جھیل بیکال جنوبی سائبیریا، روس میں واقع دنیا کی سب سے گہری اور میٹھے پانی کی بڑی جھیلوں میں سے ایک ہے۔ 12,500 مربع میل کے رقبے پر پھیلی اس جھیل کی زیادہ سے زیادہ گہرائی 1637 میٹر (5,369 فٹ) ہے۔ یہ 336 چھوٹے بڑے دریاؤں سے فیضیاب ہوتی ہے اور دنیا کے کل میٹھے پانی کے 20 فیصد کو اپنے اندر سموئے ہوئے ہے جبکہ روس کے کل میٹھے پانی کا 90 فیصد اس جھیل میں ہے۔

جھیل بیکال
Lake Baikal
Olkhon Island and Lake Baikal.jpg
Karte baikal2.png
محل وقوعسائبیریا، روس
جغرافیائی متناسق53°30′N 108°0′E / 53.500°N 108.000°E / 53.500; 108.000متناسقات: 53°30′N 108°0′E / 53.500°N 108.000°E / 53.500; 108.000
قسم جھیلContinental rift lake
بنیادی اضافہSelenge, Barguzin, Upper Angara
بنیادی کمیAngara
Catchment area560,000 کلومیٹر2 (6.027789833×1012 فٹ مربع)
نکاسی طاس ممالکروس اور منگولیا
زیادہ سے زیادہ. لمبائی636 کلومیٹر (2,087,000 فٹ)
زیادہ سے زیادہ. چوڑائی79 کلومیٹر (259,000 فٹ)
رقبہ سطح31,722 کلومیٹر2 (3.4145×1011 فٹ مربع)[1]
اوسط گہرائی744.4 میٹر (2,442 فٹ)[1]
زیادہ سے زیادہ. گہرائی1,642 میٹر (5,387 فٹ)[1]
پانی کا حجم23,615.39 کلومیٹر3 (5,700 cu mi)[1]
Residence time330 years[2]
ساحل کی لمبائی12,100 کلومیٹر (6,889,760 فٹ)
سطح بلندی455.5 میٹر (1,494 فٹ)
منجمدجنوری–مئی
جزائر27 (اولخون جزیرہ)
آبادیاںایرکتسک
قسم:قدرتی
معیار اصول:vii, viii, ix, x
نامزد:1996 (بائیسواں اجلاس)
رقم حوالہ:754
ریاستی فریق:روس
علاقہ:ایشیا
1 Shore length is not a well-defined measure.
جھیل بیکال کا ایک حسین جزیرہ

جھیل بیکال کی زیادہ سے زیادہ لمبائی 636 کلومیٹر اور زیادہ سے زیادہ چوڑائی 80 کلومیٹر ہے۔ اس کا سطحی رقبہ 31,494 مربع کلومیٹر (12,159 میل) ہے۔ جھیل کی اوسط گہرائی 758 میٹر (2,487 فٹ) ہے۔ اس کے پانی کے حجم کا اندازہ 23,600 مکعب کلومیٹر لگایا گیا ہے۔

اس حسین جھیل کو سائبیریا کی نیلی آنکھ بھی کہا جاتا ہے۔ یہ عالمی ثقافتی ورثے کا حصہ ہے۔ اس جھیل میں کل 22 جزیرے ہیں جن میں سے جزیرہ اولخون دنیا کی کسی بھی جھیل میں واقع دوسرا سب سے بڑا جزیرہ ہے۔ (سب سے بڑا جزیرہ جھیل ہرون کا جزیرہ مینیٹولن ہے)۔

زمین کے انتہائی مقامات

حوالہ جاتترميم

  1. ^ ا ب پ ت "A new bathymetric map of Lake Baikal. MORPHOMETRIC DATA. INTAS Project 99-1669.Ghent University, Ghent, Belgium; Consolidated Research Group on Marine Geosciences (CRG-MG), University of Barcelona, Spain; Limnological Institute of the Siberian Division of the Russian Academy of Sciences, Irkutsk, Russian Federation; State Science Research Navigation-Hydrographic Institute of the Ministry of Defense, St.Petersburg, Russian Federation". Ghent University, Ghent, Belgium. 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 09 جولا‎ئی 2009. 
  2. M.A. Grachev. "On the present state of the ecological system of lake Baikal". Lymnological Institute, Siberian Division of the Russian Academy of Sciences. 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 09 جولا‎ئی 2009.