مرکزی مینیو کھولیں

انا اخماتووا روسی: Анна Ахматова, نقل حرفی Anna Andreevna Akhmatova (پیدائش: 23 جون 1889ء - وفات: 5 مارچ 1966ء ) بین الاقوامی شہرت یافتہ روسی شاعرہ ہیں جنہیں روس میں اور دوسرے ممالک میں غنائی شاعری کے لیے بڑی شہرت و مقبولیت حاصل ہے۔[1]۔

اَنا اخماتووا
Anna Andreevna Akhmatova
آننا اخماتووا.gif
پیدائش اَنا اندریوا گارینکو
23 جون 1889(1889-06-23)
اوڈیسا، یوکرین، روسی سلطنت
وفات 5 مارچ 1966(1966-03-05)
ماسکو، سویت یونین
قلمی نام اَنا اخماتووا
پیشہ مصنف
زبان روسی
قومیت Flag of Russia.svg روس
اصناف شاعری
نمایاں کام نیم شب کی نظمیں
خاکِ وطن
حلف
اہم اعزازات اعزازی ڈاکٹریٹ (اکسفرڈ یونیورسٹی)

دستخط

فہرست

پیدائشترميم

انا اخماتووا یوکرین کے شہر اوڈیسا، روسی سلطنت میں 23 جون 1889ء میں پیدا ہوئیں [2]۔

تخلیقی دورترميم

حب الوطنی کی جنگ کے زمانے میں انا اخماتووا نے اپنے ریڈیو نشریوں میں اور اخبارات میں عوام کے گیت گائے۔ پچھلے برسوں میں ان کی نظموں کے ترجمے انگریزی، بلگاریائی، چیکاسلواکیائی، جرمن، رومانیائی، فرانسیسی، فارسی اور اردو زبانوں میں کتابی صورت میں شائع ہو چکے ہیں [1]۔ انا اخما تووا اپنی وفات سے دو سال پہلے روسی ادیبوں کی انجمن کی صدر منتخب ہوئیں[2]۔

تخلیقاتترميم

نظمیںترميم

  • نیم شب کی نظمیں
  • خاکِ وطن
  • شام ڈھلے
  • جہانِ سخن
  • حلف
  • مردانگی

وفاتترميم

روس کی عظیم جدت پسند شاعرہ انا اخماتووا 76 سال کی عمر میں 5 مارچ 1966ء کو ماسکو، سویت یونین میں حرکتِ قلب بند ہونے کے باعث وفات کر گئیں اور لینن گراڈ میں تدفین ہوئی۔۔[3]

حوالہ جاتترميم

  1. ^ ا ب موج ہوائے عصر، ظ انصاری، تقی حیدر، مطبع "رادوگا" اشاعت گھر، ماسکو، سوویت یونین، 1985 ،ص37
  2. ^ ا ب Anna Akhmatova - Poet | Academy of American Poets
  3. Anna Akhmatova | Poetry Foundation