حارث رؤف

پاکستانی کرکٹ کھلاڑی

حارث رؤف (پیدائش 7 نومبر 1993ء) ایک پاکستانی کرکٹ کھلاڑی ہیں۔[3][4] انھوں نے جنوری 2020ء میں پاکستان کرکٹ ٹیم کے لیے بین الاقوامی سطح پر ڈیبیو کیا۔[5][6] انھوں نے 5 اکتوبر 2018 کو لاہور قلندرز کے لیے ابوظہبی ٹی20 ٹرافی 2018 میں اپنا ٹی ٹوئینٹی ڈیبیو کیا۔[7] نومبر 2018ء میں انھیں لاہور قلندرز نے پاکستان سپر لیگ 2019ء ٹورنامنٹ کے پلیئرز ڈرافٹ میں منتخب کیا تھا۔ انھوں نے دسمبر 2022 میں انگلستان کے خلاف اپنا ٹیسٹ ڈیبیو کیا۔[8]

حارث رؤف
رؤف 2022ء میں یارکشائر کے لیے ایکشن میں
ذاتی معلومات
مکمل نامحارث رؤف
پیدائش7 نومبر 1993ء (عمر 30 سال)
راولپنڈی، پنجاب، پاکستان[1]
عرف150[2]
قد1.80 میٹر (5 فٹ 11 انچ)
بلے بازیدایاں ہاتھ
گیند بازیدائیں ہاتھ کے تیز رفتار گیند باز
حیثیتگیند باز
بین الاقوامی کرکٹ
قومی ٹیم
واحد ٹیسٹ (کیپ 248)1 دسمبر 2022  بمقابلہ  انگلستان
پہلا ایک روزہ (کیپ 225)30 اکتوبر 2020  بمقابلہ  زمبابوے
آخری ایک روزہ14 اکتوبر 2023  بمقابلہ  بھارت
ایک روزہ شرٹ نمبر.97
پہلا ٹی20 (کیپ 86)24 جنوری 2020  بمقابلہ  بنگلہ دیش
آخری ٹی2014 اپریل 2023  بمقابلہ  نیوزی لینڈ
ٹی20 شرٹ نمبر.97
ملکی کرکٹ
عرصہٹیمیں
2019–تا حاللاہور قلندرز (اسکواڈ نمبر. 150)
2019–تا 2023ناردرن (اسکواڈ نمبر. 97)
2019/20–2021/22میلبورن اسٹارز (اسکواڈ نمبر. 77)
2022یارک شائر (اسکواڈ نمبر. 97)
2022/23–تا حالرنگپور رائیڈرز
2023سان فرانسسکو یونیکورنز
کیریئر اعداد و شمار
مقابلہ ٹیسٹ ایک روزہ ٹی20
میچ 1 31 62
رنز بنائے 12 33 67
بیٹنگ اوسط 6.00 4.71 7.00
سنچریاں/ففٹیاں 0/0 0/0 0/0
ٹاپ اسکور 12 16 13*
گیندیں کرائیں 78 1,511 1,344
وکٹیں 1 58 83
بولنگ اوسط 78.00 24.81 21.71
اننگز میں 5 وکٹ 0 1 0
میچ میں 10 وکٹ 0 0 0
بہترین بولنگ 1/78 5/18 4/18
کیچ/سٹمپ 0/– 9/– 17/–
ماخذ: کرک انفو، 14 اکتوبر 2023

ذاتی زندگی ترمیم

اگرچہ رؤف کی پیدائش راولپنڈی، پنجاب میں ہوئی تھی، لیکن ان کا خاندان اصل میں مانسہرہ، خیبر پختونخوا پاکستان سے ہے۔[9] 23 دسمبر 2022ء کو رؤف نے اسلام آباد میں ایک روایتی نکاح کی تقریب میں اپنی ہم جماعت مزنا مسعود ملک سے شادی کی۔[10]

