen (1999ء). Edgar Allan Poe and the masses: the political economy of literature in antebellum America. Princeton University Press. صفحہ 254. ISBN 978-0-691-00199-9. 6 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 18 اپریل 2013ء. 
  16. ^ ا ب پ Copeland، B. Jack (دسمبر 18, 2000ء). "The Modern History of Computing (Stanford Encyclopedia of Philosophy)". اسٹنفورڈ دائرۃ المعارف برائے فلسفہ. اخذ شدہ بتاریخ 1 مارچ 2017ء. 
  17. Halacy, Daniel Stephen (1970ء). Charles Babbage, Father of the Computer. Crowell-Collier Press. ISBN 0-02-741370-5. 
  18. "Charles Babbage Institute: Who Was Charles Babbage?". www.cbi.umn.edu. 6 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  19. Swade, Doron (2002ء). The Difference Engine: Charles Babbage and the Quest to Build the First Computer. Penguin. 
  20. Newman, M.H.A. (1948ء). ‘General Principles of the Design of All-Purpose Computing Machines’. Proceedings of the Royal Society of London, series A, 195. صفحات 271–274. 
  21. http://www.charlesbabbage.net/. اخذ شدہ بتاریخ 15 دسمبر 2016ء.  مفقود أو فارغ |title= (معاونت)