ایلزبتھ دوم

(الیزبتھ دوئم سے رجوع مکرر)

ملکہ ایلزبتھ دؤم (مکمل نام: ایلزبتھ الیگزینڈرا میری؛ پیدائش: 21 اپریل 1926ء) مملکت متحدہ کی ملکہ اور دولت مشترکہ قلمرو کی آئینی ملکہ ہیں۔ اِس کے علاوہ وہ دولتِ مشترکہ کے 54 ملکوں کی مُکھیا اور انگریزی چرچ کی عظیم  حاکمہ ہیں۔  ملِکہ ایلزبتھ 21 اپریل 1926 کو لندن میں پیدا ہوئیں اور انھوں نے ابتدائی تعلیم گھر پر حاصل کی۔ سال 1947 میں ان کی شادی شہزادے فلپ کےساتھ ہوئی، جن سے ان کے چار بچے ہیں۔ جب ان کے والد بادشاہ جارج ششم کا 1952 مین انتقال ہوا، تب ایلزبتھ دولتِ مشترکہ کی صدر اور مملکت متحدہ، کناڈا، اوسٹریلیا، نیو زیلینڈ، جنوبی افریقہ، پاکستان اور سری لنکا کی حکمران بن کئیں۔ ان کی تاجپوشی سال 1953 میں ہوئی اور یہ اپنی طرح کی پہلی ایسی تاج پوشی تھی جو ٹیلی ویژن پر نشر ہوئی۔  9 ستمبر 2015 کو انھوں نے ملِکہ وِکٹوریا کے سب سے لمبے دورِ حکومت کے رِکارڈ کو توڑ دیا اور برطانیہ پر سب سے زیادہ وقت تک حکومت کرنے والی ملِکہ بن گئیں۔ وہ پورے عالم میں سب سے عمردراز حکمران اور سب سے لمبے وقت تک حکومت کرنے والی ملِکہ ہیں۔

صاحب جلال[1]  ویکی ڈیٹا پر (P511) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ایلزبتھ دوم
(انگریزی میں: Elizabeth II ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Queen Elizabeth II in March 2015.jpg
 

