خرم سلطان (ترکی تلفظ: [hyɾˈɾem suɫˈta:n]، عثمانی ترکی زبان: خرم سلطان) جس کا شادی سے قبل نام روکسیلانہ (Roxelana) تھا سلیمان اعظم کی بیوی اور ملکہ اور شہزادہ محمد، مہر ماہ سلطان، شہزادہ عبد اللہ، سلیم دوم، شہزادہ بایزید اور شہزادہ جہانگیر کی والدہ تھی۔ .[3] وہ سلطنت عثمانیہ کی تاریخ میں سب سے طاقتور خواتین میں سے ایک تھی اور سلطنت خواتین کے طور پر جانے جانے والے دور کی ایک ممتاز شخصیت تھی۔ اس نے اپنے شوہر کے ذریعے سلطنت عثمانیہ میں اقتدار کی طاقت حاصل کی اور سیاست میں متاثر کن کردار نبھایا۔[4]

خرم سلطان
Hürrem Sultan
Khourrem.jpg

خاصکی سلطان
معلومات شخصیت
پیدائش ت 1502/04
ممکنہ طور پر روہاتین, مملکت پولینڈ
وفات 15 اپریل 1558 (عمر 53-56)
توپ قاپی محل, قسطنطنیہ, سلطنت عثمانیہ
مدفن جامع سلیمانیہ،  استنبول  ویکی ڈیٹا پر (P119) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of the Ottoman Empire (1844–1922).svg سلطنت عثمانیہ (1531–15 اپریل 1558)  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مذہب آرتھوڈوکس مسیحی سے تبدیل اسلام
شریک حیات سلیمان اعظم
اولاد نسل
خاندان عثمانی خاندان  ویکی ڈیٹا پر (P53) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
نسل شہزادہ محمد
مہر ماہ سلطان
شہزادہ عبداللہ
شہزادہ سلیم
شہزادہ بایزید
شہزادہ جہانگیر
دیگر معلومات
پیشہ ہمسر ملکہ  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

اسماء

اسے عام طور پر خاصکی خرم سلطان (Haseki Hürrem Sultan) (عثمانی ترکی: خاصکی خرم سلطان) یا خرم خاصکی سلطان کے نام سے جانا جاتا تھا۔ یورپی زبانوں میں اسے روکسیلانہ (Roxolana), روکسیلینہ (Roxolena), روکسیلین (Roxelane) اور روزا (Rossa) کے ناموں سے جانا جاتا ہے۔ ترکی میں خرم (فارسی سے خرم معنی "خوش") جبکہ عربی میں اسے کریمہ (عربی: كريمة) کے طور پر بھی جانا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ نام کی اشتقاقیات میں حور ام (فارسی سے معنی "میری حور") بھی شامل ہے۔ روکسیلانہ کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ اس کے اصل نام کی بجائے اس کے یوکرائنی خاندانی ورثے کے حوالہ سے اس کی عرفیت ہو سکتی ہے۔ جبکہ اس کا پیدائشی نام کے بارے میں اختلاف پایا جاتا ہے جس میں اس کا نام الیگزینڈرا لیزووسکا (Alexandra Lisowska), لا روزا (La Rossa) اور ایناستاسیا (Anastasia) کہا جاتا ہے۔

تصاویر

حوالہ جات

  1. The Encyclopædia Britannica, Vol.7, Edited by Hugh Chisholm, (1911), 3; Constantinople, the capital of the Turkish Empire...
  2. Britannica, Istanbul:When the Republic of Turkey was founded in 1923, the capital was moved to Ankara, and Constantinople was officially renamed Istanbul in 1930.
  3. The Imperial House of Osman GENEALOGY
  4. Ayşe Özakbaş, Hürrem Sultan, Tarih Dergisi, Sayı 36, 2000

سانچہ:عثمانی شجرہ نسب