{{Infobox Officeholder |honorific-prefix = |name = ملا محمد عمر |image = Mohammedomar.jpg |image_size = 20ص0px |order = امیرالمؤمنین |primeminis عter = محمد ربانی
عبدالکبیر (قائم مقام) |term_start = 27 ستمبر 1996ء |term_end = 13 نومبر 2001ء |predecessor = برہان الدین ربانی (صدر) |successor = برہان الدین ربانی (صدر) |birth_date = ت 1960 |birth_place = نودیہہ، افغانستان |death_date = 23 Aprاپریلil 2013 (شام کے وقت)[1][2]> |death_place = Taizeni village

وفاتترميم

29 جولائی 2015 کو افغان مخابرات نے یہ خبر دی تھی کہ ملا محمد عمر کا کراچی میں انتقال ہو گیا ہے، کچھ طالبان نے اس بات کی تردید کردی تھی کیونکہ مری میں افغان طالبان اور افغان حکومت کے درمیان مذاکرات ہو رہے تھے، لیکن جب اس خبر نے زور پکڑ لیا تو افغان طالبان نے 30 جولائی 2015 کو اس بات کی تائید کردی کہ ملا عمر کا صوبہ ہلمند میں انتقال ہوا تھا طالبان کے مطابق اُن کی وفات دل کے دورے کے باعث ہوئی۔ وفات کے وقت اُن کے ساتھ ان کے اہم کمانڈر عبد الجبار تھے۔ کمانڈر عبد الجبار نے ہی طالبان کے پانچ اہم کمانڈروں کو ملا عمر کی موت کی اطلاع دی۔ طالبان نے یہ بھی بتایا کہ نائب امیر ملا اختر منصور افغان طالبان کے نئے امیر ہوں گے۔[3]

حوالہ جاتترميم

  1. Nikhil Kumar (29 July 2015). "Mullah Omar Taliban Death". Time. 26 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 29 جولا‎ئی 2015. 
  2. افضان طالبان کی ملا عمر کی وفات کی تصدیق

سانچہ:افغانستان صدر