عراق اور شام میں دولت اسلامیہ (عربی: الدولة الاسلامية في العراق والشام، انگریزی: Islamic State in Iraq and the Levant یا Islamic State in Iraq and Syria) مختصراً:ISIS عراق اور شام میں ایک فعال عسکریت پسند گروپ ہے جسے اس کے عربی مخفف داعش کے نام سے بھی جانا جاتا ہے۔۔ [3] یہ ایک ایسی ریاست ہے جسے بین الاقوامی برادری تسلیم نہیں کرتی. اس ریاست کا دعویٰ ہے کہ یہ ایک آزاد اور من حیثیت القوم ریاست ہے ریاست کےسربراہ شیخ ابوبکر البغدادی ہیں جو خود کو امیرالمؤمنین اور ریاست کا خلیفہ کہلاتے ہیں ـ اس تنظیم کا کہنا ہے کہ مستقبل قریب میں یہ ریاست عراق اور شام کے دیگر علاقوں کو ضم کرنے کا اراده رکھتی ہے بلکہ آج بھی اس نے عراق کے بڑے حصے پہ قبضہ کرلیا ہے اور بہت چھوٹا ہی حصہ عراقی حکومت کے ہاتھ میں ہے اس کے ساتھ ساتھ شام کے بیشتر۔ریاست کو قائم کرن علاقے بھی اس کے تحت ہیں۔ اس والے گروپ نے القاعده سے مکمل سبکدوشی اختیار کرتے ہوئے عراق اور شام کی حکومتوں کیخلاف کاروایاں تیز کر دی تھیں ـ ۔ بالآخر علاقائ مکینوں کے قائم کرده مزاحمتی گروپ نے عراق کی ایک تهائ تیل ریفائن کرنے والی آئل ریفائنری اور بغداد انٹرنیشنل ائرپورٹ پر کاروائیوں کے ذریعے عراقی فوجوں کو پسپا کر دیا اور اسلامی ریاست کا اعلان کردیا ـ

عراقی ،شامی علاقوں میں دولت اسلامیہ
Islamic State in Iraq and the Levant

الدولة الاسلامية في العراق والشام
Flag of داعش
پرچم
پیلے رنگ میں سارا عراق اور شام اور اس کے ساتھ سرخ رنگ میں عراق اور شام میں اسلامی ریاست کے زیر تسلط علاقہ بمطابق جون 2014
پیلے رنگ میں سارا عراق اور شام اور اس کے ساتھ سرخ رنگ میں عراق اور شام میں اسلامی ریاست کے زیر تسلط علاقہ بمطابق جون 2014
حیثیت Unrecognized state
دار الحکومت الرقہ[1]
دفتری زبانیں عربی
حکومت اسلامی ریاست
ابوبکر البغدادی
عراق اور شام سے علیحدگی
• اعلان
15 جون 2014[2]
منطقۂ وقت (متناسق عالمی وقت+3)

حوالہ جاتترميم

  1. "ISIS on offense in Iraq". en:Al-Monitor. 10 June 2014. http://www.al-monitor.com/pulse/security/2014/06/syria-iraq-isis-invasions-strength.html۔ اخذ کردہ بتاریخ 11 June 2014. 
  2. "The Rump Islamic Emirate of Iraq"۔ Long War Journal۔ 16 October 2006۔ اخذ کردہ بتاریخ 11 June 2014۔ 
  3. "Profile: Islamic State in Iraq and the Levant (ISIS)". JANUARY 7, 2014 (BBC). 6 January 2014. http://www.bbc.co.uk/news/world-middle-east-24179084۔ اخذ کردہ بتاریخ 6 February 2014. 

بیرونی روابطترميم