مرکزی مینیو کھولیں

اہل حدیث (مکتبہ فکر)

(اہل حدیث سے رجوع مکرر)
اھل الحدیث سے مغالطہ نہ کھائیں۔

اہل حدیث یا اہل حدیث ایک دینی تحریک ہے جو شمالی ہند میں سید نذیر احمد دہلوی اور صدیق حسن خان کی تعلیمات سے انیسویں صدی کے وسط میں وجود میں آئی[1][2][3]۔ اہل حدیث کا دعویٰ ہے کہ وہ اھل الحدیث کی فکر کے حامل ہیں[4]۔ اہل حدیث قرآن، سنت اور حدیث کو ہی اسلامی تعلیمات کے ماخذ مانتے ہیں اور ابتدائی زمانے کے بعد اسلام میں متعارف ہونے والی ہر چیز کی مخالفت کرتے ہیں اور تقلید اور اجتہاد کا رد کرتے ہیں۔ یہ تحریک سعودی عرب کی وہابی تحریک ہی کے جیسے ہے[5]۔ لیکن یہ تحریک خود وہابی تحریک سے الگ ہونے کا دعویٰ کرتی ہے۔ بعض کے نزدیک ان کے اور عرب سلفی تحریک کے درمیان قابل ذکر فرق ہے[6][7][8]۔

مزید دیکھیےترميم

حوالہ جاتترميم

  1. Daniel W. Brown, Rethinking Tradition in Modern Islamic Thought: Vol. 5 of Cambridge Middle East Studies, pg. 27. کیمبرج: Cambridge University Press, 1996. ISBN 9780521653947
  2. M. Naeem Qureshi, Pan-Islam in British Indian Politics, pg. 458. Leiden: Brill Publishers, 1999. ISBN 9004113711
  3. "Ahl-i Hadith"۔ The Oxford Dictionary of Islam۔ Oxford: Oxford University Press۔ 2014۔ اصل سے جمع شدہ 25 دسمبر 2018 کو۔ (ضرورت رکنیت)۔ 
  4. Sh. Inayatullah (2012)۔ "Ahl-i Ḥadīt̲h̲"۔ میں P. Bearman, Th. Bianquis, C.E. Bosworth, E. van Donzel, W.P. Heinrichs۔ Encyclopaedia of Islam (اشاعت Second)۔ Brill۔ اصل سے جمع شدہ 25 دسمبر 2018 کو۔ (ضرورت رکنیت)۔ 
  5. Rabasa, Angel M. The Muslim World After 9/11 By Angel M. Rabasa, p. 275
  6. Dilip Hiro, Apocalyptic Realm: Jihadists in South Asia, pg. 15. نیو ہیون، کنیکٹیکٹ: Yale University Press, 2012. ISBN 9780300173789
  7. Muneer Goolam Fareed, Legal reform in the Muslim world, pg. 172. این آربر، مشی گن: University of Michigan Press, 1994.
  8. Daniel W. Brown, Rethinking Tradition in Modern Islamic Thought: Vol. 5 of Cambridge Middle East Studies, pg. 32. کیمبرج: Cambridge University Press, 1996. ISBN 9780521653947