مرکزی مینیو کھولیں

خواجہ محمد آصف

پاکستان میں سیاستدان
خواجہ محمد آصف
تفصیل=

وزیر دفاع پاکستان
آغاز منصب
27 نومبر 2013
صدر ممنون حسین
وزیر اعظم نواز شریف
Fleche-defaut-droite-gris-32.png نوید قمر
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
Minister of Water and power
آغاز منصب
7 جون 2013
صدر Mamnoon Hussain
وزیر اعظم نواز شریف
Fleche-defaut-droite-gris-32.png Ahmed Mukhtar
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
chairman of the Privatization Commission
مدت منصب
18 فروری 1997 – 12 اکتوبر 1999
Fleche-defaut-droite-gris-32.png نوید قمر
شوکت عزیز Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائش 9 اگست 1949 (70 سال)  ویکی ڈیٹا پر تاریخ پیدائش (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
سیالکوٹ  ویکی ڈیٹا پر مقام پیدائش (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان  ویکی ڈیٹا پر شہریت (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مذہب اسلام
جماعت پاکستان مسلم لیگ (ن)  ویکی ڈیٹا پر سیاسی جماعت کی رکنیت (P102) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی لندن اسکول آف اکنامکس
جامعہ پنجاب
گورنمنٹ کالج یونیورسٹی لاہور
پنجاب یونیورسٹی لا کالج  ویکی ڈیٹا پر تعلیم از (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ سیاست دان، بینکار  ویکی ڈیٹا پر پیشہ (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

خواجہ محمد آصف سیالکوٹ سے تعلق رکھنے والے سیاست دان ہیں، جو پاکستان مسلم لیگ ن سے وابستہ ہیں، وہ قومی اسمبلی کے کئی بار رکن رہے۔ 2013ء میں ن لیگ نے انہیں اُس وقت وزیر دفاع مقرر کیا جب عدالت نے وزیر دفاع کو طلب کیا اور وزیر اعظم نواز شریف اس وزارت کا قلمدان اپنے پاس رکھے ہوئے تھے۔

ایف آئی آرترميم

انقلاب مارچ کے دوران پاک فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف کی مداخلت سے سانحہ ماڈل ٹاؤن کے دوران شہید ہونے والے 14 افراد کے قتل اور 90 سے زائد کے شدید زخمی ہونے والوں کو انصاف دلانے کے لیے وزیر دفاع خواجہ محمد آصف سمیت 9 افراد کے خلاف قتل کی ایف آئی آر درج ہوئی۔[1]

حوالہ جاتترميم