محمد اسماعیل سلفی

عالم دین

محمد اسماعیل سلفی معروف عالمِ دین، محقق، خطیب اور مترجم تھے اور آپ جمعيت اہلحديث پاکستان کے امير تھے۔

محمد اسماعیل سلفی
معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1895  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وزیر آباد  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 20 فروری 1968 (72–73 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
گوجرانوالہ  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند
Flag of Pakistan.svg پاکستان  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ عالم،  معلم،  محدث،  مورخ،  مصنف،  سیاست دان  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مادری زبان اردو  ویکی ڈیٹا پر (P103) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان اردو  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
P islam.svg باب اسلام

نام ونسبترميم

محمد اسماعیل بن محمد ابراہیم بن حکیم عبد اللہ بن محکم دین آپ راجپوتخاندان سے تعلق رکھتے تھے۔

پیدائشترميم

آپ1895ءبمطابق 1314ھ ميں قصبہ ڈھونیکی،تحصیل وزیر آباد ميں پيدا ہوئے۔ آپ کے والد کا نام نام مولوی کليم محمد ابراہيم تھا۔[1]

تعلیمترميم

ابتدائی تعلیم اپنے والد مولانا محمد ابراہیم سے حاصل کی۔ اس کے بعد مولانا عبدالمنان وزیرآبادی کے شاگرد ہوئے اور 1333ھ میںسندحاصل کر کے فارغ التحصیل ہوئے۔ یہاں سے دلی چلے اورمدرسہ نذیریہ میں مولاناعبدالجبار عمرپوریاور دیگرسے استفادہ کیا۔ پھرمدرسہ غزنویہ میں اکابرِغزنویہ اورمفتی محمدحسن (بانی جامعہ اشرفیہ لاہور) سے فنون کی کتابیں پڑھیں۔ بالآخر سیالکوٹ جاکر محمد ابراہیم میر سیالکوٹی کے شاگرد ہوئے۔

اساتذہترميم

آپ کے اساتذہ میں

  • حافظ محمد ابراہیم میر سیالکوٹی،
  • مولوی حکيم محمد عالم امرتسری،
  • مولانا سيد عبد الغفور غزنوی،
  • مولانا مفتی محمد حسن امرتسری،
  • مولانا عبدالجبار عمر پوری،
  • مولانا عمر الدين وزيرآبادی،
  • مولانا عبدالستار اور آپ کے والد
  • مولوی محمد ابراہیم شامل ہیں۔

جماعتی سرگرمیاںترميم

قیامِ پاکستان سے پہلے آپ آل انڈیا اہل الحدیث کانفرنس کی مجلسِ عامہ کے رکن تھے، قیامِ پاکستان کے بعد مولانا سید محمد داؤد غزنوی رحمہ اللہ نے جمعیت اہل الحدیث کی بنیاد رکھی تو آپ کو اس کا ناظم مقرر کیا گیا۔ بعد مولانا سید محمد داؤد غزنوی رحمہ اللہ کی وفات کے بعد آپ جمعیت اہل الحدیث پاکستان کے امیر منتخب ہوئے۔

کتبترميم

آپ کی مطبوعہ و غیر مطبوعہ تصنیفات ذیل ہیں۔

  1. مشکوۃ المصابيح مترجم
  2. مقامِ حدیث قرآن کی روشنی میں
  3. امام بخاری کا مسلک
  4. حدیث کی تشریعی اہمیت
  5. رسولِ اکرم ﷺ کی نماز
  6. جماعتِ اسلامی کانظریہ حدیث
  7. مسئلہ زیارتِ قبور
  8. مسئلہ حيات النبی ﷺ
  9. شرح المعلقات السبع
  10. تحريک آزادي فکر اور شاہ ولی اللہ دہلوی کی تجديدی مساعی
  11. حجيت حديث آنحضرت ﷺ کی سيرت کی روشنی ميں
  12. خطبات سلفيہ
  13. موقف الجماعۃ الاسلاميہ من الحديث النبوی
  14. مقالات حدیث [2]
  15. ۔ اسلامی حکومت کا مختصر خاکہ [3]

وفاتترميم

محمد اسماعیل سلفی کا انتقال 20 فروری 1968ء بمطابق ذي قعدہ 1387ھ کو 73 سال کی میں پاکستان کے شہر گوجرانوالہ میں ہوا۔

بیرونی روابطترميم

حوالہ جاتترميم