یہ جانبازوں کا مسکن ہے

یہ جانبازوں کا مسکن ہے(پشتو: دا د باتورانو کور) امارت اسلامیہ افغانستان کا قومی ترانہ ہے۔ یہ ایک پشتو زبان کا نشید ( آکاپلا گیت، یعنی موسیقی کے آلات کےبغیر گیت) ہے۔علماء کے مطابق موسیقی کے آلات حرام (مذہبی طور پر ممنوع یا غیر شرعی ) ہیں۔

دا د باتورانو کور
اردو: یہ جانبازوں کا مسکن ہے
Arms of the Islamic Emirate of Afghanistan.svg

قومی ترانہ Flag of افغانستان افغانستان
منتخب2021
نمونہ موسیقی

امارت اسلامیہ کے پاس کوئی باضابطہ قانون نہیں ہے جس میں اس کی علامتوں کی وضاحت ہو ، بشمول پرچم اور ترانہ۔یہ نشید عام طور پر طالبان کے سرکاری ریڈیو صدائے شریعت کی نشریات کے افتتاحی نشریات میں استعمال ہوتا تھا ۔2013 میں ، جب امارت اسلامیہ نے قطر کے شہر دوحہ میں اپنا دفتر کھولا ، یہ گیت پرچم کشائی کی تقریب کے دوران چلایا گیا۔ اس کی وجہ سے ، یہ طالبان اور ان کی حکومت کا درحقیقت قومی ترانہ سمجھا جاتا ہے۔ [1] [2]

اس ترانے کے لیے سب سے زیادہ استعمال ہونے والی ریکارڈنگ میں ملا فقیر محمد درویش کی آواز ہے جو کہ ایک مقبول منشد (نشیدگلوکار) ہیں۔ [3]

