بیجنگ (beijing) یا پیکنگ، شمالی چین کا شہر اور عوامی جمہوریہ چین کا دارالحکومت ہے۔ یہ عوامی جمہوریہ چین کی ان چار بلدیات میں سے ایک ہیں جن کو حکومت چین نے صوبائ انتضامیہ کا درجہ دیا ہوا ہے۔ یہ شنگھائ کے بعد چین کا دوسرا بڑا شہر ہے اور چین کے چار عظیم قدیم دارالخلافاں میں سے ایک ہے۔

بیجنگ
Beijing

北京市
بلدیہ
بلدیہ بیجنگ
بیجنگ
بیجنگ
چین کے اندر بیجنگ بلدیہ کا محل وقوع
چین کے اندر بیجنگ بلدیہ کا محل وقوع
ملکعوامی جمہوریہ چین
تقسیم[1]
 - چین کی انتظامی تقسیم
 - چین کی انتظامی تقسیم

16 اضلاع
289 ٹاؤن اور دیہات
حکومت
 • قسمعوامی جمہوریہ چین کی براہ راست زیر انتظام بلدیات
 • پارٹی سیکرٹریGuo Jinlong (Politburo member)
 • میئرWang Anshun
 • کانگریس چیئرمینDu Deyin
 • کانفرنس چیئرمینJi Lin
رقبہ[2]
 • بلدیہ16,410.54 کلو میٹر2 (6,336.14 مربع میل)
 • شہری1,368.32 کلو میٹر2 (528.31 مربع میل)
 • Rural15,042.22 کلو میٹر2 (5,807.83 مربع میل)
بلندی43.5 میل (142.7 فٹ)
آبادی (2014)[3]
 • بلدیہ21,516,000
 • کثافت1,300/کلو میٹر2 (3,400/مربع میل)
 • شہری18,590,000
 • میٹرو (2010)[4]24,900,000
 • چین میں درجہآبادی: فہرست چینی انتظامی تقسیم بلحاظ آبادی;
کثافت: فہرست چینی انتظامی تقسیم بلحاظ کثافت آبادی
اہم نسلی گروہ
 • ہان96%
 • مانچو2%
 • حوئی2%
 • منگول0.3%
منطقۂ وقتچین میں وقت (UTC+8)
ڈاک رمز100000–102629
ٹیلی فون کوڈ10
خام ملکی پیداوار[5]2014
 - کلرینمنبی 2.133 ٹریلین
US$ 347.24 بلین (خام ملکی پیداوار)
 - فی کسCNY 99,214
US$ 16,150 (فی کس خام ملکی پیداوار)
 - اضافہIncrease 7.3%
انسانی ترقیاتی اشاریہ (2010)0.821[6] (انسانی ترقیاتی اشاریہ)—انتہائی اعلی
لائسنس پلیٹ سابقے京A, C, E, F, H, J, K, L, M, N, P, Q
京B (taxis)
京G, Y (outside urban area)
京O, D (police and authorities)
شہر درختChinese arborvitae (Platycladus orientalis)
 Pagoda tree (Sophora japonica)
شہر پھولChina rose (Rosa chinensis)
 گل داؤدی (Chrysanthemum morifolium)
ویب سائٹwww.ebeijing.gov.cn
بیجنگ
Beijing name.svg
"بیجنگ" چینی میں
چینی 北京
لغوی معنی "شمالی دارالحکومت"

بیجنگ ایک بڑا مواصلاتی مرکز ہے اور اس کے درمیان سے درجنوں قومی ریل پٹریاں، سڑکیں اور شاہراہیں گزرتیں ہیں۔ ساتھ ہی اسے عوامی جمہوریہ چین کا سیاسی، تعلیمی اور ثقافتی مرکز بھی تسلیم کیا جاتا ہے۔

عوامی جمہوریہترميم

اکتیس جنوری، 1949 کو کمیونسٹ افواج بیپنگ میں بلامقابلا داخل ہوئیں اور یکم اکتوبر کو کمیونسٹ پارٹی چین نے ماؤ زیڈنگ کی قیادت میں عوامی جمہوریہ چین کا اعلان کرتے ہوۓ اس کا نام دوبارہ بیجنگ کر دیا اور اس کو وفاقی دارالحکومت بنانے کا اعلان کیا۔

 
ووڈاؤکو کے علاقے میں نوجوانوں کی ایک تفریحگاہ
 
زدان کے علاقے میں کتابوں کی دکانیں
 
چاؤیانگ پارک

حوالہ جاتترميم

  1. "Township divisions"۔ the Official Website of the Beijing Government۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 22 July 2009۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)
  2. "Doing Business in China – Survey"۔ Ministry Of Commerce – People's Republic Of China۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 5 August 2013۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)
  3. 北京市2014年国民经济和社会发展统计公报 [Beijing Economic and Social Development Statistical Bulletin 2014] (in Chinese)۔ Beijing Bureau of Statistics۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 1 May 2015۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)CS1 maint: unrecognized language (link)
  4. "OECD Urban Policy Reviews: China 2015"۔ انجمن اقتصادی تعاون و ترقی۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 1 May 2015۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)
  5. "2011年北京人均可支配收入3.29万 实际增长7.2%"۔ People.com.cn۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 22 February 2012۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)
  6. 《2013中国人类发展报告》 (PDF) (in چینی)۔ United Nations Development Programme China۔ اخذ شدہ بتاریخ 5 January 2014۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)
  7. Loaned earlier via French 'Pékin'.