معلومات شخصیت
پیدائشی نام (انگریزی میں: Elizabeth Alexandra Mary Windsor)[2]  ویکی ڈیٹا پر (P1477) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیدائش 21 اپریل 1926 (95 سال)[3][4][5][6][7][8][9]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مے فیئر[10]  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رہائش بکنگھم محل[11]
قلعہ ونڈسر[11]
بالمورل قلعہ[12]
سنڈرنگھم ہاؤس[13]
ہولیروڈ محل[14]  ویکی ڈیٹا پر (P551) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of the United Kingdom.svg مملکت متحدہ  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
آنکھوں کا رنگ نیلا  ویکی ڈیٹا پر (P1340) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
قد 64 انچ[15]  ویکی ڈیٹا پر (P2048) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مذہب کلیسائے انگلستان[16]،  چرچ آف سکاٹ لینڈ[17]  ویکی ڈیٹا پر (P140) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رکنیت رائل سوسائٹی  ویکی ڈیٹا پر (P463) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شریک حیات شہزادہ فلپ، ڈیوک ایڈنبرا (20 نومبر 1947–9 اپریل 2021)[18][19][20]  ویکی ڈیٹا پر (P26) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اولاد نسل
والد جارج ششم[21][19]  ویکی ڈیٹا پر (P22) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والدہ ملکہ ایلزبتھ مادر ملکہ[22][19]  ویکی ڈیٹا پر (P25) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بہن/بھائی
شہزادی مارگریٹ، سنوڈن کی کاؤنٹیس[23][19]  ویکی ڈیٹا پر (P3373) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
خاندان خاندان ونڈسر[24]  ویکی ڈیٹا پر (P53) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مناصب
بادشاہ مملکت متحدہ   ویکی ڈیٹا پر (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
آغاز منصب
6 فروری 1952 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png جارج ششم 
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
نیوزی لینڈ کا بادشاہ   ویکی ڈیٹا پر (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
آغاز منصب
6 فروری 1952 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png جارج ششم 
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
Flag of England.svg سپریم گورنر چرچ آف انگلینڈ[11]   ویکی ڈیٹا پر (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
آغاز منصب
6 فروری 1952 
سربراہ دولت مشترکہ[11]   ویکی ڈیٹا پر (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
آغاز منصب
6 فروری 1952 
دیگر معلومات
پیشہ شاہی حکمران[11]،  آٹو میکینک[25]،  ٹرک ڈرائیور[25]،  آرٹ کولکٹر  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مادری زبان برطانوی انگریزی  ویکی ڈیٹا پر (P103) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان انگریزی،  فرانسیسی[26]  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عسکری خدمات
لڑائیاں اور جنگیں دوسری جنگ عظیم[27]  ویکی ڈیٹا پر (P607) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اعزازات
Royal Victorian Chain Ribbon.gif رائل وکٹورین چین (2007)
تمغا البرٹ (1958)
ٹائم سال کی شخصیت (1952)
Legion Honneur GC ribbon.svg گرینڈ کراس آف دی لیگون آف ہانر (1948)
Order of the Elephant Ribbon bar.svg آرڈر آف ایلی فینٹ (1947)[28]
Ord.GoodHope-ribbon.gif گرینڈ کولار آف دی آرڈر آف گوڈ ہوپ
Spange des König-Abdulaziz-Ordens.png آرڈر آف عبد العزیز السعود 
EGY - Order of the Virtues - Third class.svg آرڈر آف دی ورٹوئس
CivilOrderOman.png وسام عمان
ETH Order of Solomon BAR.png آرڈر آف سولومن
ROM Ordinul Steaua Republicii Populare Române clasa I BAR.svg ستارہ اشتراکی جمہوریہ رومانیہ
Order of Mubarak the Great (Kuwait) - ribbon bar.gif مبارک الکبیر اعزاز
Bintang Republik Indonesia Adipurna Ribbon Bar.gif ستارہ جمہوریہ انڈونیشیا
Orden Nila rib.gif آرڈر آف دی نیل
POL Order Orła Białego BAR.svg آرڈر آف دی وائٹ ایگل
کالر آف دی آرڈر آر دی وائیٹ لائن
Order of the Garter UK ribbon.svg آرڈر آف گارٹر
Order of the Republic (Tunisia) - ribbon bar.gif نشان جمہوریہ
National Order - Knight (Niger) - ribbon bar.png قومی اعزاز نائجر
GeorgeVICoronationRibbon.png شاہ جارج ششم تاجپوشی تمغا  ویکی ڈیٹا پر (P166) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دستخط
Signature of Elizabeth II.png
 
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحہ  ویکی ڈیٹا پر (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ابتدائی زندگیترميم

الزبتھ 21اپریل 1926ء کو لندن میں پیدا ہوئیں۔ ان کے والد پرنس البرٹ، ڈیوک آف یارک (بعد میں جارج ششم) تھے۔ انھونے ابتدائی تعلیم گھر پر زیر نگرانی میں حاصل کی۔

ولی عہدترميم

1936ء میں جب ایلزبتھ کے والد پرنس البرٹ اپنے بھائی کے تخت چھوڑنے کے بعد بادشاہ بنے، تو ایلزبتھ ان کی ولی عہد بن گئی۔

تاجپوشیترميم

2 جون 1953ء کو ویسٹمنسٹر ایبے، لندن میں تخت نشینی کی تقریب منعقد ہوئی، جس میں ملکہ ایلزبتھ باقاعدہ طور پر مملکت متحدہ، کناڈا، اوسٹریلیا، نیو زیلینڈ، جنوبی افریقہ، پاکستان اور سری لنکا کی حکمران بن گئیں۔

