سعود شکیل (پیدائش 5 ستمبر 1995ء) ایک پاکستانی بین الاقوامی کرکٹ کھلاڑی ہے۔ انھوں نے جولائی 2021ء میں پاکستان کرکٹ ٹیم کے لیے اپنے بین الاقوامی اور ون ڈے کیریئر کا آغاز کیا [1] [2] انھوں نے دسمبر 2022ء میں انگلینڈ کے خلاف اپنا ٹیسٹ ڈیبیو کیا [3] انھوں نے 2014ء انڈر 19 ورلڈ کپ میں کھیلا، جہاں انھوں نے ٹیم کی کپتانی کی۔ [4] جولائی 2023ء میں، وہ میزبان ٹیم کے خلاف سری لنکا میں ٹیسٹ ڈبل سنچری بنانے والے پہلے پاکستانی بلے باز بن گئے۔ [5]

سعود شکیل
شکیل 2023ء میں یارکشائر کے لیے کھیل رہے ہیں
ذاتی معلومات
پیدائش (1995-09-05) 5 ستمبر 1995 (عمر 28 برس)
کراچی، سندھ، پاکستان
عرفچھوٹا ڈان
قد1.68 میٹر (5 فٹ 6 انچ)
بلے بازیبائیں ہاتھ کا بلے باز
گیند بازیبائیں ہاتھ کا سلو، سیم گیند باز
حیثیتبلے باز
بین الاقوامی کرکٹ
قومی ٹیم
پہلا ٹیسٹ (کیپ 250)1 دسمبر 2022  بمقابلہ  انگلینڈ
آخری ٹیسٹ24 جولائی 2023  بمقابلہ  سری لنکا
پہلا ایک روزہ (کیپ 231)8 جولائی 2021  بمقابلہ  انگلینڈ
آخری ایک روزہ11 نومبر 2023  بمقابلہ  انگلینڈ
ایک روزہ شرٹ نمبر.59
ملکی کرکٹ
عرصہٹیمیں
2015–2016کراچی وائٹس
2017/18پاکستان ٹیلی ویژن
2018–2019, 2023کوئٹہ گلیڈی ایٹرز
2019–2023سندھ
2023یارکشائر
کیریئر اعداد و شمار
مقابلہ ٹیسٹ ایک روزہ فرسٹ کلاس لسٹ اے
میچ 7 15 67 85
رنز بنائے 875 317 5,139 2,730
بیٹنگ اوسط 87.50 28.81 54.09 43.33
100s/50s 2/6 0/3 17/24 4/22
ٹاپ اسکور 208* 68 208* 134*
گیندیں کرائیں 12 47 1,870 1,289
وکٹ 0 1 23 27
بالنگ اوسط 37.00 48.39 43.40
اننگز میں 5 وکٹ 0 0 0
میچ میں 10 وکٹ 0 0 0
بہترین بولنگ 1/14 2/7 3/23
کیچ/سٹمپ 8/– 5/– 39/– 28/–
ماخذ: ای ایس پی این کرک انفو، 6 دسمبر 2023

ابتدائی زندگی اور کیریئر

ترمیم

سعود شکیل ستمبر 1995ء میں کراچی میں پیدا ہوئے اور انھوں نے اپنی ابتدائی زندگی کا بیشتر حصہ فیڈرل بی ایریا کے صغیر سینٹر میں گزارا۔ [6] 2007ء میں، سعود اعظم خان کی توجہ میں آیا، جو اس وقت کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے منیجر تھے اور معین خان کے بیٹے سے غیر متعلق تھے۔ [6] سعود کے چچا سے تعلق کے ذریعے، اعظم نے ان کا تعارف کرایا، جو اس وقت کریسنٹ اکیڈمی میں چھٹی جماعت کا طالب علم تھا، کئی کرکٹ اکیڈمیوں سے متعارف ہوا۔ [6] ان اکیڈمیوں کی جانب سے سخت رد عمل کے بعد، اعظم نے سعود کو پریکٹس سیشنز میں ضم کر دیا جہاں ان کا سامنا رومان رئیس ، انور علی اور تابش خان جیسے کھلاڑیوں سے ہوا۔ [6] اس کی وجہ سے سعود کی پاکستان کرکٹ کلب کے ساتھ وابستگی اور سرفراز احمد اور اسد شفیق جیسے بین الاقوامی کرکٹ کھلاڑیوں کی رہنمائی ہوئی۔ [6]