ڈومیسٹک کیریئر ترمیم

جب رؤف اسلام آباد ماڈل کالج فار بوائز I-8/3 میں طالب علم تھے تو انھیں کرکٹ سے زیادہ فٹ بال میں دلچسپی تھی۔ انھوں نے اپنے اسکول کو فٹ بال ٹرافی اٹھانے میں مدد کی اور ٹورنامنٹ کا بہترین کھلاڑی قرار دیے گئے۔ انھوں نے انٹرنیشنل اسلامک یونیورسٹی، اسلام آباد کی کرکٹ ٹیم میں شمولیت اختیار کی اور جب ان کے کوچ نے ان سے ستمبر 2017 میں گوجرانوالہ میں ہونے والے لاہور قلندرز کے ٹرائلز میں شرکت کے لیے کہا تو وہ ابتدا میں ہچکچا رہے تھے۔ تاہم انھوں نے اتفاق کیا جب انھیں عاقب جاوید نے کھیلتے دیکھا، جنھوں نے انھیں آسٹریلیا میں کرکٹ کھیلنے پر مجبور کیا جس کے بعد انھیں لاہور قلندرز کے لیے ابوظہبی ٹی20 ٹرافی 2018ء کے لیے منتخب کیا گیا جس نے ان کے ڈومیسٹک کیریئر کو بھی نشان زد کیا۔[11]

مارچ 2019 میں رؤف کو بلوچستان کے پاکستان کپ 2019ء کے اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔[12][13] انھوں نے 2 اپریل 2019 کو پاکستان کپ 2019 میں بلوچستان کے لیے اپنا لسٹ اے ڈیبیو کیا۔[14] ستمبر 2019 میں انھیں قائد اعظم ٹرافی 2019-20ء ٹورنامنٹ کے لیے ناردرن کے اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔[15][16] انھوں نے 28 ستمبر 2019 کو قائد اعظم ٹرافی 2019–20ء میں ناردرن کے لیے اپنا فرسٹ کلاس ڈیبیو کیا۔[17] اکتوبر 2019 میں پاکستان کرکٹ بورڈ (PCB) نے انھیں قومی ٹی/20 کپ 2019-20ء ٹورنامنٹ سے قبل دیکھنے والے چھ کھلاڑیوں میں سے ایک کے طور پر نامزد کیا۔[18]

دسمبر 2019ء میں تسمانیہ گریڈ کرکٹ میں گلینورکی میگپائز کے لیے کھیلنے کے لیے آسٹریلیا میں رہنے کے بعد انھوں نے بگ بیش لیگ سیزن 2019–20ء میں میلبورن اسٹارز میں ڈیل اسٹین کے متبادل کے طور پر شمولیت اختیار کی، جو زخمی تھا۔[19] انھوں نے ہوبارٹ ہریکینز کے خلاف اپنے دوسرے میچ میں پانچ وکٹیں لیں۔[20] 8 جنوری 2020 کو انھوں نے سڈنی تھنڈر کے خلاف ہیٹ ٹرک کی،[21] اور بی بی ایل میں ایسا کرنے والے پہلے پاکستانی اور پہلے میلبورن اسٹارز باؤلر بن گئے جس میں ایک گیند 151.3 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے کی گئی۔[22] 16 فروری 2019 کو انھوں نے 23 رنز دے کر 4 وکٹیں حاصل کیں اور لاہور قلندرز کو کراچی کنگز کے خلاف جیتنے میں مدد کی۔[23]

 
حارث رؤف 2022 میں یارک شائر کے لیے گیند بازی کرتے ہوئے۔

دسمبر 2021 میں رؤف کو انگلستان میں 2022 کے کرکٹ سیزن میں کھیلنے کے لیے یارکشائر کاؤنٹی کرکٹ کلب نے سائن کیا تھا۔[24]

بین الاقوامی کیریئر ترمیم

جنوری 2020 میں رؤف کو بنگلہ دیش کے خلاف سیریز کے لیے پاکستان کے ٹی ٹوئینٹی (T20I) اسکواڈ میں شامل کیا گیا تھا۔[25] انھوں نے 24 جنوری 2020 کو بنگلہ دیش کے خلاف پاکستان کے لیے اپنا ٹی20 ڈیبیو کیا۔[26]

مئی 2020 میں پاکستان کرکٹ بورڈ (PCB) نے 2020-21ء کے سیزن سے پہلے ایک نئے ایمرجنگ کھلاڑیوں کے زمرے میں انھیں سینٹرل کنٹریکٹ سے نوازا۔[27][28] جون 2020 میں انھیں کورونا وائرس وبا کے دوران پاکستان کے دورہ انگلینڈ کے لیے 29 رکنی اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔[29][30] تاہم 22 جون 2020 کو رؤف پاکستان کے اسکواڈ کے تین کھلاڑیوں میں سے ایک تھے جن کا کورونا وائرس ٹیسٹ مثبت آیا۔[31] اگرچہ انھوں نے وائرس کی کوئی سابقہ ​​علامات ظاہر نہیں کی تھیں،[32] انھیں سیلف-آئسولیشن پیریڈ میں جانے کا مشورہ دیا گیا۔[33] رؤف کی جگہ بالآخر محمد عامر نے پاکستان کے اسکواڈ میں شمولیت اختیار کی جب اس نے گذشتہ ماہ کورونا وائرس کے لیے چھ میں سے پانچ مثبت ٹیسٹ فراہم کیے تھے۔[34] 30 جولائی 2020 کو پی سی بی نے تصدیق کی کہ رؤف کے مسلسل دو ٹیسٹ منفی آئے ہیں،[35] اور اس لیے وہ پاکستان کے اسکواڈ میں شامل ہو کر انگلستان جانے کے اہل ہیں۔[36]

