چودھری محمد علی پاکستانی سیاست دان تھے جو 1955ء سے 1956ء تک پاکستان کے وزیر اعظم رہے۔ آپ جالندھر کے آرائیں خاندان میں پیدا ہوئے اور پنجاب یونیورسٹی سے تعلیم حاصل کی۔ برطانوی حکومت کے دوران میں آپ کا شمار اعلیٰ مسلمان سول سرونٹس میں ہوتا تھا۔ پاکستان کے قیام کے بعد آپ کو نئی مملکت کا جنرل سیکریٹری اور بعد میں وزیر خزانہ بنایا گیا۔ 1955ء میں اس وقت کے گورنر جنرل اسکندر مرزا نے آپ کو محمد علی بوگرہ کی جگہ پاکستان کا وزیر اعظم نامزد کیا۔ آپ کی سب سے بڑی کامیابی پاکستان کے لیے پہلا آئین بنانا تھے جو 1956ء میں نافذ ہوا۔

چودھری محمد علی
Chaudhry Mohammad Ali.jpg
 

وزیر اعظم پاکستان
مدت منصب
12 اگست 1955 – 12 ستمبر 1956
حکمران ایلزبتھ دوم (قبل از 1956)
صدر اسکندر مرزا (از 1956)
Fleche-defaut-droite-gris-32.png محمد علی بوگرہ
حسین شہید سہروردی Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
وزیر دفاع پاکستان
مدت منصب
12 اگست 1955 – 12 ستمبر 1956
Fleche-defaut-droite-gris-32.png ایوب خان
حسین شہید سہروردی Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
وزیر خزانہ پاکستان
مدت منصب
24 اکتوبر 1951 – 11 اگست 1955
وزیر اعظم خواجہ ناظم الدین
محمد علی بوگرہ
Fleche-defaut-droite-gris-32.png ملک غلام محمد
امجد علی Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائش 15 جولا‎ئی 1905[1]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جالندھر  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 2 دسمبر 1980 (75 سال)[1]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ڈیفنس ہاؤسنگ اتھارٹی، کراچی  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند
Flag of Pakistan.svg پاکستان  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جماعت مسلم لیگ
آل انڈیا مسلم لیگ  ویکی ڈیٹا پر (P102) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ پنجاب (–1925)
اسلامیہ کالج لاہور  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ سیاست دان،  اکیڈمک،  ماہر معاشیات،  سرمایہ کار  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مادری زبان اردو  ویکی ڈیٹا پر (P103) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان اردو  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

انہوں نے تحریک پاکستان کے موضوع پر Emergence of Pakistan کے نام سے ایک کتاب بھی تحریر کی تھی جس کا ترجمہ ’’ظہور پاکستان‘‘ کے نام سے اشاعت پزیر ہوچکا ہے۔ یکم دسمبر 1980ء کو چوہدری محمد علی نے کراچی میں وفات پائی۔

اقتباسترميم

قدرت اللہ شہاب اپنی کتاب شہاب نامہ میں لکھتے ہیں: گورنر جنرل اسکندر مرزا نے چودھری محمد علی کو محمد علی بوگرہ کی جگہ پاکستان کا وزیر اعظم نامزد کیا۔ بہ حیثیت وزیر اعظم چوہدری محمد علی کا سب سے بڑا کارنامہ 1956ء کے آئین کے نفاذ کا تھا۔ چوہدری محمد علی وزیراعظم کے عہدہ سے 13 ماہ بعد مستعفی ہو گئے۔ ہمارے ملک کی تاریخ میں یہ واحد مثال ہے جس میں کسی وزیراعظم نے اپنے آپ کسی دباؤ کے بغیر اپنے عہدہ سے استعفی دیا ہے۔
وزارت عظمی سے سبکدوشی کے بعد انہوں نے نہایت صبر اور خاموشی سے زندگی گزاری۔ ایک بار انہں علاج کے لیے بیرون ملک جانا ضروری ہو گیا۔ لیکن وسائل کی کمی ان کے راستے میں حائل تھی۔ جب صدر اسکندر مرزا کو اس صورت حال کا علم ہوا تو انہوں نے خود ان کے ہاں جا کر کوشش کی کہ ان کے اخراجات کے لیے وہ حکومت کی مالی امداد قبول کر لیں۔ لیکن چوہدری صاحب نہ مانے۔ ان کا موقف یہ تھا کہ انہوں نے حکومت کے لیے جو خدمات سرانجام دی ہے، اس کا انہیں پورا معاوضہ ملتا رہا ہے۔ اب وہ خواہ مخواہ پاکستان کے خزانے پر مزید بوجھ نہیں بننا چاہتے، لیکن صدر اسکندر مرزا کے مسلسل اصرار پر انہوں نے بیس ہزار روپے قرضہ حسنہ کے طور پر قبول کر لیے۔ بعد ازاں یہ رقم انہوں نے چند قسطوں میں واپس ادا بھی کر دی۔


سیاسی عہدے
ماقبل  وزیر خزانہ پاکستان
1951ء – 1955ء
مابعد 
ماقبل  وزیراعظم پاکستان
1955ء & ndash; 1956ء
مابعد 
ماقبل  وزیر دفاع پاکستان
1955ء – 1956ء
مابعد 

مزید دیکھیےترميم

حوالہ جاتترميم

  1. ^ ا ب ایس این اے سی آرک آئی ڈی: https://snaccooperative.org/ark:/99166/w6rz9vnk — بنام: Chaudhry Muhammad Ali — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017

بیرونی روابطترميم