قومی شاہراہ 55 یا این-55، جسے عام طور پر انڈس ہائی وے کہا جاتا ہے، پاکستان کے صوبہ سندھ، پنجاب اور خیبر پختونخواکو منسلک کرنے والی ایک اہم شاہراہ ہے۔ اسے دریائے سندھ کے مشرقی کناروں پر واقع این-5 پر دباؤ کو کم کرنے اور کراچی اور پشاور کے درمیان ایک مختصر اور متبادل راستہ اختیار کرنے کے لیے بنایا گیا تھا۔ اس شاہراہ کی تجویز 1980ء میں دی گئی اور کام کا آغاز 1981ء میں کراچی سے ہوا اور 7 سال کے بعد پشاور میں مکمل ہوئی۔

Pakistan N-55.svg
این-55
Indus Highway
قومی شاہراہ 55
Route information
Maintained by نیشنل ہائی وے اتھارٹی
Length1,264 کلومیٹر (785 میل)
Existed1980–present
Major junctions
شمالی endکراچی
Major intersectionsاین-5
این-65
این-70
این-50
این-80
جنوبی endپشاور
لوا خطا package.lua میں 80 سطر پر: module 'Module:Road data/size' not found۔
Highway system
پاکستان میں قومی شاہراہوں کا جال، این 55 بھی واضح ہے

پاکستان کی سب سے بڑی سرنگ کوہاٹ سرنگ اسی سڑک پر واقع ہے، جس پر کام کا آغاز 1999ء میں کیا گیا اور تکمیل جون 2003ء میں ہوئی۔ یہ پشاور اور کوہاٹ کے درمیان راستے کو مختصر بناتی ہے اور درۂ کوہاٹ والے راستے کے مقابلے میں 40 منٹ کم وقت میں دونوں شہروں کو پہنچا جا سکتا ہے۔

اس شاہراہ کی کل لمبائی 1250 کلومیٹر ہے۔ شاہراہ کا آغاز کراچی اور حیدرآباد کے درمیان سے ہوتا ہے اور گاڑیاں بجائے حیدرآباد شہر کا رخ کرنے کے دریائے سندھ عبور کرنے سے پہلے ہی کوٹری کا رخ کرتی ہے۔ بعد ازاں یہ دریائے سندھ کے مشرقی کناروں کے ساتھ ساتھ دادو اور لاڑکانہ سے ہوتی ہوئی شکارپور سے گزرتی ہے اور پھر پنجاب میں داخل ہوجاتی ہے جہاں ڈیرہ غازی خان اور میانوالی سے گزرنے کے بعد صوبہ خیبر پختونخوا میں ڈیرہ اسماعیل خان پہنچتی ہے اور اس کے بعد لکی مروت، کرک ، کوہاٹ اور درہ آدم خیل سے ہوتی ہوئی پشاور میں اختتام پزیر ہوتی ہے۔

متعلقہ مضامینترميم