اوبنٹو (انگریزی: Ubuntu) ڈیبین، لینکس ڈسٹری بیوشن پر مبنی ایک شمارندی عملیاتی نظام (آپریٹنگ سسٹم) ہے۔ یہ جنوبی افریقا کے ایک اخلاقی تصور "اوبنٹو" سے موسوم ہے جس کا مطلب ہے "انسانیت دوسروں کے لیے "۔

اوبنٹو
Ubuntu logo
Ubuntu 9.10.png
Ubuntu 9.10 (Karmic Koala)
ڈویلپرCanonical Ltd. / اوبنٹو
آپریٹنگ سسٹم خاندانUnix-like
فعالی حالتCurrent
سورس ماڈلمفت اور آزاد-مصدر سافٹ ویئر
ابتدائی رلیز20 October 2004
تازہ ترین ریلیز9.10 / اکتوبر 29، 2009؛ 13 سال قبل (2009-10-29)[1]
مخزن
دستیاب زبانMultilingual (more than 55)
اپڈیٹ کا طریقہAPT (front-ends available)
پیکج مینیجرdpkg (front-ends like Synaptic available)
پلیٹ فارمIA-32, x86-64, lpia, SPARC, PowerPC, ARM, IA-64
کرنل قسمMonolithic (Linux)
یوزر لینڈGNU
طے شدہ یوزر انٹرفیس(گ)نوم
لائسنسMainly the GNU GPL / plus various other licenses
رسمی ویب سائٹubuntu.com

تعارفترميم

یہ مفت اور آزاد مصدر سافٹ ویئر کے طور پر تقسیم کیا جاتا ہے۔ اوبنٹو اوسط شمارندی معلومات کے حامل صارف کے لیے جدید ترین اور مستحکم عملیاتی نظام ہے، جس کی بنیادی توجہ قابل استعمالیت اور تنصیب کی آسانی پر مرکوز ہے۔ desktoplinux.com کے قارئین کی جانب سے اسے ڈیسک ٹاپ کے لیے سب سے معروف ترین لینکس ڈسٹری بیوشن قرار دیا گیا ہے۔[2] دعویٰ ہے کہ 2006ء اور 2007ء میں 30 فیصد لینکس صارفین نے اپنے شمارندوں پر اوبنٹو نصب کی۔[3] 2009ء کے اواخر کے اعداد و شمار بتاتے ہیں کہ اوبنٹو کا حصہ 40 سے 50 فیصد ہے۔[4]

اجراء اور ڈسٹری بیوشنترميم

اوبنٹو مختلف سافٹ ویئر پیکیجز پر مشتمل ہے جن میں سے بڑی اکثریت آزاد سافٹ ویئر اجازے (جسے آزاد مصدر open source بھی کہا جاتا ہے) کے تحت تقسیم کی جاتی ہے۔ یہ چلانے، نقل کرنے، تقسیم، تحقیق، تبدیل، تیار اور بہتر بنانے کے لیے مکمل طور پر آزاد ہے۔ اوبنٹو کی سرپرست برطانیہ میں قائم کینونیکل کمپنی لمیٹڈ ہے جس کے مالک جنوبی افریقہ سے تعلق رکھنے والے مارک شٹل ورتھ ہیں۔ کینونیکل تکنیکی مدد اور اوبنٹو سے وابستہ مختلف خدمات فراہم کرنے کے ذریعے آمدنی حاصل کرتا ہے۔

کینونیکل اوبنٹو سے بنائے گئے تین مزید عملیاتی نظاموں کے لیے مدد فراہم کرتا ہے جو کے اوبنٹو، ایجوکیشن اوبنٹو اور اوبنٹو سرور ایڈیشن کہلاتے ہیں۔

کینونیکل ہر چھ ماہ بعد اوبنٹو کا نیا نسخہ جاری کرتا ہے جس کے لیے اگلے 18 ماہ تک حفاظتی استحکام، اہم خرابیوں کو بہتر بنانے اور پروگراموں کے تازہ ترین نسخوں کے ذریعے مدد فراہم کی جاتی ہے۔ ہر دو سال بعد اوبنٹو طویل المیعاد مدد کا نسخہ جاری کرتا ہے جسے LTS یا Long Term Support کہتے ہیں۔ یہ نسخہ ڈیسک ٹاپ کمپیوٹروں کے لیے تین سال اور سرورز کے لیے پانچ سال تک مدد فراہم کرتا ہے۔

