مرکزی مینیو کھولیں

ایکواڈور

جنوبی امریکا میں واقعہ ملک
  
ایکواڈور
(ہسپانوی میں: República del Ecuador خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں باضابطہ نام (P1448) ویکی ڈیٹا پر
ایکواڈور
پرچم
ایکواڈور
نشان

ECU orthographic.svg 

شعار
(ہسپانوی میں: Dios, patria y libertad خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شعار کا متن (P1451) ویکی ڈیٹا پر
ترانہ:
زمین و آبادی
متناسقات 1°S 78°W / 1°S 78°W / -1; -78  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں متناسقاتی مقام (P625) ویکی ڈیٹا پر[1]
پست مقام بحر الکاہل (0 میٹر)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پست ترین مقام (P1589) ویکی ڈیٹا پر
رقبہ 283560 مربع کلومیٹر  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں رقبہ (P2046) ویکی ڈیٹا پر
دارالحکومت کیٹو  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں دارالحکومت (P36) ویکی ڈیٹا پر
سرکاری زبان ہسپانوی[2]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں سرکاری زبان (P37) ویکی ڈیٹا پر
آبادی 15737878 (2013)[3]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں آبادی (P1082) ویکی ڈیٹا پر
اوسط عمر
72.624 سال (1999)[4]
72.933 سال (2000)[4]
73.22 سال (2001)[4]
73.482 سال (2002)[4]
73.72 سال (2003)[4]
73.937 سال (2004)[4]
74.136 سال (2005)[4]
74.322 سال (2006)[4]
74.501 سال (2007)[4]
74.678 سال (2008)[4]
74.859 سال (2009)[4]
75.046 سال (2010)[4]
75.244 سال (2011)[4]
75.449 سال (2012)[4]
75.661 سال (2013)[4]
75.879 سال (2014)[4]
76.102 سال (2015)[4]
76.327 سال (2016)[4]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں اوسط عمر (P2250) ویکی ڈیٹا پر
حکمران
طرز حکمرانی جمہوریہ،  صدارتی نظام  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں نوع حکومت (P122) ویکی ڈیٹا پر
قیام اور اقتدار
تاریخ
یوم تاسیس 10 اگست 1809،  24 مئی 1822،  11 اکتوبر 1811  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاسیس (P571) ویکی ڈیٹا پر
عمر کی حدبندیاں
شادی کی کم از کم عمر 18 سال  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شادی کی کم از کم عمر (P3000) ویکی ڈیٹا پر
الحاق اور رکنیت
مشترکہ سرحدیں
پیرو (Ecuador–Peru border)
کولمبیا (Colombia–Ecuador border)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مشترکہ سرحدیں (P47) ویکی ڈیٹا پر
خام ملکی پیداوار
 ← کل
103056619000 امریکی ڈالر (2017)[11]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں فی کس جی ڈی پی (P2131) ویکی ڈیٹا پر
 ← فی کس 4828.268 بین الاقوامی ڈالر (1990)[12]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں PPP GDP per capita (P2299) ویکی ڈیٹا پر
جی ڈی پی تخمینہ
 ← فی کس 455 امریکی ڈالر (1960)[13]
375 امریکی ڈالر (1961)[13]
315 امریکی ڈالر (1962)[13]
368 امریکی ڈالر (1963)[13]
440 امریکی ڈالر (1964)[13]
454 امریکی ڈالر (1965)[13]
449 امریکی ڈالر (1966)[13]
458 امریکی ڈالر (1967)[13]
450 امریکی ڈالر (1968)[13]
527 امریکی ڈالر (1969)[13]
471 امریکی ڈالر (1970)[13]
440 امریکی ڈالر (1971)[13]
495 امریکی ڈالر (1972)[13]
588 امریکی ڈالر (1973)[13]
970 امریکی ڈالر (1974)[13]
1106 امریکی ڈالر (1975)[13]
1266 امریکی ڈالر (1976)[13]
1495 امریکی ڈالر (1977)[13]
1574 امریکی ڈالر (1978)[13]
1823 امریکی ڈالر (1979)[13]
2241 امریکی ڈالر (1980)[13]
2665 امریکی ڈالر (1981)[13]
2374 امریکی ڈالر (1982)[13]
1993 امریکی ڈالر (1983)[13]
1916 امریکی ڈالر (1984)[13]
1895 امریکی ڈالر (1985)[13]
1651 امریکی ڈالر (1986)[13]
1467 امریکی ڈالر (1987)[13]
1340 امریکی ڈالر (1988)[13]
1392 امریکی ڈالر (1989)[13]
1491 امریکی ڈالر (1990)[13]
1623 امریکی ڈالر (1991)[13]
1690 امریکی ڈالر (1992)[13]
1729 امریکی ڈالر (1993)[13]
2028 امریکی ڈالر (1994)[13]
2135 امریکی ڈالر (1995)[13]
2159 امریکی ڈالر (1996)[13]
2361 امریکی ڈالر (1997)[13]
2300 امریکی ڈالر (1998)[13]
1584 امریکی ڈالر (1999)[13]
1451 امریکی ڈالر (2000)[13]
1903 امریکی ڈالر (2001)[13]
2183 امریکی ڈالر (2002)[13]
2440 امریکی ڈالر (2003)[13]
2708 امریکی ڈالر (2004)[13]
