مظفرگڑھ پاکستان کے صوبہ پنجاب کا شہر ہے۔ اس کی بنیاد نواب مظفر خان نے 1794ء میں رکھی۔ مظفرگڑھ ضلع بھی ہے جس کا صدر شہر مظفرگڑھ ہے۔ مقامی زبان سرائیکی ہے-ضلع کی چار تحصيليں ھيں جن ميں مظفرگڑھ، علی پور،جتوئی اور کوٹ ادو شامل ھيں- ضلع کی زرعی پیداوار میں آم،کپاس،گندم، چنا،چاول،جیوٹ اورکماد شامل ہیں۔ دو دریاءوں کے سنگم پر واقع اس ضلع کی زمين بہت ذرخيز ہے ضلع ميں تین شوگر ملز لگائی جا چکي ہیں دیگر صنعتوں میں ٹیکسٹايل اور جیوٹ انڈسٹری کو کافی فروغ حاصل ہے اس ضلع سے تعلق رکھنے والے بہت سے سیاست دانوں نے شہرت پائی، جن میں نوابزادہ نصر اللہ خان، غلام مصطفی کھر، حنا ربانی کھر حماد نواز خان ٹیپو، قدوس نواز خان محمد خان، سردار عبد القیوم خان، نصرللہ خان جتوئ، مخدوم سيد عبد للہ شاہ بخارى، مخدوم سيد ہارون سلطان بخارى اور جمشید احمد خان دستی شامل ہیں۔

مظفر گڑھ
مظفر گڑھ
انتظامی تقسیم
ملک Flag of Pakistan.svg پاکستان  ویکی ڈیٹا پر (P17) کی خاصیت میں تبدیلی کریں[1]
دار الحکومت برائے
تقسیم اعلیٰ ضلع مظفر گڑھ  ویکی ڈیٹا پر (P131) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جغرافیائی خصوصیات
متناسقات 30°12′00″N 71°25′00″E / 30.20000°N 71.41667°E / 30.20000; 71.41667
بلندی 122 میٹر  ویکی ڈیٹا پر (P2044) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
آبادی
کل آبادی 163268 (2017)  ویکی ڈیٹا پر (P1082) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مزید معلومات
فون کوڈ 066
قابل ذکر
باضابطہ ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ  ویکی ڈیٹا پر (P856) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جیو رمز 1169605  ویکی ڈیٹا پر (P1566) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

تاریخترميم

ملتان سے دس میل دور مظفر آباد کا قصبہ آباد کیا مزید دس میل آگے دریائے چناب کے دائیں کنارے ایک دکان تھی جہاں سے مسافر خوردونوش کی اشیاء لیتے تھے خاص کر وہاں کی کھجور مشہور تھی اور رات کو وہاں قیام کرتے تھے مالک کا نام موسیٰ تھا اسلئے دکان کا نام موسن دی ہٹی تھی۔ یہ ہٹی (دکان) چناب سے ڈیرہ غازیخان جاتے ہوئے راستہ میں تھی۔ نواب محمد مظفر خاں نے اس ہٹی سے نصف میل کے فاصلہ پر 1798ء میں قلعہ تعمیر کروایا پھر شہر آباد ہو گیا اس طرح قلعہ اور شہر مظفر گڑھ کی بنیاد رکھی گئی

[4]

خط زمانی (ٹائم لائن)ترميم

  • مجاہد اعظم نواب مظفر خان شہید حاکم ملتان نے 1794ء میں مظفرگڑھ کی بنیاد رکھی۔
  • 1796ء عیسوی میں اسے صدر مقام کی حثییت دی گئی ۔
  • شہر مظفر گڑھ 1818عیسوی تا 1848عیسوی تک سکھ عملداری میں رہا۔ اس دوران مظفرگڑھ کی بجائے خان گڑھ کو صدر مقام بنایا گیا۔
  • 1849ء عیسوی میں یہ شہر انگریزوں کے زیر تسلط آ گیا۔
  • 1869ء عیسوی میں مظفرگڑھ کو ٹائون کمیٹی کا درجہ دیا گیا۔

حوالہ جاتترميم

  1.    "صفحہ مظفر گڑھ في GeoNames ID". GeoNames ID. اخذ شدہ بتاریخ 21 نومبر 2021ء. 
  2. "آرکائیو کاپی". 14 اپریل 2006 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 20 اگست 2012. 
  3. Area reference آرکائیو شدہ [Date missing] بذریعہ 203.215.180.58 [Error: unknown archive URL]
    Density reference
  4. تاریخ ملتان صفحہ 207 ڈاکٹر عاشق محمد خان درانی