راج بطور ملکہ پاکستانترميم

6 فروری 1952 کو پاکستان کے بادشاہ جارج ششم کی موت کے بعد ان کی بیٹی شہزادی الزبتھ پاکستان کی نئی حکمران بن گئیں۔ ملکہ الزبتھ کو پاکستان سمیت اپنے تمام علاقوں میں ملکہ قرار دیا گیا تھا۔ پاکستان میں 8 فروری کو گورنر جنرل نے اعلان کیا کہ ملکہ معظمہ الزبتھ دوم اب اپنے علاقوں اور ریاستوں کی ملکہ اور دولت مشترکہ کی سربراہ بن گئی ہیں۔ انہیں پاکستان میں 21 توپوں کی سلامی بھی دی گئی۔[29][30][31][32]

مورخ اینڈریو میچی نے 1952 میں لکھا تھا کہ ملکہ الزبتھ برطانیہ کا تو چہرہ تھی ہیں ساتھ ہی وہ برابری سے پاکستان کا بھی چہرہ تھی۔[33]

1953 میں ملکہ الزبتھ کی تاجپوشی کے دوران انہیں پاکستان کی ملکہ اور دولت مشترکہ قلمرو کا تاج پہنایا گیا۔ ملکہ نے تاجپوشی کے دوران یہ حلف لیا کہ وہ پاکستان کی عوام پر لوگوں کے متعلقہ قوانین اور رواج کے مطابق حکومت کریں گی۔[34][35]

ملکہ کے تاجپوشی گاؤن  پر ہر دولت مشترکہ قوم کے نشانیاں سے کڑھائی کی گی تھی۔ شاہی گاؤن میں پاکستان کے تین نشانات نمایاں تھے: ہیرے اور سنہرے کرسٹل کے بنے گندم ، چاندی اور سبز ریشم اور پٹ سن سے بنا کپاس ، اور سبز ریشم اور سنہرے دھاگے سے بنا پٹ سن۔ پاکستان کے وزیر اعظم محمد علی بوگرا نے بھی اپنی اہلیہ اور دو بیٹوں کے ساتھ لندن میں تاجپوشی کی تقریب میں شرکت کی۔ تاجپوشی کی پریڈ میں پاکستانی فوجیوں اور جہازوں نے بھی حصہ لیا۔[36][37][38][39][40][41][42]

23 مارچ 1956 کو جمہوریہ آئین کو اپنانے پر پاکستانی بادشاہت ختم کر دی گئی۔ تاہم ، پاکستان دولت مشترکہ کے ممالک میں ایک جمہوریہ بن گیا۔ ملکہ الزبتھ نے صدر مرزا کو ایک پیغام بھیجا ، جس میں انھونے کہا کہ میں نے آپ کے ملک کے قیام کے بعد سے اس ملک کی ترقی کو گہری دلچسپی کے ساتھ پیروی کی ہے۔ میرے لیے یہ جان کر بہت اطمینان کا باعث ہے کہ آپ کا ملک دولت مشترکہ میں رہنے کا ارادہ رکھتا ہے۔ مجھے یقین ہے کہ پاکستان اور دولت مشترکہ کے دیگر ممالک ترقی کرتے رہیں گے اور ان کی باہمی رفاقت سے فائدہ اٹھائیں گے۔[43][44]

ملکہ نے 1961 اور بعد میں 1997 میں پاکستان کی آزادی کی گولڈن جوبلی کے موقے پر پاکستان کا دورہ کیا۔ ان کے ساتھ شہزادہ فلپ ، ڈیوک آف ایڈنبرا بھی تھے۔[45]