متنترميم

پشتو
نقل حرفی
( شمالی لہجہ)
ترجمہ

ساتو يې پۀ سرو وينو
دا د شهيدانو کور

دا د باتورانو کور
دا د باتورانو کور

ستا کاڼي او بوټي ټول
مونږه ته لعلونه دي

وينه پرې توی شوې ده
سرۀ لکه گلونه دي

کله يې څوک نيولای شي
دا دی د زمريانو کور

دا د باتورانو کور
دا د باتورانو کور

تا به تل آزاد ساتو
څوچې وي ژوندون زمونږ

ستا تاريخ به ياد ساتو
څوچې وي ژوندون زمونږ

دې کښې به بازان اوسي
دا دی د بازانو کور

دا د باتورانو کور
دا د باتورانو کور

ای گرانه وطن زما
ځار شمه لۀ تا نه زۀ

ای ښايسته چمن زما
ځار شمه لۀ تا نه زۀ

خلاص که لۀ انگرېز نه وو
شو د اورسانو گور

دا د باتورانو کور
دا د باتورانو کور

ډېرۍ ککرۍ گوره
پاتي د روسانو شوې

شنډېدۀ هر يو دښمن
واړۀ ارزوگانې شوې

هرچا ته معلوم شولو
دا د افغانانو کور

دا د باتورانو کور
دا د باتورانو کور

ساتو ئې پۀ سرو وينو
دا د شهيدانو کور

دا د باتورانو کور
دا د باتورانو کور
|}

Sātu-ye pə sro wino
dā də šahidāno kor

Dā də bātorāno kor
dā də bātorāno kor

Stā kāṇi aw boṭi ṭol
munga-ta laʿluna di

Wina pre toy-šəwe da
srə ləka guluna di

Kəla-ye tsok niwəlay ši
dā day də zmaryāno kor

Dā də bātorāno kor
dā də bātorāno kor

Tā-ba təl āzād sātu
tsoče wi žwandun zamung

Stā tārix ba yād sātu
tsoče wi žwandun zamung

De-ke ba bāzān osi
dā day də bāzāno kor

Dā də bātorāno kor
dā də bātorāno kor

Ay grāna watan zama
dzar šəma lə tā-na zə

Ay xaysta čaman zama
dzar šəma lə tā-na zə

Xlās ka lə Angrez-na wu
šu də Urusāno gor

Dā də bātorāno kor
dā də bātorāno kor

Ḍerəy, kakarəy gora
pāti də Rusāno šwe

Šanḍedə haryəw dux̌man
wāṛə arzogāne šwe

Harčā-ta maʿlum šwəlo
dā də Afǧānāno kor

Dā də bātorāno kor
dā də bātorāno kor

Sātu-ye pə sro wino
dā də šahidāno kor

Dā də bātorāno kor
dā də bātorāno kor
|}

ہم اپنے خون سے اس کا دفاع کریں گے،
یہ شہیدوں کا مسکن ہے!

یہ جانبازوں کا مسکن ہے،
یہ جانبازوں کا مسکن ہے!

اس سرزمیں کے سنگ و خار،
مانندِ یاقوت ہیں ہمارے لیے !

یہاں پر خون ارزاں رہا ہے،
یہ سرزمین مانندِ گلاب سرخ ہے!

کیا تمہیں لگتا ہے کہ اسے فتح کیا جا سکتا ہے؟
یہ شیروں کا مسکن ہے!

یہ جانبازوں کا مسکن ہے،
یہ جانبازوں کا مسکن ہے!

ہم اس کی آزادی کے محافظ رہیں گے،
جب تک سانس میں سانس رہے گا!

ہم تمہاری تاریخ یاد رکھیں گے
جب تک جاں میں جاں رہے گی!

یہ شاہینوں کی آماجگاہ بنے گی
یہ عقابوں کا نشیمن ہے!

یہ جانبازوں کا مسکن ہے،
یہ جانبازوں کا مسکن ہے!

اے ارضِ وطن،
میں اپنی زندگی تم پر قربان کرچکا!

اے چمنِ بہاراں،
میں اپنی زندگی تم پر قربان کرچکا!

ہم انگریز سے آزادی حاصل کر چکے ،
 ہم روسیوں کی موت بن چکے!

یہ جانبازوں کا مسکن ہے،
یہ جانبازوں کا مسکن ہے!

ذرا اک نگاہ ان پہاڑیوں اورچوٹیوں پر ڈالو
روسی انہیں چھوڑ کے جاچکے!

ہر دشمن ناکام ہوا،
ان کی امیدیں خاک میں مل گئیں!

اب یہ ہر ایک کے لیے واضح ہو،
یہ افغانوں کا وطن ہے!

یہ جانبازوں کا مسکن ہے،
یہ جانبازوں کا مسکن ہے!

ہم اپنے خون سے اس کا دفاع کریں گے
یہ شہیدوں کا مسکن ہے!

یہ جانبازوں کا مسکن ہے،
یہ جانبازوں کا مسکن ہے!

مزید دیکھیےترميم

حوالہ جاتترميم

  1. "BBCNazer.com | زندگى و آموزش | حرف های مردم: سرود ملی". www.bbc.co.uk. اخذ شدہ بتاریخ 18 اگست 2021. بعد از 5سال حکومت مجاهدين از هم پاشيد و حکومت طا لبان در افغانستان روی کار آمد، آنها با تغيير در ساير عرصه ها سرد ملی را تغيير دادند: ساتو يې په سرو وينو - دا د باتورانو کور... 
  2. Dr. Weyal، N. M. "د ملي سرود تاریخ | روهي". Rohi.Af (بزبان پشتو). اخذ شدہ بتاریخ 18 اگست 2021. 
  3. "ملا فقیر محمد درویش د جهادي ترنم منل شوی سرخیل". نن ټکی اسیا (بزبان پشتو). 2018-01-16. اخذ شدہ بتاریخ 18 اگست 2021. د طالبانو د حاکمیت په مهال د شریعت غږ راډیو د نشراتي پروګرام پیلیدونکې ترانه هم د ده په انقلابی غږ کې ویل شوې: (ساتو یې په سرو وینو دا د شهیدانو کور..دا د باتورانو کور دا د باتورانو کور)