طوارق (انگریزی: Tuareg people / Twareg or Touareg) بربر نسل کے قبائل کا اتحاد ہے۔ یہ بنیادی طور پر صحرائے اعظم میں مقیم ہیں جو لیبیا کے جنوب مغرب سے جنوبی الجزائر، نائجر، مالی اور برکینا فاسو تک پھیلے ہوئے ہیں۔ [6] یہ روایتی طور پر خانہ بدوش اور مویشی پالتے ہیں۔ یہ چھوٹے گروہ کی صورت میں شمالی نائیجیریا میں بھی پائے جاتے ہیں۔ [7]

طوارق
Tuareg
Imuhăɣ/Imašăɣăn/Imajăɣăn
ⵎⵂⵗ/ⵎⵛⵗⵏ/ⵎ‌ⵊⵗⵏ
Homme toureg.jpg
کل آبادی
ت 4.0 ملین
گنجان آبادی والے علاقے
Flag of Niger.svg نائجر2,596,634 (11% اس کی کل آبادی کا)[1]
Flag of Mali.svg مالی704,814 (3.5% اس کی کل آبادی کا)[2]
Flag of Burkina Faso.svg برکینا فاسو406,271 (1.9% اس کی کل آبادی کا)[3]
Flag of Algeria.svg الجزائر150,000 (0.36% اس کی کل آبادی کا)
Flag of Libya.svg لیبیا100,000 (nomadic, 1.5% اس کی کل آبادی کا)[4]
Flag of Nigeria.svg نائجیریا30,000 (0.015% اس کی کل آبادی کا)[5]
زبانیں
Tuareg languages (Tafaghist، Tamahaq، Tamasheq، Tamajeq، Tawellemmetمغربی عربی، فرانسیسی زبان، حسانی عربی
مذہب
اہل سنت
متعلقہ نسلی گروہ
Other بربر، Hausa people

طوارق لوگ طوارق زبانیں بولتے ہیں جو افرو۔ایشیائی زبانوں کے لسانی خاندان کی بربر شاخ سے تعلق رکھتی ہیں۔ طوارق لوگوں کو "نیلے لوگ" بھی کہا جاتا ہے کیونکہ یہ روایتی طور پر نیل سے رنگے کپڑے پہنتے ہیں جو ان کی جلد پر بھی داغ ڈالتا ہے۔ [8][9] اس نیم خانہ بدوش مسلمان لوگوں کے بارے میں یہ خیال کیا جاتا ہے کہ یہ شمالی افریقا کے بربر باشندے ہیں۔ [10] طوارق نسلی گروہوں کے بارے میں یہ خیال کیا جاتا ہے کہ یہ شمالی افریقا اور ملحقہ ساحلی علاقے میں اسلام کے پھیلاؤ میں تاریخی طور پر اثر انداز رہے ہیں۔ [11]

حوالہ جاتترميم

  1. "The World Factbook". Central Intelligence Agency. اخذ شدہ بتاریخ 08 اکتوبر 2016. ، Niger: 11% of 23.6 million
  2. "Africa: Mali – The World Factbook – Central Intelligence Agency". www.cia.gov. 27 اپریل 2021. اخذ شدہ بتاریخ 1 مئی 2021.  ، Mali: 1.7% of 20.1 million
  3. "The World Factbook". Central Intelligence Agency. اخذ شدہ بتاریخ 12 اکتوبر 2021. ، Burkina Faso: 1.9% of 21.4 million
  4. Adriana Petre؛ Ewan Gordon (جون 7, 2016). "Toubou-Tuareg Dynamics within Libya" (PDF). DANU Strategic Forecasting Group. 25 نومبر 2020 میں اصل (PDF) سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 1 نومبر 2020. 
  5. Pongou، Roland (2010-06-30). "Nigeria: Multiple Forms of Mobility in Africa's Demographic Giant". migrationpolicy.org (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 29 اکتوبر 2020. 
  6. Shoup III، John A. (2011). Ethnic Groups of Africa and the Middle East. ABC-CLIO. صفحہ 295. ISBN 978-1-59884-363-7. اخذ شدہ بتاریخ 7 نومبر 2016. 
  7. "The total Tuareg population is well above one million individuals." Keith Brown, Sarah Ogilvie, Concise encyclopedia of languages of the world، Elsevier, 2008, آئی ایس بی این 9780080877747، p. 152.
  8. Elizabeth Heath (2010). ویکی نویس: Anthony Appiah and Henry Louis Gates. Encyclopedia of Africa. Oxford University Press. صفحات 499–500. ISBN 978-0-19-533770-9. 
  9. Karl G. Prasse 1995.
  10. Susan J. Rasmussen (1996). "Tuareg". In David Levinson. Encyclopedia of World Culture, Volume 9: Africa and the Middle East. G.K. Hall. ISBN 978-0-8161-1808-3. 
  11. Harry T. Norris (1976). The Tuaregs: Their Islamic Legacy and Its Diffusion in the Sahel. London: Warminster. صفحات 1–4, chapters 3, 4. ISBN 978-0-85668-362-6. OCLC 750606862. ; For an abstract, ASC Leiden Catalogue; For a review of Norris' book: Stewart، C. C. (1977). "The Tuaregs: Their Islamic Legacy and its Diffusion in the Sahel. By H. T. Norris". Africa. 47 (4): 423–424. JSTOR 1158348. doi:10.2307/1158348.