اوبنٹو کا پہلا نسخہ 20 اکتوبر 2004ء کو 4.10 (وارتھی وارتھوگ) کے نام سے جاری کیا گیا جبکہ حالیہ نسخہ 9.10 (کارمک کوالا) ہے جسے 29 اکتوبر 2009ء کو جاری کیا گیا جبکہ اگلا نسخہ 10.04 (لیوسڈ لنکس) متوقع طور پر اپریل 2010ء میں جاری ہوگا۔

صارفینترميم

جنوری 2009ء میں معروف امریکی اخبار نیو یارک ٹائمز نے خبر دی کہ اوبنٹو کے ایک کروڑ سے زیادہ صارفین ہیں جبکہ اسی سال جون میں ZDNet کے مطابق دنیا بھر میں اوبنٹو کے ایک کروڑ 30 لاکھ متحرک صارفین ہیں جبکہ اس تعداد میں بہت تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے۔[5][6]

مقدونیہ کی وزارت تعلیم و سائنس نے اوبنٹو لینکس پر مبنی ایک لاکھ 80 ہزار کمپیوٹر ملک بھر کے تعلیمی اداروں میں لگائے ہیں اور حکومت ملک میں اوبنٹو کے حامل شمارندوں کے استعمال کی حوصلہ افزائی کرتی ہے۔[7]

فرانس میں محکمہ پولیس 90 ہزار شمارندوں پر اوبنٹو کی تنصیب کر رہا ہے جس کے نتیجے میں اس کے آئی ٹی اخراجات میں 70 فیصد تک کمی واقع ہوگی لیکن صلاحیتیں برقرار رہیں گی۔[8]

ڈائریکٹری اسٹرکچرترميم

یوبنٹو میں ڈائریکٹری ، لنک اور کمانڈ فائلز ہوتی ہیں ۔

پروگرامترميم

اس کی ڈائریکٹر کو دیکھنے کے لیے جس سافٹ ویئر کا استعمال کیا جاتا ہے وہ کمانڈ لائن ہے ،

Terminal (ٹرمینل)

اس کے ذریعےسب سے پہلے تو یوزر لاگن کے سسٹم کو سمجھنا ضروری ہے ۔ یوبنٹو کی شروعات اسی کمانڈ لائن سافٹ ویئر سے ہوتی ہے ۔ ورنہ گرافیکل انٹر فیس کے مینو سے اس کو کھولا جا سکتا ہے ۔

کمانڈ کی وضاحتترميم

جب اس کو اوپن کرتے ہيں تو کمانڈ لائن پر جو لائنیں لکھی آتی ہیں وہ کچھ یوں ہو سکتی ہیں ؛

user1@computer1:~$
userترميم

سے مراد یوزر ہے جس کے نام سے یہ پروگرام لاگ ان ہے

@ ایٹ علامتترميم

اس سے آگے کمپیوٹر / مشین کا نام لکھا ہوتا ہے

computer1ترميم

کمپیوٹر یا مشین کا نام

: (کولن علامت)ترميم

اس سے آگے کمانڈ شروع ہوگی

~(ٹائل علامت)ترميم

اس کا مطلب یہ ہے کہ اس وقت ہم اس یوزر کے ہوم ڈائریکٹر پر کھڑے ہیں ۔ (چیک کرنے کے لیے pwd لکھ کر اینٹر کر کے دیکھیں )

(ڈالرعلامت) $ترميم

اس کا مطلب یہ ہے کہ ہم عام یوزر کے طور پر یہاں کام کر رہے ہيں یعنی لاگ ان ہیں ۔

/ (سلیش علامت )ترميم

جب ہم ڈائریکٹری چینج کرتے ہیں تو یہ نشان بدل جاتا ہے / سے جس کا مطلب یہ ہوتا ہے کہ اب ہم ہوم ڈائریکٹری پر نہيں ہیں بلکہ کسی اور لوکیشن پر ہیں

# (ہیش علامت)ترميم

جب ہم عام یوزر سے ایڈمن یوزر یعنی root میں تبدیل ہوتے ہیں تب یہ علامت ڈالر کی جگہ آجاتی ہے۔ جس کا مطلب یہ ہوتا ہے کہ ہم ایڈمنسٹریٹر یوزر سے لاگ ان ہیں ۔ اس مقصد کے لیے sudo کی کمانڈ کے ساتھ bash لگاتے ہیں تو ہم روٹ یوزر میں آجاتے ہيں ۔

