اسمیخان سلطان

عثمانی شہزادی

اسمیخان سلطان (عثمانی ترکی زبان: اسمیخان سلطان; ت 1545 – 8 اگست 1585) ایک عثمانی شہزادی، سلیم ثانی (دور 1566–74) اور نور بانو سلطان کی بیٹی تھی۔ اسمیخان سلیمان اول (دور 1520–66) اور اس کی پسندیدہ بیوی خرم سلطان کی پوتی، سلطان مراد ثالث (reign 1574–95) کی بہن اور سلطان محمد ثالث (دور 1595–1603) کی خالہ تھی۔

اسمیخان سلطان
(عثمانی ترک میں: سيدة تهب سلطان خان)،(ترکی میں: Ismihan Gevher Sultan ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Tomb of Sultan Selim II - 02.JPG

معلومات شخصیت
پیدائش ت 1545
مانیسا، سلطنت عثمانیہ
وفات 8 اگست 1585(1585-80-80) (عمر  39–40 سال)
قسطنطنیہ، سلطنت عثمانیہ
وجہ وفات ز چگی  ویکی ڈیٹا پر (P509) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مدفن آیاصوفیا  ویکی ڈیٹا پر (P119) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of the Ottoman Empire (1844–1922).svg سلطنت عثمانیہ  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مذہب اسلام
شریک حیات صوقلو محمد پاشا
Kalaylıkoz Ali Pasha
اولاد نسل
والد سلیم ثانی
والدہ نور بانو سلطان
بہن/بھائی
خاندان عثمانی خاندان  ویکی ڈیٹا پر (P53) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
نسل سلطان زادہ ابراہیم پاشا
سلطان زادہ محمود بے

ابتدائی زندگیترميم

اسمیخان سلطان 1545ء میں مانیشا میں پیدا ہوئی تھی،[1] جب اس کے والد ابھی صرف ایک شہزادہ تھے۔ اسمیخان کی والدہ نوربانو سلطان تھیں۔[2][3]

وفاتترميم

اسمیخان سلطان اپنی بہن فاطمہ سلطان کی طرح، اس کے مرنے کے بعد عالم زچگی میں 8 اگست 1585ء کو مری، اسمیخان کو آیا صوفیہ میں واقع اپنے والد کے مقبرے میں دفن کیا گیا تھا۔[2][4] اس کا نوزائیدہ بیٹا محمود پچاس دن سے زیادہ زندہ نہیں رہا۔[2]

حوالہ جاتترميم

  1. Sakaoğlu 2008، صفحہ 271.
  2. ^ ا ب پ Uluçay 2011، صفحہ 69.
  3. Pierce 1993، صفحہ 92.
  4. Sakaoğlu 2008، صفحہ 271, 274.

مآخذترميم

  • Peirce، leslie P. (1993). The Imperial Harem: Women and Sovereignty in the Ottoman Empire. Oxford University Press. ISBN 978-0-19-508677-5. 
  • Uluçay، Mustafa Çağatay (2011). Padişahların kadınları ve kızları. Ankara, Ötüken. 
  • Sakaoğlu، Necdet (2008). Bu mülkün kadın sultanları: Vâlide sultanlar, hâtunlar, hasekiler, kadınefendiler, sultanefendiler. Oğlak Yayıncılık. ISBN 978-9-753-29623-6.