مقامی کرکٹ کیریئر

ترمیم

اس نے اپنا اول درجہ ڈیبیو 26 اکتوبر 2015ء کو 2015-16ء قائد اعظم ٹرافی میں کیا۔ [7] نومبر 2017ء میں، انھیں 2018 ءپاکستان سپر لیگ کے پلیئرز ڈرافٹ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے لیے کھیلنے کے لیے منتخب کیا گیا۔ [8] وہ 2017–18ء قائد اعظم ٹرافی میں پاکستان ٹیلی ویژن کے لیے سات میچوں میں 488 رنز کے ساتھ سب سے زیادہ رنز بنانے والے کھلاڑی تھے۔ [9] اپریل 2018ء میں، انھیں 2018ء کے پاکستان کپ کے لیے خیبر پختونخوا کے اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔ [10] [11] وہ 2018-19ء قائد اعظم ٹرافی میں پاکستان ٹیلی ویژن کے لیے پانچ میچوں میں 414 رنز کے ساتھ سب سے زیادہ رنز بنانے والے کھلاڑی تھے۔ [12] دسمبر 2018ء میں، انھیں 2018 اے سی سی ایمرجنگ ٹیمز ایشیا کپ کے لیے پاکستان کی ٹیم میں شامل کیا گیا۔ [13] مارچ 2019ء میں، انھیں 2019ءکے پاکستان کپ کے لیے فیڈرل ایریاز کے اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔ [14] [15] ستمبر 2019ء میں، انھیں 2019-20 ءقائد اعظم ٹرافی ٹورنامنٹ کے لیے سندھ کے اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔ [16] [17] نومبر 2019ء میں، انھیں بنگلہ دیش میں 2019ء کے اے سی سی ایمرجنگ ٹیمز ایشیا کپ کے لیے پاکستان کے اسکواڈ کا کپتان نامزد کیا گیا۔ [18] دسمبر 2020ء میں، انھیں 2020ء کے پی سی بی ایوارڈز کے لیے سال کے بہترین مقامی کرکٹ کھلاڑیوںمیں سے ایک کے طور پر شارٹ لسٹ کیا گیا۔ [19]

بین الاقوامی کر کٹ کیریئر

ترمیم

جنوری 2021ء میں، انھیں جنوبی افریقہ کے خلاف سیریز کے لیے پاکستان کے ٹیسٹ اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔ [20] [21] مارچ 2021 ءمیں، انھیں جنوبی افریقہ اور زمبابوے کے دوروں کے لیے پاکستان کے ٹیسٹ اور محدود اوورز کے اسکواڈز میں شامل کیا گیا۔ [22] [23] تاہم، وہ انجری کی وجہ سے جنوبی افریقہ کے خلاف ایک روزہ بین الاقوامی میچوں سے باہر ہو گئے تھے۔ [24] جون 2021ء میں، شکیل کو بالترتیب ویسٹ انڈیز اور انگلینڈ کے دوروں کے لیے، [25] پاکستان کے ٹیسٹ اور ون ڈے اسکواڈز میں شامل کیا گیا۔ [26] شکیل نے اپنا ایک روزہ ڈیبیو 8 جولائی 2021ءکو پاکستان کے لیے انگلینڈ کے خلاف کیا۔ [27] اکتوبر 2021ء میں، انھیں سری لنکا کے دورے کے لیے پاکستان شاہینز کا کپتان نامزد کیا گیا۔ [28] نومبر 2021ء میں، انھیں بنگلہ دیش کے خلاف سیریز کے لیے پاکستان کے ٹیسٹ اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔ [29] فروری 2022ء میں، انھیں آسٹریلیا کے خلاف سیریز کے لیے پاکستان کے ٹیسٹ اسکواڈ میں بھی شامل کیا گیا تھا۔ [30] جون 2022ء میں، انھیں سری لنکا میں دو میچوں کی سیریز کے لیے پاکستان کے ٹیسٹ اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔ [31] دسمبر 2022ء میں، انھیں نیوزی لینڈ کے خلاف ٹیسٹ سیریز میں پاکستان کے لیے کھیلنے کے لیے منتخب کیا گیا۔ [32] دوسرے ٹیسٹ میں، 4 جنوری 2023 ءکو، اس نے ٹیسٹ کرکٹ میں اپنی پہلی سنچری بنائی، [33] جس نے پاکستان کو پہلی اننگز میں نیوزی لینڈ کے 449 رنز کے جواب میں بورڈ میں 400+ رنز بنانے میں مدد کی۔ [34] ستمبر 2023ء میں، انھیں بھارت میں ہونے والے کرکٹ ورلڈ کپ 2023 ءکے لیے پاکستان کے پندرہ رکنی اسکواڈ میں شامل کیا گیا، اس نے اپنے ورلڈ کپ کا آغاز 6 اکتوبر 2023ء کو ہالینڈ کے خلاف کیا جس میں اس نے 52 گیندوں پر 68 رنز بنائے اور مین آف دی میچ ایوارڈ حاصل کیا۔ . [35] انھوں نے ورلڈ کپ کے اپنے دوسرے میچ میں سری لنکا کے خلاف ایک کیمیو بھی کھیلا جس میں 30 گیندوں پر 31 رنز بنائے۔ [36] انھوں نے 27 اکتوبر کو جنوبی افریقہ کے خلاف ٹورنامنٹ کا اپنا دوسرا ففٹی اسکور کیا کیونکہ اس نے انھیں صرف 1 وکٹ سے شکست دی۔ [37]