ڈائریکٹری ایٹری بیوٹترميم

جب آپ یہ کمانڈ لکھ کر فائل اور ڈائریکٹری دیکھتے ہيں

ls -al

تو آپ کو دو رنگوں میں فائل کے نام نظر آئیں گے

جس کے ایٹری بیوٹ میں پہلے ایل لکھا ہو اور وہ ہرے رنگ سے نام نظر آئیں وہ لنک ہوں گے فائلز کے یعنی ونڈوز کے یوزر کے زبان میں کہیں تو shortcut

جس کے ایٹری بیوٹ میں پہلے ڈی لکھا ہو اور نیلے رنگ سے نظر آئیں گے وہ ڈائریکٹری ہیں ۔

اور جس کے ایٹری بیوٹ کے شروع میں - لکھا ہو وہ کوئی فائل ہو سکتی ہے ۔

ڈائریکٹری ز کے نامترميم

عام طور پر پائے جانے والے فولڈر ؛

  • bin اس فولڈر میں آپ کی تمام ایگزیکیوٹ ایبل بائنری کمانڈ فائلز ہوں گی ۔جن پر ایڈمنسٹریٹو ایکسس نہيں ہوتا
  • lib یہ bin کے فولڈر کو سپورٹ کرنے کے لیے ہوتا ہے یہ لائبریری فائل کے لیے ہوتی ہیں
  • sbin یہ ایدمنسٹریٹر یوزر کے کمانڈز ہوتے ہیں ۔
  • boot اس میں تمام بوٹ ایبل فائلز ہوتی ہيں ۔
  • cdrom سی ڈی کو مائنٹ یہاں کرایا جاتا ہے
  • media یو ایس بی کو مائنٹ یہاں کرایا جاتا ہے
  • mnt تمام ماؤنٹ کی ہوئی ڈائریکٹری یہاں ملے گی ۔
  • dev تمام ڈیوائس یا ڈرائو کے لیے
  • etc تمام سرور کنفیگریشن فائلز وغیرہ کے لیے ۔
  • usr تمام یوزر فائلز کے لیے جیسے lib , lib32 وغیرہ
  • sys سسٹم سے متعلق فائلز لوڈ ہو کر چلانے کے لیے
  • home تمام نان روٹس یوزر کی فولڈر
  • root روٹ یوزر کی ڈائریکٹری ۔ جیسے ونڈوز میں ایدمنسٹیرٹر
  • opt جیسے کہ کسٹم پیکجز کی انسٹالیشن کے لیے ۔

متعلقہ مضامینترميم

حوالہ جاتترميم

  1. Ubuntu 9.10 Desktop Edition puts the user at the heart of its new design آرکائیو شدہ (Date missing) بذریعہ ubuntu.com (Error: unknown archive URL).
  2. ڈیسک ٹاپ لینکس ڈاٹ کام آرکائیو شدہ (Date missing) بذریعہ desktoplinux.com (Error: unknown archive URL) جائزہ 2006ء
  3. ڈیسک ٹاپ لینکس ڈاٹ کام آرکائیو شدہ 2012-05-24 بذریعہ archive.today جائزہ 2007ء
  4. عملیاتی نظام نسخوں کا استعمال آرکائیو شدہ (Date missing) بذریعہ statowl.com (Error: unknown archive URL) statowl.com
  5. وانس، ایشلی (2009). "A Software Populist Who Doesn't Do Windows". 24 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 27 جنوری 2010. 
  6. ڈاسن، کرسٹوفر (2009). "Ubuntu a minor player? Not outside the States". 24 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 27 جنوری 2010. 
  7. مقدونیہ میں ہر طالبعلم اوبنٹو پر مشتمل کمپیوٹر استعمال کرے گا آرکائیو شدہ (Date missing) بذریعہ ubuntu.com (Error: unknown archive URL).
  8. "فرانسیسی پولیس: ہم نے اوبنٹو اپنا کر لاکھوں یورو بچائے". آرس تیکنیکا. 24 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 27 جنوری 2010. 

بیرونی روابطترميم

اوبنٹو کا باضابطہ موقع جال