عزیز کنگرانی

مصنف، شاعر، افسانہ نگار، ڈراما نگار

عزیز کنگرانی (انگریزی: Aziz Kingrani) (پیدائش: 4 جنوری، 1958ء) پاکستان سے تعلق رکھنے والے انگریزی اردو اور سندھی زبان کے نامور ادیب، افسانہ نگار، ڈرراما نویس، شاعر، محقق، مورخ اور ماہر آثاریات ہیں۔ وہ کئی دہائیوں تک درس و تدریس کے شعبے سے وابستہ رہنے کے بعد ضلع دادو کے مقامی کالج سے پروفیسر کے عہدے سے ریٹائر ہوئے۔

عزیز کنگرانی
Aziz Kingrani.jpg
 
عزيز کنگرانی، رانی کوٹ کی تصوير(25 دسمبر 2011ء)  ویکی ڈیٹا پر (P18) کی خاصیت میں تبدیلی کریں 

معلومات شخصیت
پیدائش 4 جنوری 1958 (63 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جوہی،  ضلع دادو،  سندھ،  پاکستان  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رہائش جوہی  ویکی ڈیٹا پر (P551) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ سندھ  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تعلیمی اسناد ماسٹر آف آرٹس  ویکی ڈیٹا پر (P512) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ مؤرخ،  ڈراما نگار،  شاعر،  افسانہ نگار،  پروفیسر  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان انگریزی،  سندھی،  اردو  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شعبۂ عمل نظم،  غزل،  افسانہ،  ڈراما،  آثاریات،  سندھ کی تاریخ،  بیت،  آزاد نظم  ویکی ڈیٹا پر (P101) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اعزازات
طلائی تمغا  ویکی ڈیٹا پر (P166) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ویب سائٹ
ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ  ویکی ڈیٹا پر (P856) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
P literature.svg باب ادب

حالات زندگیترميم

عزیز کنگرانی 4 جنوری 1958ء میں ضلع دادو کی تحصیل جوہی کے گاؤں حاجی مانک خان کنگرانی میں پیدا ہوئے۔ ان کا پورا نام عزیزاللہ ولد سومار خان ہے۔ انہوں نے ابتدائی تعلیم جوہی اور بی اے کی ڈگری کالج دادو سے حاصل کی۔ بعد ازاں سندھ یونیورسٹی سے 1985ء میں ایم اے (اسلامی ثقافت) ا ور 1987ء میں ایم اے (سندھی) میں ڈگریاں حاصل کیں۔ آخر الذکر میں انہوں نے گولڈ میڈل حاصل کیا۔ ان کی سندھی اور انگریزی زبانوں میں لاتعداد کتب شائع ہوئی ہیں۔ ان کے تاریخ و ثقافت کے موضوع پرمضامین پاکستانی کثیر الاشاعت انگریزی اخبار روزنامہ ڈان میں شائع ہوتے ہیں۔ اس کے علاوہ ان کے تحریر کردہ ڈرامے پاکستان ٹیلی وژن سمیت مختلف نجی ٹی وی چینلز پر نشر ہوئے ہیں۔[1]

اعزازاتترميم

  • 1990ء - گولڈ میڈل - سندھ یونیورسٹی
  • 1996ء - لعل شہاز قلندر ایوارڈ
  • 1995ء - کینجھر ایوارڈ برائے تحقیق
  • 2002ء - مخدوم بلاول ایوارڈ
  • 2003ء -کے ٹی این ایوارڈ برائے بہترین ڈراما نگار
  • 2003ء -مدرِ وطن ایوارڈ برائے بہترین مصنف
  • 2003ء -بہترین مصنف ایوارڈ - جوہی پریس کلب
  • 2006ء -کے ٹی این ایوارڈ برائے بہترین ڈراما نگار
  • 2008ء - استاد بخاری تحقیق ایوارڈ
  • 2015ء -پی ٹی ایوارڈ برائے بہترین ڈراما نگار
  • 2016ء - لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈ - سندھی ادبی سنگت
  • 2018ء - بہترین ڈراما مصنف ایوار، امتُل سوشل ویلفیئر ایسوسی ایشن

تصانیفترميم

  • 2005ء - روگ (کہانیاں، سندھی)
  • 2009ء - اکھر اکھر آرسی (لغت، سندھی)
  • 2012ء - Sindh Tourism: An archaeological Journey
  • 2016ء - گورکھ متھے چنڈ (شاعری، سندھی)
  • 2017ء - پیار گرہن (کہانیاں، سندھی)
  • انڈس اسکرپٹ ان اسٹونز پیکاک پبلشر کراچی 2019ء[2]

بیرونی روابطترميم

حوالہ جاتترميم

  1. "نوجوان مصنفین نے اچھے ڈرامے اور افسانے تخلیق کیے ہیں، عزیز کنگرانی، دی سندھ ٹائمز حیدرآباد، 19 مارچ 2017ء". 13 اپریل 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 19 مارچ 2017. 
  2. https://www.dawn.com/news/1541070/books-in-brief