نشانِ حیدر پاکستان کا سب سے بڑا فوجی اعزاز ہے۔جو دوران جنگ دشمن سے قبضے میں لیے جانے والے اسلحے کو پگھلا کر تیار کیا جاتا اور اس میں 20 فیصد سونے کا بھی استعمال کیا جاتا ہے۔اور نشانِ حیدر اب تک پاک فوج کے دس جوانوں کو مل چکا ہے۔ پاکستان کی فضائیہ کی تاریخ اور پاکستان کی بری فوج کے مطابق نشانِ حیدر حضرت علی کے نام پر دیا جاتا ہے کیونکہ ان کا لقب حیدر کرار تھا اور ان کی بہادری ضرب المثل ہے۔ یہ نشان صرف ان لوگوں کو دیا جاتا ہے، جو وطن کے لیے انتہائی بہادری کا مظاہرہ کرتے ہوئے شہید ہو چکے ہوں۔ ان میں میجر طفیل نے سب سے بڑی عمر یعنی 44 سال میں شہادت پانے کے بعد نشان حیدر حاصل کیا، باقی فوجی جنہوں نے نشان حیدر حاصل کیا ان کی عمریں 40 سال سے بھی کم تھیں جبکہ سب سے کم عمر نشان حیدر پانے والے راشد منہاس تھے جنہوں نے اپنی تربیت میں 20 سال 6 ماہ کی عمر میں شہادت پر نشان حیدر اپنے نام کیا۔ آج تک پاکستان میں صرف دس افراد کو نشانِ حیدر دیا گیا ہے جن کے نام درج ذیل ہیں۔

ن‍شان حیدر
Nishan-i-Haider-PAK.jpg
عطا کردہ صدر پاکستان in the name of the حکومت پاکستان
قسمپاکستان military medal with service ribbon
(Decoration)
اہلیتMilitary personnel only
عطا برائےActs of greatest heroism or of the most conspicuous courage in circumstances of extreme danger, and bravery of the highest order, or devotion to the country in the presence of the enemy on land, at sea or in the air.[1]
صورتحالاب بھی دیا جاتا ہے
عرفیتNH
شماریات
تاسیس16 مارچ 1957 [2] (applied retrospectively from 1948 onwards)
پہلی بار16 مارچ 1957 – پاک بھارت جنگ 1947، کیپٹن راجہ محمد سرور، پاکستانی فوج
آخری بار15 جولائی 1999 – کارگل جنگ، حولدار لالک جان، پاکستانی فوج
کل عطا شدہ10
بعد از مرگ
اعزازات
10
دیگر اعزاز
اعلیٰکوئی نہیں
مساویہلال کشمیر
ادنیہلال جرأت
ستارہ جرات
تمغۂ جرات


وصول کنندگانترميم

وصول کنندگان
شمار نام رجمنٹ عہدہ لڑائی شہادت کی تاریخ
1 راجہ محمد سرور 2/1 پنجاب رجمنٹ، پاک فوج کیپٹن پاک بھارت جنگ 1947 27 جولائی 1948
2 میجر طفیل محمد سولہویں پنجاب رجمنٹ مشرقی پاکستان رائفل، پاک فوج میجر پاک بھارت جنگ 1965ء 7 اگست 1958
3 راجہ عزیز بھٹی 17 پنجاب رجمنٹ، پاک فوج میجر پاک بھارت جنگ 1965ء 10 ستمبر 1965
4 راشد منہاس نمبر۔ 2 فائٹر کنورژن یونٹ، پاک فضائیہ پائلٹ آفیسر پاک بھارت جنگ 1971ء 20 اگست 1971
5 میجر شبیر شریف 6 فرنٹیئر فورس رجمنٹ، پاک فوج میجر پاک بھارت جنگ 1971ء 6 دسمبر 1971
6 سوار محمد حسین 20 لانسرز (آرمرڈ کور)، پاک فوج سوار پاک بھارت جنگ 1971ء 10 دسمبر 1971
7 میجر محمد اکرم 4 فرنٹئیر فورس رجمنٹ، پاک فوج میجر پاک بھارت جنگ 1971ء 5 دسمبر 1971
8 لانس نائیک محمد محفوظ 15 پنجاب رجمنٹ، پاک فوج لانس نائیک پاک بھارت جنگ 1971ء 17 دسمبر 1971
9 کرنل شیر خان سندھ رجمنٹ/12 ناردرن لائٹ انفنٹری، پاک فوج کیپٹن کارگل جنگ 7 جولائی 1999
10 حوالدار لالک جان 12 ناردرن لائٹ انفنٹری، پاک فوج حوالدار کارگل جنگ 7 جولائی 1999

مزید دیکھیےترميم

حوالہ جاتترميم

  1. "Honours and Awards". 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  2. "ODM of پاکستان: Order of the Lion". 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 

بیرونی روابطترميم