نائب امیر جماعت اسلامی

پروفیسر ابراہیم

پیدائش اور تعلیمترميم

پروفیسر محمد ابراہیم خان 28 ستمبر1954ء ہنجل امیرخاں تحصیل و ضلع بنوں میں پیدا ہوئے۔1965ء میں پرائمری تعلیم گورنمنٹ ہائی سکول نمبر3بنوں شہرسے حاصل کی۔1968ء میں گورنمنٹ ہائی سکول نمبر1 بنوں سے مڈل کیا۔ اورپھراپریل1971ء میں کینٹ بورڈ ہائی سکول(ایف جی ہائی سکول)بنوں کینٹ سے میٹرک کیا۔ جولائی1975ء میں گورنمنٹ کالج بنوں سے بی اے کیا۔ اورپھر گومل یونیورسٹی ڈیرہ اسماعیل خان سے جنوری1978ء میں ایل ایل بی کیا۔ جون1980ء میں گومل یونیورسٹی سے جرنلزم میں ایم اے کیا۔

تنظیمی ذمہ داریاںترميم

چونکہ مذہبی گھرانے سے تعلق تھا۔ اس لیے کالج سے ہی اسلامی جمعیت طلبہ سے وابستہ ہوگئے1973ء سے 1975ء تک اسلامی جمعیت طلبہ بنوں شہر کی ذمہ داری اداکی۔ 1975ء سے 1977ء تک گومل یونیورسٹی میں اسلامی جمعیت طلبہ کے ناظم رہے۔ اور پھر1977ء سے 1980ء تک اسلامی جمعیت طلبہ ڈیرہ اسماعیل خان کی ذمہ داری پر فائز رہے۔ 1982ء میں تعلیم کی تکمیل کے بعد پروفیسر ابراہیم صاحب کی گومل یونیورسٹی کے جرنلزم ڈیپارٹمنٹ میں بطور لیکچرر تقرری ہوئی اور یہاں پر1985ء تک خدمات انجام دیتے رہے۔ اسی دوران جماعت اسلامی پاکستان سے وابستہ ہو گئے اور پھر1981ء سے 1982ء تک قیم جماعت اسلامی بنوں اور 1982ء سے 1984ء تک قیم جماعت اسلامی ضلع ڈیرہ اسماعیل خان کی ذمہ داری ادا کرتے رہے۔ جون1985ء میں قیم جماعت اسلامی صوبہ سرحد مقرر ہوئے۔ اور1994ء تک بطور قیم خدمات انجام دیتے رہے۔ اپریل1994ء میں جماعت اسلامی صوبہ سرحد کے امیرمنتخب ہوئے اور 2003ء تک جماعت اسلامی صوبہ سرحد کی امارت کے فرائض سر انجام دیے۔ اکتوبر2003ء سینیٹ آف پاکستان کے ارکان منتخب ہوئے۔ فروری2006ء میں دوبارہ سینیٹ کے لیے ان کا انتخاب عمل میں آیا۔ اپریل2004ء میں جماعت اسلامی پاکستان کے نائب امیرکی ذمہ داری لگائی گئی جبکہ مرکزی نشرواشاعت کمیٹی کی صدارت کے فرائض بھی سر انجام دے رہے ہیں۔