حوالہ جات

ترمیم
  1. "Saud Shakeel"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 جولا‎ئی 2015 
  2. "The Home of CricketArchive"۔ cricketarchive.com۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 جولا‎ئی 2015 
  3. "Pakistan v England at Rawalpindi, Dec 1-5 2022"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 01 دسمبر 2022 
  4. "Underappreciated, undermined: Five performers that went unnoticed in the Pakistan Cup"۔ The Express Tribune۔ 14 April 2016 
  5. "Records made by Saud Shakeel during double ton in Galle Test"۔ Cricket Pakistan۔ Karachi: Express Media Group۔ 18 July 2023۔ 18 جولا‎ئی 2023 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 18 جولا‎ئی 2023 
  6. ^ ا ب پ ت ٹ Muhammad Suhayb (21 August 2023)۔ "Saud Shakeel: The Next Big Thing in Pakistan Cricket"۔ Youlin Magazine 
  7. "Quaid-e-Azam Trophy, Pool B: Karachi Whites v Water and Power Development Authority at Karachi, Oct 26-29, 2015"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 جولا‎ئی 2015 
  8. "How the PSL squads stack up"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 13 نومبر 2017 
  9. "Quaid-e-Azam Trophy, 2017/18: Pakistan Television Batting and bowling averages"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 08 اپریل 2018 
  10. "Pakistan Cup one-day tournament to begin in Faisalabad next week"۔ Geo TV۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 اپریل 2018 
  11. "Pakistan Cup Cricket from 25th"۔ The News International۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 اپریل 2018 
  12. "Quaid-e-Azam Trophy, 2018/19: Pakistan Television Batting and bowling averages"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 23 اکتوبر 2018 
  13. "Pakistan squad announced for Emerging Asia Cup 2018 to Co-Host by Pakistan and Sri Lanka"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 03 دسمبر 2018 
  14. "Federal Areas aim to complete hat-trick of Pakistan Cup titles"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 مارچ 2019 
  15. "Pakistan Cup one-day cricket from April 2"۔ The International News۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 مارچ 2019 
  16. "PCB announces squads for 2019–20 domestic season"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 04 ستمبر 2019 
  17. "Sarfaraz Ahmed and Babar Azam to take charge of Pakistan domestic sides"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 04 ستمبر 2019 
  18. "Saud Shakeel named Pakistan captain for ACC Emerging Teams Asia Cup 2019"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 نومبر 2019 
  19. "Short-lists for PCB Awards 2020 announced"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 01 جنوری 2021 
  20. "Shan Masood, Mohammad Abbas, Haris Sohail dropped from Pakistan Test squad"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 15 جنوری 2021 
  21. "Nine uncapped players in 20-member side for South Africa Tests"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 15 جنوری 2021 
  22. "Pakistan squads for South Africa and Zimbabwe announced"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 مارچ 2021 
  23. "Sharjeel Khan returns to Pakistan T20I side for tour of South Africa and Zimbabwe"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 مارچ 2021 
  24. "Injured Saud Shakeel ruled out of ODI series in South Africa"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 مارچ 2021 
  25. "Mohammad Abbas, Naseem Shah return to Pakistan Test squad"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 04 جون 2021 
  26. "Pakistan name squads for England and West Indies tours"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 04 جون 2021 
  27. "1st ODI (D/N), Cardiff, Jul 8 2021, Pakistan tour of England"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 08 جولا‎ئی 2021 
  28. "Pakistan Shaheens for Sri Lanka tour named"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 02 اکتوبر 2021 
  29. "Pakistan squad for Bangladesh Tests named"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 15 نومبر 2021 
  30. "Pakistan call up Haris Rauf for Tests against Australia; Shan Masood recalled"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 09 فروری 2022 
  31. "Yasir Shah returns for Sri Lanka Tests"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 22 جون 2022 
  32. "Pakistan recall Hasan Ali for New Zealand Tests, Shaheen still out"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 دسمبر 2022 
  33. "Local star Saud Shakeel strokes maiden century but New Zealand strike back with late wickets"۔ Pakistan Cricket Board (بزبان انگریزی)۔ اخذ شدہ بتاریخ 04 جنوری 2023 
  34. "Saud Shakeel's maiden Test ton forges strong Pakistan reply"۔ Cricbuzz (بزبان انگریزی)۔ اخذ شدہ بتاریخ 04 جنوری 2023 
  35. "A look at Saud Shakeel's classy knock in Pakistan vs Netherlands clash"۔ Daily Pakistan۔ اخذ شدہ بتاریخ 08 اکتوبر 2023 
  36. "Cricket scorecard - Pakistan vs Sri Lanka, 8th Match, ICC Cricket World Cup 2023"۔ Cricbuzz (بزبان انگریزی)۔ اخذ شدہ بتاریخ 30 اکتوبر 2023 
  37. "Cricket scorecard - Pakistan vs South Africa, 26th Match, ICC Cricket World Cup 2023"۔ Cricbuzz (بزبان انگریزی)۔ اخذ شدہ بتاریخ 30 اکتوبر 2023