انیسہ محمد

ویسٹ انڈیز کی کرکٹ کھلاڑی

انیسہ محمد (پیدائش 7 ستمبر 1988ء) ٹرینیڈاڈینی کرکٹ کھلاڑی ہیں جو ٹرینیڈاڈ اور ٹوباگو اور ویسٹ انڈیز کے لیے کھیلتی ہیں۔ وہ دائیں ہاتھ سے آف اسپن بولر کے طور پر کھیلتی ہیں۔ 15 سال کی عمر میں اپنے بین الاقوامی پہلے میچ کے بعد سے انھوں نے 122 ایک روزہ بین الاقوامی میچاور 111 ٹی20 بین الاقوامی میچ کھیلے ہیں۔ انیسہ ٹی20 میں 100 وکٹیں لینے والے پہلی خاتون کرکٹ کھلاڑی ہیں، مرد ہو یا عورت۔ [1] خواتین ایک روزہ کرکٹ میں، وہ اس وقت 151 وکٹوں کے ساتھوکٹیں لینے والون کی کی فہرست میں پانچویں نمبر پر ہیں۔ [2] وہ ایک رووہ میچ میں 100 وکٹیں لینے والی ویسٹ انڈیز کی پہلی گیند باز بھی تھیں، [3] اور خواتین ٹوئنٹی 20 بین الاقوامی میچ میں ہیٹ ٹرک کرنے والی ویسٹ انڈیز کی پہلی گیند باز تھیں۔ [4]

انیسہ محمد
ANISA MOHAMMED (15704905815).jpg
 

شخصی معلومات
پیدائش 7 اگست 1988 (34 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
سانگرے گرانڈے  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Trinidad and Tobago.svg ٹرینیڈاڈ و ٹوباگو  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
ٹیم
Flag of Antigua and Barbuda.svg ویسٹ انڈیز قومی کرکٹ ٹیم  ویکی ڈیٹا پر (P54) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ کرکٹ کھلاڑی  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کھیل کرکٹ  ویکی ڈیٹا پر (P641) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ابتدائی زندگیترميم

انیسہ محمد کی پیدائش میراج ہل، کول مائن، سانگری گرانڈے، ٹرینیڈاڈ اور ٹوباگو کے ایک چھوٹے سے گاؤں میں ہوئی تھی۔ ان کے والدین نے انہیں اور ان کی جڑواں بہن الیسا کو کرکٹ کے کھیل سے متعارف کرایا۔ چھوٹی عمر سے ہی کھیل کو لے کر انہیں اپنی مقامی کمیونٹی ٹیم، ایم اے اے اے ڈی رینجرز کی کپتان مقرر کیا گیا تھا، جسے ان کے خاندان نے تشکیل دیا تھا۔ انہوں نے سانگری گرانڈے ہندو اسکول، سوہا ہندو کالج اور اسکول آف کنٹینیونگ اسٹڈیز، ٹرینیڈاڈ اور ٹوباگو میں تعلیم حاصل کی۔ مقامی کلب کے لیے اچھی کارکردگی کے بعد، انہیں ٹرینیڈاڈ اور ٹوباگو کی خواتین کی قومی کرکٹ ٹیم میں بلایا گیا۔ [5]

بین الاقوامی کرکٹترميم

ابتدائی میچترميم

انیسہ محمد نے 2003 آئی ڈبلیو سی سی ٹرافی جاپان میں ویسٹ انڈیز کے خلاف گروپ مرحلے کے ایک روزہ بین الاقوامی کرکٹ کھیلنے آغاز کیا۔ اپنی 15 ویں سالگرہ کے 12 دن بعد میدان میں اترتے ہوئے، انیسہ محمد نے رٹسوکو ہیروٹو کی وکٹ لے کر اپنے 10 اوورز میں 1/4 کے اعداد و شمار کے ساتھ میچ کو ختم کیا۔ [6] اس کے بعد انہیں اپنے پہلے بین الاقوامی دورے کے لیے منتخب کیا گیا جب ویسٹ انڈیز نے 2003-04 میں بھارت اور پاکستان کا دورہ کیا۔ کراچی کے اصغر علی شاہ کرکٹ اسٹیڈیم میں پاکستان کے خلاف ساتویں ایک روزہ میں، انیسہ نے اپنے صرف چوتھے بین الاقوامی میچ میں 2/17 کی کارکردگی دکھائی۔ [7] انھوں نے ویسٹ انڈیز کے لیے 2005 کے خواتین کرکٹ عالمی کپ کے گروپ مرحلے کے دوران میں جنوبی افریقا میں آئرلینڈ کے خلاف ایک میچ کھیلا۔ ویسٹ انڈیز اور میزبان ملک دونوں کے خاتمے کے بعد، ٹیموں نے پریٹوریا میں تین ایک روزہ میچ کھیلے جہاں وہ اپنے دو میچوں میں کوئی وکٹ لینے میں ناکام رہی۔ [8]

