کشمیری زبان

kashmiri language is most literature rich language.

کشمیری زبان (कॉशुर / کٲشُر) (Kashmiri language) بھارت اور پاکستان کی ایک اہم زبان ہے۔ كشے تروستار 10،000 مربع میل؛ کشمیر کی وتستا وادی کے علاوہ جواب میں ذوجيلا اور برذل تک اور جنوب میں بانهال سے پرے کشتواڑ (جموں صوبے) کی مشترکہ اپتيكا تک۔ کشمیری، جموں صوبے کے بانهال، رامبن اور بھدرواه میں بھی بولی جاتی ہے۔ کل ملا کر بولنے والو کی تعداد 15 لاکھ سے کچھ اوپر ہے۔ وزیر اپبھاشا کشتواڑ کی "كشتواڈي" ہے۔

کشمیری
Kashmiri
कॉशुर, كأشُر
Koshur.png
تلفظ[kə:ʃur]
مقامی جموں و آزاد کشمیر[1]
علاقہوادی کشمیر، وادی چناب
نسلیتکشمیری
مقامی متکلمین
6.8 ملین (2011 census)e18
لہجے
  • Kashtawari (standard)
  • Poguli
خط نستعلیق (contemporary),[2]
دیوناگری (contemporary),[2]
Sharada script (ancient/liturgical)[2]
رسمی حیثیت
دفتری زبان
Flag of India.svg بھارت[3]
زبان رموز
آیزو 639-1ks
آیزو 639-2kas
آیزو 639-3kas
گلوٹولاگkash1277[4]
اس مضمون میں بین الاقوامی اصواتی ابجدیہ کی صوتی علامات شامل ہیں۔ موزوں معاونت کے بغیر آپ کو یونیکوڈ حروف کی بجائے سوالیہ نشان، خانے یا دیگر نشانات نظر آسکتے ہیں۔ بین الاقوامی اصواتی ابجدیہ کی علامات پر ایک تعارفی ہدایت کے لیے معاونت:با ابجدیہ ملاحظہ فرمائیں۔
Word Koshur in Sharada, Devanagari, Perso-Arab Scripts.png

بمطابق 2011 آبادی شماری جموں و کشمیر کی کل آبادی 12541302 ہیں جس میں کم و بیش 9567000 کشمیری زبان بولنے والے افراد ہیں کشمیری زبان بولنے والے افراد میں اکثریت مسلمانوں کی ہے کشمیری پنڈت اور سکھ قوم کے لوگ بھی کشمیری بولتے ہیں مگر اصل میں یہ زبان کشمیری مسلمانوں سے ترویج پا رہی ہیں کشمیری زبان کی تاریخ 5000 سال پرانی تہذیب کا احاطہ کیے ہوئے ہیں جس کے علمی ثبوت 2000 سال پرانے ہیں کشمیر میں ہندو ,سکھ, افغانی ,مغلیائی ,ڈوگری اور خاصکر ایرانی زبان کے الفاظ وقت کی گردش کے ساتھ شامل ہوتے رہیں اور رسم الخط بھی تبدیل ہوتا رہا موجودہ دور میں کشمیری زبان کا رسم الخط فارسی زبان کے مطابق ہیں 1947ڈوگرا شاہی کے زوال کے ساتھ ہی کشمیری زبان نے اپنے پیر جمانہ شروع کیے اور کئی معتبر مصنف ادیب اور شاعر منظر عام پر آئے تقسیم ہند کے بعد جو سماجی تبدیلیاں برصغیر میں رونما ہوئیں اس کی لپیٹ میں کشمیری زبان بھی آگئی اور تا دم ایں کشمیری زبان ریاست جموں و کشمیر کی سرکاری زبان نہ بن پائی کشمیر کے دونوں حصوں یعنی آزاد کشمیر جو پاکستان کے زیر قبضہ ہے اور کشمیر جو ہندو ستان کے زیر قبضہ ہے میں کشمیری زبان کو بہت زیادہ نقصان اٹھانا پڑا ۔۔۔۔۔۔۔۔

مشاہیر ادبترميم

حوالہ جاتترميم

  1. ^ ا ب پ Sociolinguistics. Mouton de Gruyter. 07 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 30 اگست 2009. 
  2. Kashmiri: A language of Pakistan |publisher = Ethnologue |accessdate = 2007-06-02}}
  3. ہیمر اسٹورم، ہرالڈ؛ فورکل، رابرٹ؛ ہاسپلمتھ، مارٹن، ویکی نویس (2017ء). "Kashmiri". گلوٹولاگ 3.0. یئنا، جرمنی: میکس پلانک انسٹی ٹیوٹ فار دی سائنس آف ہیومین ہسٹری. 
  یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کر کے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