29 اکتوبر 2020 کو رؤف کو زمبابوے کے خلاف پہلے میچ کے لیے پاکستان کے ایک روزہ بین الاقوامی (ODI) اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔[37] انھوں نے 30 اکتوبر 2020 کو زمبابوے کے خلاف پاکستان کے لیے اپنا ایک روزہ ڈیبیو کیا۔[38] نومبر 2020 میں ان کا نام دورہ نیوزی لینڈ کے لیے پاکستان کے 35 رکنی اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔[39] جنوری 2021 میں انھیں جنوبی افریقہ کے خلاف سیریز کے لیے پاکستان کے ٹیسٹ اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔[40][41] مارچ 2021 میں انھیں دوبارہ پاکستان کے ٹیسٹ اسکواڈ میں شامل کیا گیا اور اس بار زمبابوے کے خلاف۔[42][43] جون 2021 میں انھیں ویسٹ انڈیز کے خلاف سیریز کے لیے پاکستان کے ٹیسٹ اسکواڈ میں بھی شامل کیا گیا تھا۔[44]

ستمبر 2021 میں رؤف کو آئی سی سی ٹی/20 عالمی کپ 2021ء کے لیے پاکستان کے اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔[45] انھوں نے نیوزی لینڈ کے خلاف ٹورنامنٹ کے دوسرے کھیل میں پاکستان کے لیے مین آف دی میچ جیتنے کے لیے چار وکٹیں لیں۔[46]

فروری 2022ء میں رؤف کو آسٹریلیا کے خلاف سیریز کے لیے پاکستان کے ٹیسٹ اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔[47] اگست 2022 میں رؤف کو ایشیا کپ کے لیے پاکستان کے اسکواڈ میں شامل کیا گیا۔

22 اگست 2023ء کو، رؤف نے افغانستان کے خلاف 5/18 لے کر اپنی پہلی بین الاقوامی پانچ وکٹیں حاصل کیں۔[48]