نگار خانہترميم

<link rel="mw:PageProp/Category" href="./زمرہ:بیلیز_کے_سربراہان_ریاست"/>

  1. https://www.royal.uk/her-majesty-the-queen — اخذ شدہ بتاریخ: 6 مارچ 2019 — اقتباس: About Her Majesty the Queen
  2. https://www.bbc.co.uk/newsround/44370212 — اخذ شدہ بتاریخ: 6 مارچ 2019 — اقتباس: Her full name is Elizabeth Alexandra Mary Windsor
  3. ربط : https://d-nb.info/gnd/118529889  — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اپریل 2014 — اجازت نامہ: CC0
  4. ربط : https://d-nb.info/gnd/118529889  — اخذ شدہ بتاریخ: 27 ستمبر 2015 — مدیر: الیکزینڈر پروکورو — عنوان : Большая советская энциклопедия — اشاعت سوم — باب: Елизавета II
  5. ایس این اے سی آرک آئی ڈی: https://snaccooperative.org/ark:/99166/w6tr9s7x — بنام: Elizabeth II — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  6. ڈسکوجس آرٹسٹ آئی ڈی: https://www.discogs.com/artist/1047256 — بنام: Queen Elizabeth II — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  7. بنام: Elisabeth II. — فلم پورٹل آئی ڈی: https://www.filmportal.de/3ed271233e474044aaa65daa73c83928 — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  8. بنام: Elizabeth II. — FemBio ID: https://www.fembio.org/biographie.php/frau/frauendatenbank?fem_id=8733 — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — عنوان : Банк інформації про видатних жінок
  9. دا پیرایج پرسن آئی ڈی: https://wikidata-externalid-url.toolforge.org/?p=4638&url_prefix=https://www.thepeerage.com/&id=p10070.htm#i100699 — بنام: Elizabeth II Windsor, Queen of the United Kingdom — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — مصنف: ڈئریل راجر لنڈی — خالق: ڈئریل راجر لنڈی
  10. https://www.bbc.co.uk/newsround/44370212 — اخذ شدہ بتاریخ: 6 مارچ 2019 — اقتباس: Queen Elizabeth II was born at 17 Bruton Street in London
  11. ^ ا ب پ https://www.bbc.co.uk/newsround/44370212 — اخذ شدہ بتاریخ: 6 مارچ 2019
  12. https://www.bbc.co.uk/newsround/44370212 — اخذ شدہ بتاریخ: 6 مارچ 2019 — اقتباس: She spends her summers at Balmoral Castle in Aberdeenshire
  13. https://www.bbc.co.uk/newsround/44370212 — اخذ شدہ بتاریخ: 6 مارچ 2019 — اقتباس: at Christmas she goes to her Sandringham Estate in Norfolk.
  14. https://www.bbc.co.uk/newsround/44370212 — اخذ شدہ بتاریخ: 6 مارچ 2019 — اقتباس: In Scotland, her official residence is Holyroodhouse in Edinburgh.
  15. https://www.bbc.co.uk/newsround/44370212 — اخذ شدہ بتاریخ: 6 مارچ 2019 — اقتباس: The Queen is about 5ft 4ins tall
  16. https://web.archive.org/web/20080307003413/http://www.royalinsight.gov.uk/output/Page4708.asp — اخذ شدہ بتاریخ: 13 جنوری 2020
  17. http://news.bbc.co.uk/1/hi/scotland/2007449.stm — اخذ شدہ بتاریخ: 13 جنوری 2020
  18. https://www.bbc.co.uk/newsround/44370212 — اخذ شدہ بتاریخ: 6 مارچ 2019 — اقتباس: Once Elizabeth turned 21, her engagement to the Duke of Edinburgh was officially announced and they got married on November 20 1947 in Westminster Abbey
  19. ^ ا ب پ ت https://www.bbc.co.uk/newsround/44370212 — عنوان : Kindred Britain
  20. دا پیرایج پرسن آئی ڈی: https://wikidata-externalid-url.toolforge.org/?p=4638&url_prefix=https://www.thepeerage.com/&id=p10070.htm#i100699 — اخذ شدہ بتاریخ: 7 اگست 2020
  21. Queen's birthday: Queen Elizabeth II's life in 92 facts — اخذ شدہ بتاریخ: 6 مارچ 2019
