فریڈرک نطشے یا نِیتشے[7] (Friedrich Nietzsche) (1900-1844) انیسویں صدی کا جرمن فلسفی تھا۔ اس کے خیال میں طاقت ہی انسانی معاملات میں فیصلہ کن عنصر ہے۔ اس نے فوق البشر (Superman) کے تصور کو آگے بڑھایا۔

نطشے
(جرمن میں: Friedrich Nietzsche ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Nietzsche187a.jpg
Nietzsche in Basel, c.  1875

معلومات شخصیت
پیدائشی نام (جرمن میں: Friedrich Wilhelm Nietzsche ویکی ڈیٹا پر (P1477) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیدائش 15 اکتوبر 1844(1844-10-15)
وفات 25 اگست 1900(1900-80-25) (عمر  55 سال)
وایمار[1][2]  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
طرز وفات طبعی موت  ویکی ڈیٹا پر (P1196) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
قومیت German
عملی زندگی
مادر علمی لائپزش یونیورسٹی (1865–1879)  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تعلیمی اسناد ڈاکٹریٹ[3]  ویکی ڈیٹا پر (P512) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ فلسفی[4]،  ماہرِ لسانیات،  شاعر،  مصنف[4]،  نغمہ ساز،  ماہر تعلیم،  استاد جامعہ،  کلاسیکی عالم،  مصنف  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان جرمن[5]  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شعبۂ عمل فلسفہ،  جمالیات،  اخلاقیات،  نفسیات،  علم الوجود،  شاعری،  فلسفہ تاریخ  ویکی ڈیٹا پر (P101) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ملازمت جامعہ بازیل  ویکی ڈیٹا پر (P108) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کارہائے نمایاں زرتشت نے کہا  ویکی ڈیٹا پر (P800) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مؤثر شوپنہائر،  ہیراکلیطس،  ڈارون،  بارامانیاس،  پاسکل،  نکولو مکیاویلی،  رچرڈ واگنر،  ایڈ گرایلن پو،  پروتاگورس،  سپینوزا،  زرتشت،  ڈبلیو بی . یٹس،  دی مقراطیس،  آسوالڈ اسپینگلر،  گوئٹے،  جین جیکس روسو،  ولیم شیکسپیئر،  اسٹیفن زویگ،  ایڈم میکیوچز،  امپی دوکلیز،  افلاطون،  ارسطو،  گوٹفریڈ ویلہم لائبنیز،  والٹیئر،  سقراط،  گورگ ویلہم فریدریچ ہیگل،  امانوئل کانٹ،  فیودر دوستوئیفسکی،  دیانوسس،  سکندر اعظم،  ہومر،  جولیس سیزر،  ایس کلس،  منو  ویکی ڈیٹا پر (P737) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عسکری خدمات
لڑائیاں اور جنگیں فرانسیسی جرمن جنگ 1870-71  ویکی ڈیٹا پر (P607) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دستخط
Friedrich Nietzsche Signature.svg
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحات[6]  ویکی ڈیٹا پر (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

نطشے کی تشکیلترميم

نطشے 15 اکتوبر 1844ء کو روکن پرشیا مں پیدا ہوا۔ پرشیا فوجی اور سیاسی لحاظ ایک طاقتور ریاست بنتا جا رہا تھا۔ آسٹریا کو وہ جرمن معاملات سے علاحدہ کر چکا تھا۔ 1871ء میں پرشیا نے نپولین کی فتوحات کے نشے میں چور فرانس کو بد ترین شکست دی اور ورسائی پیرس کے مقام پر تمام چھوٹی چھوٹی جرمن ریاستوں کو متحد کر کے جرمن سلطنت کی بنیاد رکھی۔ نطشے اس ابھرتی ہوئی طاقتور جرمن سلطنت کی آواز بن گيا۔

نظریاتترميم

دلچسپ باتیںترميم

  • بقول امریکی فلسفی ول ڈیورنٹ کے نطشے ڈارون کا بیٹا اور بسمارک کا بھائی تھا۔
  • اقبال تعلیم کے لیے جرمنی جاتے ہے اور نطشے سے متاثر ہو کر آتے ہے یہ بات جرمنی جانے سے پہلے اور بعد میں اقبال کی شاعری میں واضح طور پر محسوس کی جا سکتی ہے۔ اقبال کا مرد مومن کا تصور نطشے کے فوق البشر کے بہت قریب ہے۔

کتابیںترميم

  • Thus Spake Zarathustara

وفاتترميم

نظشے کی وفات 26 اگست 1900ء ہے۔

حوالہ جاتترميم

  1. ربط : https://d-nb.info/gnd/118587943  — اخذ شدہ بتاریخ: 30 دسمبر 2014 — اجازت نامہ: CC0
  2. ربط : https://d-nb.info/gnd/118587943  — اخذ شدہ بتاریخ: 28 ستمبر 2015 — مدیر: الیکزینڈر پروکورو — عنوان : Большая советская энциклопедия — اشاعت سوم — باب: Ницше Фридрих — ناشر: Great Russian Entsiklopedia, JSC
  3. ربط : https://d-nb.info/gnd/118587943  — اخذ شدہ بتاریخ: 2 اپریل 2015 — اجازت نامہ: CC0
  4. ربط : https://d-nb.info/gnd/118587943  — اخذ شدہ بتاریخ: 24 جون 2015 — اجازت نامہ: CC0
  5. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb11917712p — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — مصنف: Bibliothèque nationale de France — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  6. ناشر: MetaBrainz Foundation
  7. کتاب: بقول زردشت، مترجم و مصنف: ڈاکٹر ابو الحسن منصور، شایع کردہ: انجمن ترقی اردو (ہند) 1940
  یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کر کے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