عتیق الرحمن سنبھلی

مولانا عتیق الرحمن سنبھلی (وفات: 23 جنوری 2022ء) بھارت کے مشہور علمی شخصیت اور متعدد علمی و تحقیقی کتابوں کے مصنف رہے ہیں.[1] مولانا منظور نعمانی کے سب سے بڑے فرزند تھے۔

عتیق الرحمن سنبھلی
معلومات شخصیت
تاریخ وفات 23 جنوری 2022  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg ہندوستان  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والد منظور نعمانی  ویکی ڈیٹا پر (P22) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بہن/بھائی
عملی زندگی
پیشہ عالم،  مصنف  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ابتدائی زندگیترميم

مولانا عتیق الرحمن سنبھلی بھارت کے بیسویں صدی کے مشہور علمی شخصیت منظور نعمانی کے بڑے فرزند تھے، مولانا کی پیدائش ان کے آبائی وطن اتر پردیش کے قصبہ سنبھل میں 15 مارچ 1926ء کو ہوئی، ان کا خاندان قدیم علمی خاندان تھا۔ اعلیٰ دینی تعلیم دار العلوم دیوبند سے حاصل کی جہاں سے انھوں نے سنہ 1950ء میں فراغت حاصل کی۔ ان کے مشہور اساتذہ میں حسین احمد مدنی ہیں۔ اسعد مدنی اور محمد سالم قاسمی ان کے درسی ساتھی تھے۔[2]

عملی زندگیترميم

رسمی تعلیم سے فراغت کے بعد اپنے والد کے جاری کردہ رسالہ "الفرقان" سے منسلک ہو گئے، طویل عرصے سے اس کے ایڈیٹر رہے۔ اپنے چھوٹے بھائی حفیظ نعمانی کے ساتھ ملکر انھوں نے ایک اخبار "ہفت روزہ ندائے ملت" بھی جاری کیا، جس کے سرپرست ابو الحسن علی ندوی اور منظور نعمانی تھے۔ مسلم مجلس مشاورت کے قیام میں بھی فعال کردار ادا کیا۔ بعد میں وہ برطانیہ منتقل ہو گئے جہاں ایک عرصے تک قیام کیا۔ وہاں سے بھی مضامین و کتب لکھنے کا سلسلہ جاری رکھا۔ [3]

اخیر میں پھر وہ بھارت میں مقیم ہو گئے تھے جہاں وہ دہلی میں رہتے تھے۔ طویل علالت کے بعد 23 جنوری سنہ 2022ء میں ان کا انتقال ہوا۔

تصنیفاتترميم

مولانا ایک علمی شخصیت کے مالک تھے، تفسیر، تاریخ، سیاست، حالات حاضرہ اور فکر اسلامی پر کتابیں اور بے شمار مضامین لکھتے تھے۔[4]

  • محفل قرآن (6 جلدیں)
  • حیات نعمانی (منظور نعمانی کی سوانح حیات)
  • واقعہ کربلا اور اس کا پس منظر
  • انقلاب ایران اور اس کی اسلامیت
  • طلاق ثلاثہ اور حافظ ابن قیم

حوالہ جاتترميم

  1. "مولانا عتیق الرحمن سنبھلی". alsharia.org. 
  2. "ممتازبزرگ عالم دین مولانا عتیق الرحمن سنبھلی طویل علالت کے باعث انتقال کرگئے". Daily Pakistan. 23 جنوری، 2022. 
  3. "معروف عالم دین مولانا عتیق الرحمان سنبھلی کا انتقال | Online Urdu News Portal | Urdu News Paper". 23 جنوری، 2022. 
  4. "مولانا عتیق الرحمن سنبھلی کے انتقال پر مولانا عبد اللہ قاسمی کا اظہار تعزیت | Online Urdu News Portal | Urdu News Paper". 24 جنوری، 2022.