3021 امریکی ڈالر (2005)[13]
3350 امریکی ڈالر (2006)[13]
3590 امریکی ڈالر (2007)[13]
4274 امریکی ڈالر (2008)[13]
4255 امریکی ڈالر (2009)[13]
4657 امریکی ڈالر (2010)[13]
5223 امریکی ڈالر (2011)[13]
5702 امریکی ڈالر (2012)[13]
6074 امریکی ڈالر (2013)[13]
6396 امریکی ڈالر (2014)[13]
6150 امریکی ڈالر (2015)[13]
6099 امریکی ڈالر (2016)[13]
6273 امریکی ڈالر (2017)[13]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں nominal GDP per capita (P2132) ویکی ڈیٹا پر
کل ذخائر 41077600 امریکی ڈالر (1960)[14]
38397350 امریکی ڈالر (1961)[14]
43348220 امریکی ڈالر (1962)[14]
51632720 امریکی ڈالر (1963)[14]
51638400 امریکی ڈالر (1964)[14]
46038400 امریکی ڈالر (1965)[14]
61158146 امریکی ڈالر (1966)[14]
69213239 امریکی ڈالر (1967)[14]
62499909 امریکی ڈالر (1968)[14]
65130089 امریکی ڈالر (1969)[14]
75607786 امریکی ڈالر (1970)[14]
60390308 امریکی ڈالر (1971)[14]
144133547 امریکی ڈالر (1972)[14]
253707163 امریکی ڈالر (1973)[14]
390629826 امریکی ڈالر (1974)[14]
307492486 امریکی ڈالر (1975)[14]
529391109 امریکی ڈالر (1976)[14]
689065038 امریکی ڈالر (1977)[14]
727782749 امریکی ڈالر (1978)[14]
934098834 امریکی ڈالر (1979)[14]
1257167793 امریکی ڈالر (1980)[14]
797068778 امریکی ڈالر (1981)[14]
493476335 امریکی ڈالر (1982)[14]
802512378 امریکی ڈالر (1983)[14]
738907098 امریکی ڈالر (1984)[14]
853631268 امریکی ڈالر (1985)[14]
806084056 امریکی ڈالر (1986)[14]
691666393 امریکی ڈالر (1987)[14]
567569792 امریکی ڈالر (1988)[14]
706539001 امریکی ڈالر (1989)[14]
1009075807 امریکی ڈالر (1990)[14]
1080977277 امریکی ڈالر (1991)[14]
1015827333 امریکی ڈالر (1992)[14]
1541717569 امریکی ڈالر (1993)[14]
2002942790 امریکی ڈالر (1994)[14]
1787782198 امریکی ڈالر (1995)[14]
2011360127 امریکی ڈالر (1996)[14]
2212962682 امریکی ڈالر (1997)[14]
1738909756 امریکی ڈالر (1998)[14]
1887630539 امریکی ڈالر (1999)[14]
1178958573 امریکی ڈالر (2000)[14]
1073533178 امریکی ڈالر (2001)[14]
1004402834 امریکی ڈالر (2002)[14]
1165340467 امریکی ڈالر (2003)[14]
2147944603 امریکی ڈالر (2005)[14]
2026480112 امریکی ڈالر (2006)[14]
3520673155 امریکی ڈالر (2007)[14]
4472854387 امریکی ڈالر (2008)[14]
3792122213 امریکی ڈالر (2009)[14]
2622493198 امریکی ڈالر (2010)[14]
2957999565 امریکی ڈالر (2011)[14]
2486036148 امریکی ڈالر (2012)[14]
4345840372 امریکی ڈالر (2013)[14]
3941357328 امریکی ڈالر (2014)[14]
2487276572 امریکی ڈالر (2015)[14]
4215553082 امریکی ڈالر (2016)[14]
2169697856 امریکی ڈالر (2017)[14]
1439914211 امریکی ڈالر (2004)[15]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں کل ذخائر (P2134) ویکی ڈیٹا پر
اشاریہ انسانی ترقی
اشاریے
0.746 (2018)[16]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں انسانی ترقیاتی اشاریہ (P1081) ویکی ڈیٹا پر
شرح بے روزگاری 5 فیصد (2014)[17]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں unemployment rate (P1198) ویکی ڈیٹا پر
دیگر اعداد و شمار
کرنسی امریکی ڈالر  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں رائج سکہ (P38) ویکی ڈیٹا پر
ہنگامی فون
نمبر
منطقۂ وقت متناسق عالمی وقت−05:00  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں منطقہ وقت (P421) ویکی ڈیٹا پر
ٹریفک سمت دائیں[19]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں ڈرائیونگ سمت (P1622) ویکی ڈیٹا پر
ڈومین نیم ec.  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں ٹی ایل ڈی (P78) ویکی ڈیٹا پر
سرکاری ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ،باضابطہ ویب سائٹ،باضابطہ ویب سائٹ،باضابطہ ویب سائٹ،باضابطہ ویب سائٹ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں باضابطہ ویب سائٹ (P856) ویکی ڈیٹا پر
آیزو 3166-1 الفا-2 EC  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں ISO 3166-1 alpha-2 code (P297) ویکی ڈیٹا پر
بین الاقوامی فون کوڈ +593  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں ملکی ڈائیلنگ کوڈ (P474) ویکی ڈیٹا پر