  22. https://www.bbc.co.uk/newsround/44370212 — اخذ شدہ بتاریخ: 6 مارچ 2019 — اقتباس: Her parents were... Lady Elizabeth Bowes-Lyon
  23. https://www.bbc.co.uk/newsround/44370212 — اخذ شدہ بتاریخ: 6 مارچ 2019 — اقتباس: In 1930, her little sister was born - Princess Margaret Rose
  24. https://www.bbc.co.uk/newsround/44370212 — اخذ شدہ بتاریخ: 6 مارچ 2019 — اقتباس: She is a descendant of the House of Saxe-Coburg and Gotha, which was renamed the House of Windsor during World War One
  25. https://www.bbc.co.uk/newsround/34188380 — اخذ شدہ بتاریخ: 6 مارچ 2019 — اقتباس: The Queen trained as a mechanic and military truck driver during World War II.
  26. http://www.royal.gov.uk/LatestNewsandDiary/Factfiles/80factsaboutTheQueen.aspx
  27. https://www.bbc.co.uk/newsround/34188380 — اخذ شدہ بتاریخ: 6 مارچ 2019 — اقتباس: The Queen trained as a mechanic and military truck driver during World War II. Her Majesty served in the Women's Auxiliary Territorial Service during the conflict.
  28. http://kongehuset.dk/modtagere-af-danske-dekorationer
  29. Pillalamarri، Akhilesh. "When Elizabeth II Was Queen of Pakistan". thediplomat.com (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 اگست 2021. 
  30. Islam: 1950-1952، Archive Editions، 2004، صفحہ 513 
  31. Select Documents on the Constitutional History of the British Empire and Commonwealth: The dominions and India since 1900، Greenwood Press، 1985، صفحہ 183 
  32. The Table: Volumes 20-23، Butterworth.، 1952، صفحہ 112 
  33. Michie، Allan Andrew (1952). The Crown and the People. London: Secker & Warburg. صفحہ 52. اخذ شدہ بتاریخ 14 ستمبر 2017. 
  34. "The Coronation of Queen Elizabeth II". اخذ شدہ بتاریخ 16 مئی 2014. 
  35. "The Form and Order of Service that is to be performed and the Ceremonies that are to be observed in the Coronation of Her Majesty Queen Elizabeth II in the Abbey Church of St. Peter, Westminster, on Tuesday, the second day of June, 1953". Oremus.org. اخذ شدہ بتاریخ 03 فروری 2013. 
  36. "Her Majesty Queen Elizabeth II Coronation Gown". Fashion Era. اخذ شدہ بتاریخ 30 اپریل 2011. 
  37. Hardman، Robert (2018)، Queen of the World، Random House، ISBN 9781473549647 
  38. Pakistan Affairs: Volumes 5-6، 6، Information Division, Embassy of Pakistan، 1951، صفحہ 1 
  39. Schofield، Victoria (2000). "Special Status". Kashmir in Conflict: India, Pakistan and the Unending War (بزبان انگریزی). I.B.Tauris. صفحہ 85. ISBN 9781860648984. اخذ شدہ بتاریخ 09 جولا‎ئی 2017. 
  40. Souvenir Programme, Coronation Review of the Fleet, Spithead, 15th June 1953, HMSO, Gale and Polden
  41. Day، A. (22 May 1953). "Coronation Review of the Fleet" (PDF). Cloud Observers Association. اخذ شدہ بتاریخ 03 مئی 2015. 
  42. Pakistan، Pakistan Publications، صفحہ 167 
  43. John Stewart Bowman (2000). Columbia chronologies of Asian history and culture. Columbia University Press. صفحہ 372. ISBN 978-0-231-11004-4. اخذ شدہ بتاریخ 22 مارچ 2011. 
  44. "Queen Elizabeth Sends Message"، Pakistan Affairs، Information Division, Embassy of Pakistan، 9 (6)، صفحہ 7، 9 April 1956 
  45. "Commonwealth visits since 1952". Official website of the British monarchy. 12 اپریل 2015 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 04 ستمبر 2012.