پانچ وکٹیںترميم

ایک روزہ بین الاقوامی کرکٹترميم

نمبر مخالف مقام تاریخ اعداد و شمار نتیجہ حوالہ
1   پاکستان آرنوس ویل اسٹیڈیم، کنگسٹاؤن 28 اگست 2011ء 5/5 (10 اوورز) 8 وکٹوں سے جیت لیا۔ [9]
2   پاکستان آرنوس ویل اسٹیڈیم، کنگسٹاؤن 30 اگست 2011ء 5/7 (10 اوورز) 89 رنز سے جیت لیا۔ [10]
3   پاکستان کریرا شکھا پروٹستان نمبر 2 گراؤنڈ، ڈھاکہ 17 نومبر 2011ء 5/26 (10 اوورز) 8 وکٹوں سے جیت لیا۔ [11]
4   پاکستان شیر بنگلہ نیشنل کرکٹ اسٹیڈیم، ڈھاکہ 26 نومبر 2011ء 7/14 (8.3 اوورز) 130 رنز سے جیت لیا۔ [12]
5   سری لنکا کینسنگٹن اوول، برج ٹاؤن 25 اپریل 2012ء 5/34 (9.3 اوورز) 88 رنز سے جیت لیا۔ [13]

ٹوئنٹی 20 بین الاقوامیترميم

نمبر مخالف مقام تاریخ اعداد و شمار نتیجہ حوالہ
1   جنوبی افریقا نیو لینڈز کرکٹ گراؤنڈ، کیپ ٹاؤن 26 اکتوبر 2009ء 5/10 (4 اوورز) 13 رنز سے جیت لیا۔ [14]
2   نیوزی لینڈ کینسنگٹن اوول، برج ٹاؤن 14 اکتوبر 2013ء 5/12 (4 اوورز) 23 رنز سے جیت لیا۔ [15]

نوٹسترميم

حوالہ جاتترميم

  1. "Anisa Mohammed— first to 100 T20I wickets". 25 نومبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 25 نومبر 2018. 
  2. "Records/Women's One Day Internationals/Bowling Records/Most Wickets". ESPNکرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 21 مئی 2021. 
  3. "Leading Ladies: First to 100 ODI wickets from each team". Women's CricZone. اخذ شدہ بتاریخ 6 جون 2020. 
  4. "Hat-trick heroes: First to take a T20I hat-trick from each team". Women's CricZone. اخذ شدہ بتاریخ 11 جون 2020. 
  5. "Profile of Anisa Mohammed". National Sporting Archives of Trinidad and Tobago. 13 جنوری 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 10 جنوری 2017. 
  6. "International Women's Cricket Council Trophy, 14th Match: Japan Women v West Indies Women at Amstelveen, Jul 26, 2003". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 10 جنوری 2017. 
  7. "West Indies Women tour of Pakistan, 7th ODI: Pakistan Women v West Indies Women at Karachi, Apr 2, 2004". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 10 جنوری 2017. 
  8. "List of One Day International matches played by Anisa Mohammed". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 10 جنوری 2017. 
  9. "Pakistan Women tour of West Indies, 1st ODI: West Indies Women v Pakistan Women at Kingstown, Aug 28, 2011". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 10 جنوری 2017. 
  10. "Pakistan Women tour of West Indies, 2nd ODI: West Indies Women v Pakistan Women at Kingstown, Aug 30, 2011". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 10 جنوری 2017. 
  11. "ICC Women's World Cup Qualifier, 11th Match, Group B: Pakistan Women v West Indies Women at Savar (2)، Nov 17, 2011". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 10 جنوری 2017. 
  12. "ICC Women's World Cup Qualifier, Final: Pakistan Women v West Indies Women at Dhaka, Nov 26, 2011". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 10 جنوری 2017. 
  13. "Sri Lanka Women tour of West Indies, 1st ODI: West Indies Women v Sri Lanka Women at Bridgetown, Apr 25, 2012". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 10 جنوری 2017. 
  14. "West Indies Women tour of South Africa, 2nd T20I: South Africa Women v West Indies Women at Cape Town, Oct 26, 2009". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 10 جنوری 2017. 
  15. "West Indies Tri-Nation Twenty20 Women's Series, 1st Match: West Indies Women v New Zealand Women at Bridgetown, Oct 14, 2013". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 10 جنوری 2017.