بھارت کے عام انتخابات، 1984ء

بھارت میں 1984ء میں عام انتخابات سابق بھارتی وزیر اعظم اندرا گاندھی قتل کے فوراً بعد منعقد ہوئے۔ آسام اور پنجاب، بھارت میں خانہ جنگی اور داخلی تنازعات کی وجہ وہاں 1985ء میں انتخابات ہوئے تھے۔

بھارت کے عام انتخابات، 1984ء

→ 1980ء 24، 27 اور 28 دسمبر 1984 1989ء ←

لوک سبھا کی 541 نشستیں
271 نشستیں جیت کے لیے درکار تھیں۔
  پہلی بڑی جماعت دوسری بڑی جماعت
  The Prime Minister Shri Rajiv Gandhi addressing the Special Session of the United nations on Disarmament, in New York in June, 1988 (1).jpg NTR in 1952.jpg
قائد راجیو گاندھی این ٹی راما راؤ
جماعت انڈین نیشنل کانگریس تیلگو دیشم پارٹی
قائد کی نشست امیٹھی کوئی نہیں
نشستیں جیتیں 414 30
فیصد 48.12% 4.06%

وزیر اعظم قبل انتخاب

راجیو گاندھی
کانگریس اتحاد

منتخب وزیر اعظم

راجیو گاندھی
کانگریس اتحاد

1984ء کے انتخابا ت میں اندرا گاندھی کے بیٹے راجیو گاندھی کی قیادت میں انڈین نیشنل کانگریس نے 514 نششتوں میں سے 404 نششتوں پر کامیابی حاصل کی اور بعد کے انتخابات میں مزید 10 نششتیں جیتیں۔ اندھرا پرديس ایک علاقائی جماعت، این ٹی راما راؤ کی تیلگو دیشم پارٹی 30 نشستوں کے ساتھ دوسری سب سے بڑی پارٹی رہی تھی۔اندرا گاندھی کا قتل اور 1984ء کے سکھ مخالف فسادات کے فوراً بعد نومبر میں انتخابات ہو گئے تھے جس میں بھارت عوام نے کانگریس کو کھل کر حمایت دی۔

نتائجترميم

جماعتیں ووٹ % نشستیں +/–
انڈین نیشنل کانگریس 115,478,267 49.10 404 +51
بھارتیہ جنتا پارٹی 18,202,853 7.74 2 نئی
جنتا پارٹی 16,210,514 6.89 10 –21
Lok Dal 14,040,064 5.97 3 نئی
بھارتیہ مارکسوادی کمیونسٹ پارٹی 13,809,950 5.87 22 –15
تیلگو دیشم پارٹی 10,132,859 4.31 30 نئی
بھارتیہ کمیونسٹ پارٹی 6,363,430 2.71 6 –4
Dravida Munnetra Kazhagam 5,695,179 2.42 2 –14
All India Anna Dravida Munnetra Kazhagam 3,968,967 1.69 12 +10
Indian Congress (Socialist) 3,577,377 1.52 4 نئی
Indian Congress (J) 1,511,515 0.64 1 نئی
Revolutionary Socialist Party 1,173,869 0.50 3 –1
All India Forward Bloc 1,055,556 0.45 2 –1
Jammu & Kashmir National Conference 1,010,243 0.43 3 0
انڈین یونین مسلم لیگ 658,821 0.28 2 0
Kerala Congress (Joseph) 598,113 0.25 2 نئی
Doordashi Party 508,426 0.22 0 نئی
Peasants and Workers Party of India 463,963 0.20 1 +1
جھارکھنڈ مکتی مورچہ 332,403 0.14 0 نئی
Kerala Congress 258,591 0.11 0 –1
آل انڈیا مسلم لیگ 224,155 0.10 0 0
Gandhi Kamraj National Congress 217,104 0.09 0 نئی
Socialist Unity Centre of India 196,767 0.08 0 0
Republican Party of India (Khobragade) 165,320 0.07 0 0
Manipur Peoples Party 149,019 0.06 0 0
Tamil Nadu Congress (K) 144,076 0.06 0 نئی
Naga National Democratic Party 113,919 0.05 0 نئی
Jammu & Kashmir Panthers Party 95,149 0.04 0 نئی
Maharashtrawadi Gomantak Party 83,122 0.04 0 –1
Peoples Party of Arunachal 78,455 0.03 0 0
Republican Party of India 22,877 0.01 0 0
Jharkhand Party 18,837 0.01 0 –1
Jammu & Kashmir Peoples Conference 646 0.00 0 نئی
Independents 18,623,803 7.92 5 –4
Invalid/blank votes 6,062,678
Total 241,246,887 100 514 –15
Registered voters/turnout 379,540,608 63.56
Source EIC

پنجاب اور آسام کے ملتوی انتخاباتترميم

جماعتیں ووٹ % نشستیں
انڈین نیشنل کانگریس 4,628,777 32.14 10
شرومنی اکالی دل 2,577,279 17.90 7
بھارتیہ مارکسوادی کمیونسٹ پارٹی 462,576 3.21 0
انڈین کانگریس (سوشلسٹ) 457,705 3.18 1
بھارتیہ کمیونسٹ پارٹی 369,687 2.57 0
پلین ٹرائبلز کونسل آف آسام 310,150 2.15 1
بھارتیہ جنتا پارٹی 263,284 1.83 0
جنتا پارٹی 420,082 2.92 0
لوک دل 46,627 0.32 0
Independents 4,864,958 33.78 8
Invalid/blank votes 646,951
کل 15,048,076 100 27
Registered voters/turnout 20,834,725 72.23
Source: ECI

مزید دیکھیےترميم

حوالہ جاتترميم