ہری رام (سیاستدان)

پاکستان میں سیاستدان

ہری رام ، سندھ سے تعلق رکھنے والا ایک پاکستانی ہندو سیاست دان ہیں۔ جو سندھ کی صوبائی اسمبلی کے پانچ بار قانون ساز رہنے والے پہلے غیر مسلم تھے ۔ ۔ انھوں نے 2012 سے 2018 تک سینیٹ میں خدمات انجام دیں۔

ہری رام (سیاستدان)
معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1952ء (عمر 71–72 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت پاکستان   ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جماعت پاکستان پیپلز پارٹی   ویکی ڈیٹا پر (P102) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مناصب
رکن صوبائی اسمبلی سندھ [1]   ویکی ڈیٹا پر (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رکن سنہ
13 اگست 2018 
حلقہ انتخاب پی ایس-47  
پارلیمانی مدت 15ویں سندھ صوبائی اسمبلی  
عملی زندگی
پیشہ سیاست دان   ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مادری زبان اردو   ویکی ڈیٹا پر (P103) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان اردو   ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ابتدائی زندگی

ترمیم

رام 29 مئی 1952 کو میرپورخاص میں پیدا ہوئے۔ انھوں نے ہائی اسکول تک تعلیم حاصل کی۔ [2]

سیاسی کیریئر

ترمیم

رام نے مقامی ہندو برادری کے پانچ نمائندوں میں سے ایک کے طور پر 1988، 1990، 1993 اور 1997 میں سندھ کی صوبائی اسمبلی کے مسلسل چار انتخابات جیتے؛ اس کی کوئی سیاسی وابستگی نہیں تھی۔ 2012 میں، وہ سندھ سے اقلیتوں کے لیے مخصوص نشست پر پاکستان پیپلز پارٹی سے سینیٹ آف پاکستان کے لیے منتخب ہوئے۔ 2018 میں، وہ میرپور خاص-I سے صوبائی اسمبلی کے لیے منتخب ہوئے۔ انھیں وزیر اعلیٰٰ سید مراد علی شاہ کی کابینہ میں شامل کیا گیا اور انھیں سماجی بہبود اور جیل کے اضافی محکموں کے ساتھ اقلیتی امور کا وزیر بنایا گیا۔ [3]

ذاتی زندگی

ترمیم

ہری رام کا ایک بیٹا ہے۔ 21 مئی 2021 کو وزارتی اجلاس میں شرکت کے دوران انھیں دل کا دورہ پڑا۔ [4][5]

حوالہ جات

ترمیم
  1. http://www.pas.gov.pk/index.php/members/profile/en/32/666
  2. "Profile"۔ www.pas.gov.pk۔ Provincial Assembly of Sindh۔ اخذ شدہ بتاریخ 16 ستمبر 2018 
  3. Detailed Results of Elections to the Provincial Assembly of Sindh آرکائیو شدہ (Date missing) بذریعہ ecp.gov.pk (Error: unknown archive URL). Undated. Election Commission of Pakistan
  4. "Sindh Food Minister Kishori Lal suffers heart attack"۔ Daily Times (بزبان انگریزی)۔ 2021-05-21۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 دسمبر 2022 
  5. The Newspaper's Correspondent (2020-06-08)۔ "Minister's son, guard and driver injured in accident"۔ DAWN.COM (بزبان انگریزی)۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 دسمبر 2022