ایکواڈور (انگریزی، ہسپانوی :Ecuador ) باضابطہ نام جمہوریہ ایکوڈور براعظم جنوبی امریکا کا ایک جمہوری ملک ہے جس کے شمال میں کولمبیا، مشرق اور جنوب میں پیرو اور مغرب میں پیسیفک اوشن واقع ہے۔ اس کے علاوہ سمندر میں واقع جزائر گالاپاگوز کے جزائر بھی ملک کا حصہ ہیں، جو مغرب میں ساحل سے 965 کلومیٹر دور سمندر میں واقع ہیں۔ ملک کا کل رقبہ 256,370 مربع کلومیٹر اور آبادی 13,810,000 ہے اور وفاقی دار الحکومت کیٹو ہے۔

فہرست

تاریخترميم

ابتدائی تاریخترميم

ایکواڈور میں انسانی تہذیب کے آثار 3500 قبل مسیح سے ملتے ہیں، جہاں سے کئی تہذیبوں جن میں والدیویا تہذیب اور مچالیلہ تہذیب ساحلی علاقوں اور کوئیٹس (موجودہ دار الحکومت کیٹو کے قریبی علاقہ) اور کناری موجودہ کوئنکا کی تہذیبوں نے جنم لیا۔ ہر تہذیب نے اپنی الگ پہچان، فن تعمیر، برتن سازی اور مذہبی اقتدار بنائیں۔ کئی سالوں کی مزاہمت کے بعد کناری اور دیگر قبائل ہار گئے اور مذاہمتی لڑاکوں کو قتل کر کے ندی میں پھینک دیا گیا جیسا کہ یاہوارکوکا کی لڑائی (battle of Yahuarcocha) یا خونی جھیل (Blood Lake) میں بتایا جاتا ہے اور جس کے نتیجہ میں ایکواڈور انکان سلطنت (Incan empire) کا حصہ بنا۔

بطور ہسپانوی کالونیترميم

1531ء میں ہسپانوی فاتحین نے فرانسسکو پزارو کے قیادت میں اندرونی خلفشار کا شکار انکا سلطنت کو فتح کیا


جغرافیعہترميم

تفصیلی مضمون ایکواڈور کا جغرافیعہ

ایکواڈور کو جغرافیائی اعتبار سے تین حصوں میں تقسیم کیا جاتا ہے۔

  • لا کوستہ ملک کے مغرب میں پیسیفک کے ساحل کے ساتھ ساتھ قدرے نچلے علاقہ کو کہتے ہیں۔
  • لا سیعیرا ملک کے درمیان سے گزرتی پہاڑی پٹی کو کہتے ہیں جو شمال سے جنوب تک پہھلی ہے جن میں بڑا پہاڑی سلسلہ آندیس پہاڑی سلسلہ ہے۔
  • ایل اوریعنتے ایمازون کے بارشی جنگلات پر مشتمل علاقہ ہے جو ملک کے مشرق میں واقع ہے اور ملک کے نصف سے زیادہ علاقہ بناتا ہے، جبکہ اس علاقہ میں ملک کی صرف پانچ فیصد آبادی رہتی ہے۔

