بوشنیاک یا بوسنیائی یا بوسنیائی مسلم (Bosniaks) (بوسنیائی: Bošnjaci) ایک جنوبی سلاو نسلی گروہ جو بنیادی طور پر بوسنیا و ہرزیگووینا میں آباد ہیں جبکہ کئی دیگر ممالک میں مقامی اقلیت کے طور پر بھی موجود ہیں۔

بوشنیاک
Bosniaks
Bošnjaci
کل آبادی
3~4.5 ملین
گنجان آبادی والے علاقے
 بوسنیا و ہرزیگووینا2,185,055[1]
 ترکیہ101,000 - 2,000,0001[2][3]
 جرمنی158,158[4]
 سربیا145,278[5]
 آسٹریا128,047[6]
 ریاستہائے متحدہ98,766 - 350,000[7][8]
 سویڈن56,595[9]
 مونٹینیگرو53,605[10]
 سویٹزرلینڈ46,773[11]
 کوسووہ45,600[12]
 کرویئشا31,479[13]
 سلووینیا21,542[14]
 کینیڈا21,040[15]
 ڈنمارک21,000[16]
جمہوریہ مقدونیہ کا پرچم مقدونیہ17,018[17]
 آسٹریلیا17,993[18]
 ناروے16,338[19]
 اطالیہ3,600[20]
 بلجئیم2,182[21]
 یورپی اتحاد کل400,000[22]
زبانیں
بوسنیائی
مذہب
اکثریت سنی مسلم[23]
متعلقہ نسلی گروہ
[24][25]

بوشنیاک / بوسنیاک (Bosniaks) اور بوسنیائی (Bosnians) میں فرق ترمیم

(Bosniaks) سے عمومی مراد بوسنیائی مسلمان ہیں۔ (Bosnians) سے مراد بوسنیا میں رہنے والے بوسنیائی ہیں جو کسی بھی مذہب سے ہو سکتے ہیں۔

حوالہ جات ترمیم

  1. "CIA Fact Book"۔ Cia.gov۔ 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 05 جنوری 2012 
  2. Joshua Project (2010-04-13)۔ "Bosniak of Turkey Ethnic People Profile"۔ Joshuaproject.net۔ 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 05 جنوری 2012 
  3. Milliyet (2008-06-06)۔ "Türkiye'deki Kürtlerin sayısı!"۔ http://www.milliyet.com.tr۔ 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 05 مئی 2013  روابط خارجية في |publisher= (معاونت)
  4. "Germans and foreigners with an immigrant background"۔ 04 مئی 2009 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 08 اپریل 2014 
  5. "Попис становништва, домаћинстава и станова 2011. у Републици Србији: НАЦИОНАЛНА ПРИПАДНОСТ" (PDF)۔ 08 جولا‎ئی 2018 میں اصل (PDF) سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 22 دسمبر 2012 
  6. Bosnian Austrians
  7. "The 2000 USA census"۔ 12 فروری 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 08 اپریل 2014 
  8. "About CNAB : Congress of North American Bosniaks"۔ Bosniak.org۔ 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 05 جنوری 2012 
  9. http://www.scb.se/sv_/Hitta-statistik/Statistikdatabasen/TabellPresentation/?layout=tableViewLayout1&rxid=37c05bc4-26cd-4e52-9ac7-b9ff6748eb38
  10. "Census of Population, Households and Dwellings in Montenegro 2011" (PDF)۔ July 12, 2011۔ اخذ شدہ بتاریخ 13 جولا‎ئی 2011 
  11. "Pub_Auslaender_D.pdf" (PDF)۔ 25 دسمبر 2018 میں اصل (PDF) سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 05 جنوری 2012 
  12. "World Bank Living Standards Measurement Study 2001 Estimate"۔ Enrin.grida.no۔ 07 نومبر 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 05 جنوری 2012 
  13. Cro Census 2011، Dzs.hr 
  14. "Statistični urad RS - Popis 2002"۔ 30 مئی 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 08 اپریل 2014 
  15. "By Ethnic origin"۔ 2.statcan.ca۔ 2011-07-04۔ 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 05 جنوری 2012 
  16. "Kilde: "Ældre bosniske flygtninge søger hjem""۔ Folkedrab.dk۔ 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 05 جنوری 2012 
  17. "Macedonian Census 2002" (PDF)۔ 25 دسمبر 2018 میں اصل (PDF) سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 05 جنوری 2012 
  18. "2054.0 Australian Census Analytic Program: Australians' Ancestries (2001 (Corrigendum))" (PDF)۔ اخذ شدہ بتاریخ 05 جنوری 2012 
  19. "آرکائیو کاپی"۔ 07 اگست 2011 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 08 اپریل 2014 
  20. Joshua Project (2010-04-13)۔ "Bosniak of Italy Ethnic People Profile"۔ Joshuaproject.net۔ 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 05 جنوری 2012 
  21. "Belgium figures"۔ Dofi.fgov.be۔ 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 05 جنوری 2012 
  22. "2 DEMOGRAFIA 2006.pmd" (PDF)۔ 25 دسمبر 2018 میں اصل (PDF) سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 05 جنوری 2012 
  23. Alireza Bagherzadeh (2001)۔ "L’ingérence iranienne en Bosnie-Herzégovine," in Xavier Bougarel and Nathalie Clayer, eds., Le Nouvel Islam balkanique۔ Paris۔ صفحہ: 397–428 
  24. "Ethnologue - South Slavic languages"۔ www.ethnologue.com۔ 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 08 فروری 2011 
  25. Marjanović, Damir; et al. "The peopling of modern Bosnia-Herzegovina: Y-chromosome haplogroups in the three main ethnic groups." Institute for Genetic Engineering and Biotechnology, University of Sarajevo. November 2005