منگول

(مغول سے رجوع مکرر)

“ مُغل “اور “ مغُول “لفظ منگول کی بدلی ہوئی شکل ہے منگولوں کے عرب مملک پر حملوں اور قبضہ کے بعد لفظ “منگول” جب عربی سے متارف ہوا تو یہ لفظ “مغُول ” کی صورت میں تبدیل ہوگیا کیونکہ عربی زبان کے حروف تہجی میں “گ” نہیں ہے اس طرح “گ”کی جگہ”غ ” نے لے لی مغولان جمع کا لفظ ہے اس کا واحد مُغل یا مغول ہے۔ یورپین مورخین اور محقیقین انہیں تاتاری بھی لکھتے اور کہتے ہیں اس وجہ سے عرب ریاستوں میں اور ساتھ ساتھ ایران ،عراق، افغانستان کی ریاستوں میں مغول بولا جانے لگا اور وقت گُزرنے کے ساتھ ساتھ لب و لہجہ کی تبدیلی کی وجہ سے ہندوستان میں مختصر ہوکر مُغل رہ گیا اور یہ ایک ہی قوم کے مختلف نام ہیں۔ہندوستان پاکستان میں انکو اب مغل کہا جاتا ہے۔

منگول
Mongols
Монголчууд
Mongolchuud
ᠮᠣᠩᠭᠣᠯᠴᠤᠳ
کل آبادی
ت 10–11 ملین (2016)
گنجان آبادی والے علاقے
Flag of the People's Republic of China.svg چین (بنیادی طور پر کے خود مختار خطے اندرونی منگولیا میں)6,146,730 (2015)[1]
Flag of Mongolia.svg منگولیا     3,201,377[2]
Flag of Russia.svg روس822,763[3]
Flag of South Korea.svg جنوبی کوریا41,500[4]
Flag of the United States.svg ریاستہائے متحدہ18,000–20,500[5]
Flag of Kyrgyzstan.svg کرغیزستان10,000[6]
Flag of the Czech Republic.svg چیک جمہوریہ7,895[7]
Flag of Japan.svg جاپان7,340[8]
Flag of Canada.svg کینیڈا6,311[9]
Flag of Germany.svg جرمنی4,056[8]
Flag of the United Kingdom.svg مملکت متحدہ3,331[8]
Flag of France.svg فرانس2,459[8]
Flag of Turkey.svg ترکی2,143[8]
Flag of Kazakhstan.svg قازقستان2,723[8]
Flag of Austria.svg آسٹریا2,007[10]
Flag of Malaysia.svg ملائیشیا1,530[8]
زبانیں
منگولی زبان
مذہب
بنیادی طور پر تبتی بدھ مت، شمن پرستی کا پس منظر۔[11][12][13] اقلیت اہل سنت، مشرقی راسخ الاعتقاد کلیسیا، تاؤ مت، بون (مذہب) اور پروٹسٹنٹ مسیحیت۔
متعلقہ نسلی گروہ
Proto-Mongols، Khitan people

موجودہ منگولیا، روس اور چین اور خصوصاً وسط ایشیائی سطح مرتفع صحرائے گوبی کے شمال اور سائبیریا کے جنوب سے تعلق رکھنے والی ایک قوم ہے۔اس وقت” منگولوں“ یا مغلوں کی کافی ساری تعداد دنیا میں پھیلی ہوئی ہے۔

تاریخ عالم میں مغلوں کی اولین مشہور شخصیت جوتومنہ خان کی پانچویں پُشت میں سے تھا چنگیز خان (پیدائش 1160ء، وفات: 1227ء) جس نے چین کے مشرقی ساحلوں سے لے کر یورپ کے وسط تک ایک عظیم سلطنت قائم کی۔ یہ تاریخ عالم کی سب سے بڑی سلطنتوں میں سے ایک تھی جو مغرب میں ہنگری، شمال میں روس، جنوب میں انڈونیشیا اور وسط کے بیشتر علاقوں مثلا افغانستان، ترکی، ازبکستان، گرجستان، آرمینیا، روس، ایران، پاکستان، چین اور بیشتر مشرق وسطی پر مشتمل تھی۔

تاریخ عالم کی دوسری بڑی منگول سلطنت کی بنیاد تومنہ خان کی نویں پُشت میں امیر تیمور گورگانی(پیدائش،1336ء وفات،1405ء) نے رکھی جسے تیموری سلطنت بھی کہتے ہیں۔

تیسری مغل سلطنت کی بُنیاد تومنہ خان کی پندرہویں اور امیر تیمور گورگانی کی چھٹی پُشت میں مرزا ظہیرالدین بابر (پیدائش، 1483ء وفات، 1530ء) نے ہندوستان میں ابراہیم لودھی کوپانی پت کے میدان میں شکست دے کر 1526میں رکھی جو تقریباً 331 سال قائم رہی۔اس کے بعد چند مخصوص تبدیلیاں ہوئی{نامکمل}} آئیں انکا نقطہ آغاز دیکھتے ہیں

مزید دیکھیےترميم

نگار خانہترميم

  1. Demographics of China
  2. "Монголын үндэсний статистикийн хороо". National Statistical Office of Mongolia. اخذ شدہ بتاریخ 14 نومبر 2013. 
  3. 2,656 Mongols proper, 461,389 Buryats، 183,372 Kalmyks (Russian Census (2010))
  4. "'Korean Dream' fills Korean classrooms in Mongolia"، The Chosun Ilbo، 2008-04-24، مورخہ ستمبر 23, 2008 کو اصل سے آرکائیو شدہ، اخذ شدہ بتاریخ 2009-02-06  Check date values in: |archive-date= (معاونت)
  5. Bahrampour، Tara (2006-07-03). "Mongolians Meld Old, New In Making Arlington Home". The Washington Post. اخذ شدہ بتاریخ 05 ستمبر 2007. 
  6. President of Mongoli Received the Kalmyk Citizens of the Kyrgyz. 2012 آرکائیو شدہ 2016-12-06 بذریعہ وے بیک مشین
  7. https://www.czso.cz/documents/11292/27320905/c01R07_2017.pdf/24ad2ce0-e1ae-4c91-b50b-ada59c346af6?version=1.0
  8. ^ ا ب پ ت ٹ ث ج "Mongolia National Census" (PDF) (بزبان المنغولية). National Statistical Office of Mongolia. 2010. 15 ستمبر 2011 میں اصل (PDF) سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 29 جنوری 2017. 
  9. NHS Profile, Canada, 2011
  10. "Bevölkerung nach Staatsangehörigkeit und Geburtsland" [Population by citizenship and country of birth] (بزبان الألمانية). Statistik Austria. 3 جولائی 2014. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2014. 
  11. National Bureau of Statistics of the People's Republic of China (اپریل 2012). Tabulation of the 2010 Population Census of the People's Republic of China. China Statistics Press. ISBN 978-7-5037-6507-0. اخذ شدہ بتاریخ 19 فروری 2013. 
  12. China.org.cn – The Mongolian ethnic minority
  13. China.org.cn – The Mongolian Ethnic Group