ان کے علاوہ ملک کا ایک اور حصہ زمینی علاقہ سے لگ بھگ ایک ہزار کلومیٹر دور پیسیفک اوشن میں واقع ہے جس کو جزائر گالاپاگوز کے جزائر کہتے ہیں۔

جنگلی حیاتترميم

 
جزائر گالاپاگوز کچھوہ

ایکواڈور کا شمار دنیا کے ایسے سترہ ممالک میں ہوتا ہے جہاں جنگلی حیات کی بہتات ہے۔ ایکواڈور میں پرندوں کی سولہ سو انواع پائی جاتی ہیں جو دنیا کی پرندوں کی کل انواع کا پندرہ فیصد ہیں۔ اسے علاوہ پودوں کی اقسام میں پچیس ہزار انواع پائی جاتی ہیں۔ رینگنے والے جانوروں کی 106 انواع، جل تھیلیوں کی 138 انواع اور تتلیوں کی 6000 انواع ان کے علاوہ ہیں۔ جزائر گالاپاگوز جزائر جنگلی حیات کی رہائش کے لیے مشہور ہیں جہاں مشہور ماہر حیاتیات چارلس ڈارون نے جنگلی حیات پر تحقیق کی اور مشہور نظریہ ارتقا پیش کیا۔

بشری شماریاتترميم

ایکواڈور میں مختلف نسلوں کے لوگ بستے ہیں جن میں سے سب سے بڑا گروہ میستیزوس ہے جو ہسپانوی کالونی سازوں اور مقامی انڈین قبائل کے باہمی ملاپ سے بنا ہے اور یہ گروہ ایکواڈور کی کل آبادی کا 62 فیصد بناتا ہے۔ امریکی انڈین موجودہ آبادی کا 25 فیصد ہیں۔ ان کے علاوہ یورپ کے دوسرے علاقوں سے جانے والے مہاجر بھی رہتے ہیں جو کل آبادی کا لگ بھگ 10 فیصد ہیں۔

تارکین وطنترميم

ایکواڈور کی تارکین وطن آبادی کا بڑا حصہ ہسپانیہ، برطانیہ، اٹلی، ریاست ہاۓ متحدہ امریکا، کینیڈا، چلی، وینزویلا، میکسیکو اور جاپان میں رہتا ہے۔ اندازہ کے مطابق 1999ء کے اقتصادی بحران کے دوران لگ بھگ سات لاکھ ایکواڈوریائی باشندہ ہجرت کرنے پر مجبور ہوئے۔ تارکین وطن ایکواڈوریایئوں کی تعداد کا تخمینہ پچیس لاکھ ہے۔

تعلیمترميم

سرکاری اداروں میں تعلیم مفت ہے اور 5 سال سے 14 سال تک کی عمر میں سکول جانا ضروری ہے۔ تاہم سکولوں کی تعداد ضرورت سے کہیں کم ہے اور جماعتوں میں طلبہ کی تعداد بہت زیادہ رہتی ہے۔ جس کی وجہ سے کئی لوگ پیسے ادا کر کے مہنگے نجی اداروں میں اپنے بچوں کو تعلیم دلوانا پسند کرتے ہیں۔ وزارت تعلیم کے اعدادوشمار میں 76 فیصد بچے ابتدائی تعلیم کے 6 سال مکمل کر پاتے ہیں اور دیہاتی علاقوں سے صرف 10 فیصد بچے ہائی سکول تک پہنچ پاتے ہیں۔

اعلی تعلیم کے لیے ایکواڈور میں کل 61 جامعات یا یونیورسٹیاں ہیں، جن میں سے زیادہ تر گریجویٹ ڈگری تک تعلیم دیتی ہیں۔

اہم شہرترميم

2001ء کی مردم شماری کے مطابق 11 بڑے آباد ترین شہر درج ذیل ہیں۔

مذہبترميم

قریبا 69 فیصد ایکواڈوریائی کاتھولک مسیحی ہیں۔ دیہی علاقوں میں قدیم مذہبی عقائد اور مسیحیت کا مغلوبہ ہے۔ مسلمان آبادی انتہائی کم ہے، جو شاید سینکڑوں میں ہو۔ یہودی مذہب ماننے والوں کی تعداد ہزاروں میں سمجھی جاتی ہے جو جرمنی یا اٹلی سے ہجرت کر کے ایکوڈور میں آباد ہوئے ہیں۔

