صحرائے اعظم یا صحارا دنیا کا سب سے بڑا صحرا ہے جس کا رقبہ 9،000،000 مربع کلومیٹر (35 لاکھ مربع میل) ہے، جو تقریباً امریکہ کے کل رقبے کے برابر ہے۔ صحرائے اعظم شمالی افریقا میں واقع ہے۔ انگریزی میں اسے Sahara کہا جاتا ہے جو دراصل عربی لفظ "صحرا" کی جمع ہے۔
صحارا کا علاقہ ہر 20 ہزار سال بعد 6 ہزار سال کے لیے ہرا بھرا ہو جاتا ہے۔ ایسا اس لیے ہوتا ہے کہ زمین کا محور خود 26 ہزار سال میں ایک چکر مکمل کرتا ہے جسے Apsidal precession کہتے ہیں۔

صحرائے اعظم
 

انتظامی تقسیم
ملک الجزائر
چاڈ
مصر
المغرب
تونس
موریتانیہ
نائجر
مالی
سوڈان   ویکی ڈیٹا پر (P17) کی خاصیت میں تبدیلی کریں[1]
تقسیم اعلیٰ الجزائر ،  چاڈ ،  مصر ،  المغرب ،  لیبیا ،  مالی ،  سوڈان ،  تونس ،  موریتانیہ   ویکی ڈیٹا پر (P131) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جغرافیائی خصوصیات
متناسقات 23°04′47″N 12°36′44″E / 23.079722222222°N 12.612222222222°E / 23.079722222222; 12.612222222222   ویکی ڈیٹا پر (P625) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رقبہ
قابل ذکر
جیو رمز 2212709  ویکی ڈیٹا پر (P1566) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Map
خلاء سے صحرائے اعظم کا منظر

صحرائے اعظم کے مغرب میں بحر اوقیانوس، شمال میں کوہ اطلس، اور بحیرہ روم، مشرق میں بحیرہ احمر اور مصر اور جنوب میں دریائے نائجر کی وادی اور سوڈان واقع ہیں۔ صحرائے اعظم مختلف حصوں میں تقسیم ہے، جن میں وسطی کوہ ہقار، کوہ تبستی، کوہ ایئر، صحرائے تنیر اور صحرائے لیبیا شامل ہیں۔ صحرائے اعظم کی بلند ترین چوٹی ایمی کوسی ہے جس کی بلندی 3415 میٹر ہے اور یہ شمالی چاڈ میں کوہ تبستی کے سلسلے میں واقع ہے۔

صحرائے اعظم میں کل 25 لاکھ افراد رہائش پزیر ہیں جن کی اکثریت مصر، ماریطانیہ، مراکش اور الجزائر سے تعلق رکھتی ہے۔ یہاں رہنے والے باشندوں کی اکثریت بربر نسل سے تعلق رکھتی ہے۔

حوالہ جات ترمیم

  یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کر کے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔
  1.    "صفحہ صحرائے اعظم في GeoNames ID"۔ GeoNames ID۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 مئی 2024ء