مزید دیکھیے ترمیم

حوالہ جات ترمیم

  1. "حارث رؤف"۔ پاکستان کرکٹ بورڈ۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 اگست 2020 
  2. "حارث رؤف اپنا مختصر نام '150' بتاتے ہیں۔"۔ جیو سوپر۔ اخذ شدہ بتاریخ 10 نومبر 2022 
  3. "Haris Rauf puts all his efforts into playing Tests for Pakistan"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 18 جون 2020 
  4. "20 cricketers for the 2020s"۔ The Cricketer Monthly۔ اخذ شدہ بتاریخ 06 جولا‎ئی 2020 
  5. "Haris Rauf"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 14 فروری 2019 
  6. "Rising from the ashes — Haris Rauf"۔ Geo TV۔ اخذ شدہ بتاریخ 14 فروری 2019 
  7. "Group A, Abu Dhabi T20 Trophy at Abu Dhabi, Oct 5 2018"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 14 فروری 2019 
  8. "Pakistan v England at Rawalpindi, Dec 1-5 2022"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 01 دسمبر 2022 
  9. "Pakistani Cricketer Haris Rauf: Biography, career - rightpakistan.com" (بزبان انگریزی)۔ 2021-10-31۔ 11 نومبر 2022 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 نومبر 2022 
  10. "Congratulations pour in for Haris Rauf on marriage with Muzna Masood"۔ Daily Pakistan Global (بزبان انگریزی)۔ 2022-12-24۔ اخذ شدہ بتاریخ 07 فروری 2023 
  11. Liaqat Ali (19 February 2019), "Rauf on track to become another 'Pindi Express'", Khaleej Times. Retrieved 22 February 2019.
  12. "Federal Areas aim to complete hat-trick of Pakistan Cup titles"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 مارچ 2019 
  13. "Pakistan Cup one-day cricket from April 2"۔ The International News۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 مارچ 2019 
  14. "1st Match (D/N), Pakistan Cup at Rawalpindi, Apr 2 2019"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 02 اپریل 2019 
  15. "PCB announces squads for 2019-20 domestic season"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 04 ستمبر 2019 
  16. "Sarfaraz Ahmed and Babar Azam to take charge of Pakistan domestic sides"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 04 ستمبر 2019 
  17. "8th Match, Quaid-e-Azam Trophy at Rawalpindi, Sep 28 - Oct 1 2019"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 29 ستمبر 2019 
  18. "Players to watch-out for in the National T20 Cup"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 اکتوبر 2019 
  19. "Melbourne Stars sign Haris Rauf for Big Bash League"۔ Samaa News۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 دسمبر 2019 
  20. "Haris Rauf claims five-for against Hobart Hurricanes League"۔ Samaa News۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 دسمبر 2019 
  21. "How Rashid Khan and Haris Rauf got their hat-tricks"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 08 جنوری 2020 
  22. "Haris Rauf becomes first Pakistani player to grab a hat-trick in BBL"۔ The News۔ اخذ شدہ بتاریخ 09 جنوری 2020 
  23. "Haris Rauf's 4 for 23 helps Lahore Qalandars defend 138"۔ ESPNcricinfo۔ 15 February 2019۔ اخذ شدہ بتاریخ 17 فروری 2019 
  24. "Yorkshire agree Lahore Qalandars partnership in bid to 'reduce barriers to entry'"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 دسمبر 2021 
  25. "Pakistan squad for Bangladesh T20Is named"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 16 جنوری 2020 
  26. "1st T20I, Bangladesh tour of Pakistan at Lahore, Jan 24 2020"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 24 جنوری 2020 
  27. "Naseem Shah earns PCB central contract; Hasan Ali, Wahab Riaz, Mohammad Amir left out"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 13 مئی 2020 
  28. "Naseem Shah named in men's central contract list for 2020-21"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 13 مئی 2020 
  29. "Haider Ali the new face as Pakistan name 29-man touring party for England"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 جون 2020 
  30. "Haider Ali named in 29-player squad for England tour"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 جون 2020 
  31. "Shadab Khan, Haris Rauf, Haider Ali test positive for Covid-19"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 22 جون 2020 
  32. "Three Pakistan players test positive for coronavirus ahead of England tour"۔ The National۔ اخذ شدہ بتاریخ 22 جون 2020 
  33. "Update on players' Covid-19 tests"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 22 جون 2020 
  34. "Mohammad Amir cleared to join Pakistan squad in England after two negative Covid-19 results"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 24 جولا‎ئی 2020 
  35. "Update on Mohammad Amir and Haris Rauf"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 30 جولا‎ئی 2020 
  36. "Haris Rauf finally tests negative for Covid-19, set to fly to England"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 30 جولا‎ئی 2020 
  37. "Haider Ali, Abdullah Shafiq cut from squad for Friday's 1st ODI against Zimbabwe"۔ Geo Super۔ اخذ شدہ بتاریخ 29 اکتوبر 2020 
  38. "1st ODI, Rawalpindi, Oct 30 2020, Zimbabwe tour of Pakistan"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 30 اکتوبر 2020 
  39. "Pakistan name 35-player squad for New Zealand"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 11 نومبر 2020 
  40. "Shan Masood, Mohammad Abbas, Haris Sohail dropped from Pakistan Test squad"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 15 جنوری 2021 
  41. "Nine uncapped players in 20-member side for South Africa Tests"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 15 جنوری 2021 
  42. "Pakistan squads for South Africa and Zimbabwe announced"۔ Pakistan Cricket Board۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 مارچ 2021 
  43. "Sharjeel Khan returns to Pakistan T20I side for tour of South Africa and Zimbabwe"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 مارچ 2021 
  44. "Mohammad Abbas, Naseem Shah return to Pakistan Test squad"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 04 جون 2021 
  45. "Sharjeel Khan dropped from T20 World Cup squad; Asif Ali, Khushdil Shah make 15-man cut"۔ ESPN Cricnfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 06 ستمبر 2021 
  46. "Haris Rauf takes four-for as Pakistan beat New Zealand by five wickets"۔ Hindustan Times (بزبان انگریزی)۔ 26 October 2021۔ اخذ شدہ بتاریخ 27 اکتوبر 2021 
  47. "Pakistan call up Haris Rauf for Tests against Australia; Shan Masood recalled"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 09 فروری 2022 
  48. https://www.espncricinfo.com/series/afghanistan-v-pakistan-2023-1392508/afghanistan-vs-pakistan-1st-odi-1390344/live-cricket-score pakvsafg1stodi5wicketshaul

بیرونی روابط ترمیم