تہذیب و تمدنترميم

یورپی مہاجرین کی آبادکاری اور مقامی لوگوں سے ان کے میل ملاپ نے مذہب کے ساتھ تہذیب و تمدن پر بھی گہرے اثرات مرتب کیے ہیں اور تہذیب یورپی اور قدیم مقامی انڈین تہذیب کا آمیزہ ہے جس میں افریقہ سے لائے گئے غلاموں کی وجہ سے افریقی اثرات بھی پائے جاتے ہیں۔ لیکن دیہی علاقوں میں خاص کر ایمازون کے جنگلات میں آباد بستیاں اب بھی اپنے قدیم ریڈ انڈین طرز زندگی اور تہذیب پر عمل پیرا ہیں۔

لباس میں پانامہ طرز کی مشہور ٹوپی ایکواڈور سے ہی نکلی ہے جسے وہاں سومبریرو دے پاحا توکئیلہ یا جیپیجاپا کہتے ہیں اور ایکواڈور میں صوبہ مانابی میں بنائی جاتی ہیں۔

اہم شخصیاتترميم

فہرست متعلقہ مضامین ایکواڈورترميم

  1.     "صفحہ ایکواڈور في خريطة الشارع المفتوحة"۔ OpenStreetMap۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 اگست 2019۔
  2. باب: 2
  3. ناشر: عالمی بنک
  4. ^ ا ب پ ت ٹ ث ج چ ح خ د ڈ ذ ر​ ڑ​ ز ژ س http://data.uis.unesco.org/Index.aspx?DataSetCode=DEMO_DS
  5. https://www.interpol.int/Member-countries/World — اخذ شدہ بتاریخ: 7 دسمبر 2017 — ناشر: انٹرپول
  6. https://www.opcw.org/about-opcw/member-states/ — اخذ شدہ بتاریخ: 7 دسمبر 2017 — ناشر: تنظیم برائے ممانعت کیمیائی ہتھیار
  7. https://www.iho.int/srv1/index.php?option=com_wrapper&view=wrapper&Itemid=452&lang=en — اخذ شدہ بتاریخ: 8 دسمبر 2017 — ناشر: بین الاقوامی آب نگاری تنظیم
  8. http://www.unesco.org/eri/cp/ListeMS_Indicators.asp
  9. http://www.upu.int/en/the-upu/member-countries.html — اخذ شدہ بتاریخ: 4 مئی 2019
  10. https://www.itu.int/online/mm/scripts/gensel8 — اخذ شدہ بتاریخ: 4 مئی 2019
  11. https://data.worldbank.org/indicator/NY.GDP.MKTP.CD?locations=EC — اخذ شدہ بتاریخ: 21 اکتوبر 2018 — ناشر: عالمی بنک
  12. https://data.worldbank.org/indicator/NY.GDP.PCAP.PP.CD — اخذ شدہ بتاریخ: 11 جون 2019 — ناشر: عالمی بنک
  13. ^ ا ب پ ت ٹ ث ج چ ح خ د ڈ ذ ر​ ڑ​ ز ژ س ش ص ض ط ظ ع غ ف ق ک گ ل​ م​ ن و ہ ھ ی ے اا اب ات اث اج اح اخ اد اذ ار از اس اش اص اض اط اظ اع اغ اف اق https://data.worldbank.org/indicator/NY.GDP.PCAP.CD — اخذ شدہ بتاریخ: 27 مئی 2019 — ناشر: عالمی بنک
  14. ^ ا ب پ ت ٹ ث ج چ ح خ د ڈ ذ ر​ ڑ​ ز ژ س ش ص ض ط ظ ع غ ف ق ک گ ل​ م​ ن و ہ ھ ی ے اا اب ات اث اج اح اخ اد اذ ار از اس اش اص اض اط اظ اع اغ اف https://data.worldbank.org/indicator/FI.RES.TOTL.CD — اخذ شدہ بتاریخ: 1 مئی 2019 — ناشر: عالمی بنک
  15. https://data.worldbank.org/indicator/FI.RES.TOTL.CD — اخذ شدہ بتاریخ: 1 مئی 2019 — ناشر: عالمی بنک
  16. http://hdr.undp.org/en/countries/profiles/ECU
  17. http://data.worldbank.org/indicator/SL.UEM.TOTL.ZS
  18. International Numbering Resources Database — اخذ شدہ بتاریخ: 3 جولا‎ئی 2016 — مدیر: عالمی ٹیلی مواصلاتی اتحاد
  19. http://chartsbin.com/view/edr